بی ایم غفور

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بی ایم غفور
معلومات شخصیت
پیدائش 4 مئی 1942  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تلشیری  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 13 نومبر 2003 (61 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کالیکٹ  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت (26 جنوری 1950–)
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند (–14 اگست 1947)
Flag of India.svg ڈومنین بھارت (15 اگست 1947–26 جنوری 1950)  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ کارٹون ساز،  فن کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

بی ایم غفور (4 مئی 1942-13 نومبر 2003) ایک بھارتی کارٹونسٹ اور مزاحیہ فنکار تھا۔ وہ کیرالہ کا ایک بہت نامور کارٹونسٹ تھا اور کیرالہ کارٹون اکیڈیمی کا بانی تھا۔ تین دہائی سے زائد کے کیرئیر میں کچھ بہت مشہور کامکس تخلیق کیے جن میں کنجمان شامل ہے ایک کنچیری آبادی میں غفور سینٹ جوزف کے ہائیاسکول کلیکٹ میں طالب علم تھا جب ایم وی دیوان نے اسے مصوری سکھائی۔ اس نے ایک نامور ممتاز مصور ایس سی پینکر سے بھی سیکھا جب وہ گورنمنٹاسکول آف آرٹ اینڈ کرافٹ چنئی میں تھا جہاں پینکر پرنسپل کے طور پر کام کرتا تھا۔[1][2] بی ایم غفور کی شادی سوہرا سے ہوئی ۔تجمل غفور اور تنویر غفور سمیت ان کے چار بچے تھے۔ تجمل اور تنویر غفور بی ایم جی گروپ کے ڈائریکٹرز اور پروموٹرز تھے۔ غفور نے بہت سی اشاعتوں کے لیے کارٹونسٹ کے طور پر کام کیا۔ جن میں چندریکا ، شنکر ہفتہ وار، دیشابھیمنی اور کٹ کٹ شامل ہیں اور اس کا کیئرئیر متربھومی میں جمنے سے پہلے کی یادگار ہیں۔ 1980 سے 2003 تک اس نے آخری حد تک محنت کی ۔اس کا ایک اپنا میگزین نرملا کے نام سے بھی تھا۔ جو اس نے ایمرجنسی کے وقت میں شروع کیا تھا۔ 2000 میں متربھومی کے دور میں غفور ایک تخلیقی اینیمیشن ڈائریکٹر بن گیا جو نیسٹ کمپنی ایرنکولم میں ہے اور ایک سال تک ڈائریکٹر رہا۔ وہ بی ایم جی گروپ کا بانی بھی تھا جو کوزیکوڈ میں واقع ایک اینیمیشن کمپنی ہے۔ اس نے کیرالہ کارٹوں اکیڈیمی کو منظم کرنے میں بہت بڑا اور اہم کردار ادا کیا۔ اور اس کی بانی سیکرٹری کے طور پر خدمات سر انجام دیتا رہا ۔وہ کلیکٹ آرٹ گیلری کو منظم کرنے کی بھی اہم کنجی رہا۔ غفور 13 نومبر 2003 میں دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کر گیا۔اس وقت اس کی عمر 61سال تھی۔ اس کے اعزاز میں حکومت کیرالہ نے ایک ایوارڈ جس کا نام "غفور سامرکا پرسکارم " قائم کیا۔ مالیالیز کے لیے" لٹل جانی"،" ٹنٹومن " اصل میں غفور کی ذاتی تخلیق تھے لیکن وہ اخبار میں زیادہ مقبولیت حاصل نہ کر سکے

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Gafoor. B. M.". Indiancaricature.com. Retrieved 1 January 2011
  2. "B.M. Gafoor passes away". دی ہندو. 14 November 2003. 

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]