بینک فار انٹرنیشنل سیٹلمنٹ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بینک برائے بین الاقوامی تصفیہ
BIS-logo.PNG
BIS members
قیام 17 مئی 1930
قسم بین الاقوامی تنظیم
مقصد مرکزی بینک تعاون
مقام
ارکان
58 مرکزی بینک
جنرل منیجر
جیمی کارونا
Main organ
بورڈ آف ڈائریکٹرز[1]
ویب سائٹ www.bis.org

بنک برائے بین الاقوامی تصفیہ مرکزی بنکوں کی بین الاقوامی تنظیم ہے جو عالمی مالیاتی تعاون کی ترویج کرتا ہے اور مرکزی بنکوں کے لیے بنک ہے۔ یہ کسی قومی حکومت کے زیر نہیں آتا۔ انگریزی میں اسے مختصراً BIS کہا جاتا ہے۔

یہ ایک انتہائی طاقتور اور پراسرار ادارہ ہے۔ یہ ملک نہیں ہے مگر اس کے پاس سفارتی رتبہ ہے۔ جس طرح سفیروں کی پڑتال نہیں ہوتی اسی طرح اس کے عہدہ دار اور ان کے سامان کی کوئی پڑتال نہیں کر سکتا۔ یہ بینک کسی حکومت کو کوئی محصول ادا نہیں کرتا حتیٰ کہ اپنے ملازمیں کی تنخواہوں پر بھی محصول نہیں دیتا۔ چین اور میکسیکو سمیت دنیا کے کسی بھی حصے میں اس کے دفاتر اور اس کی عمارتوں کو سفارت خانے جیسا درجہ دیا جاتا ہے۔ کوئی حکومت اس کے کام کا آڈٹ نہیں کر سکتی۔ اس کے عہدہداران پر کوئی سفری پابندی نہیں لگ سکتی۔ یہ لوگ اپنے پیغامات میں ہر طرح کی کوڈنگ کر سکتے ہیں۔ پولیس ان پر ہاتھ نہیں ڈال سکتی۔[2] سوئزر لینڈ میں واقع ہونے کے باوجود سوئس حکام اس پر ہاتھ نہیں ڈال سکتے۔ BIS کے صرف 140 گاہک ہیں لیکن 2011-2012 میں انہیں 1.17 ارب ڈالر کا ٹیکس فری منافع ہوا[3]

اقتباس[ترمیم]

  • The BIS is super-secret and is controlled by the same people who control the IMF.[4]

مزید دیکھیے[ترمیم]

  1. "Board of Directors"۔ www.bis.org/۔ مورخہ 22 اپریل 2011 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2011-04-14۔
  2. The History of the "Money Changers"
  3. The Shadowy History of the Secret Bank that Runs the World
  4. As The Currency Reset Begins - Get Gold As It Is "Where The Whole World Is Heading"