بے پناہ شادمانی کی مملکت

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
بے پناہ شادمانی کی مملکت
(انگریزی میں: The Ministry of Utmost Happiness خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں عنوان (P1476) ویکی ڈیٹا پر
مصنف اروندھتی رائے  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مصنف (P50) ویکی ڈیٹا پر
اصل زبان انگریزی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں کام یا نام کی زبان (P407) ویکی ڈیٹا پر
ادبی صنف فکشن  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں طرز (P136) ویکی ڈیٹا پر
ناشر الفریڈ اے۔ ناپ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں ناشر (P123) ویکی ڈیٹا پر
تاریخ اشاعت 2017  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ اشاعت (P577) ویکی ڈیٹا پر
Fleche-defaut-droite-gris-32.png سسکتے لوگ  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پچھلا (P155) ویکی ڈیٹا پر
  Fleche-defaut-gauche-gris-32.png

بے پناہ شادمانی کی مملکت (انگریزی: The Ministry of Utmost Happiness) اروندھتی رائے کا ناول ہے۔ مصنفہ اروندھتی رائے کا 20 سال بعد یہ دوسرا ناول ہے۔ ان کا پہلا ناول دی گاڈ آف اسمال تھنگز (سسکتے لوگ) بھی بہت مقبول ہوا تھا۔

اروندھتی رائے کی گزارش پر معروف مترجم ارجمند آرا نے تین مہینے دس دن لگا کر ناول کا ’بے پناہ شادمانی کی مملکت‘ کے عنوان سے اردو ترجمہ کیا اور مصنف کے ساتھ کئی گھنٹوں پر مشتمل طویل اٹھارہ بیٹھکوں میں ترجمے پر نظرثانی کی، اس پُر مشقت طریقے سے ناول کا ایک معیاری اردو متن، منشائے مصنف کے عین مطابق اردو زبان میں ڈھلا۔[1]

ناول بارہ ابواب پر مشتمل ہے، ان بارہ ابواب کے عنوانات کی ترتیب کچھ یوں ہے۔ بوڑھی چڑیاں مرنے کے لیے کہاں جاتی ہیں، خواب گاہ، ولادت، ڈاکٹر آزاد بھارتیہ، دھیما تعاقب، بعد کے لیے چند سوال، مکان مالک، کرایہ دار، مس جبین اول کی بے وقت موت، بے پناہ شادمانی کی مملکت، مکان مالک اور گوہِ کیوم۔[2]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. شیخ نوید۔ "بے پناہ شادمانی کی مملکت"۔ پنجند.کام۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2019۔
  2. خرم سہیل (29 مارچ 2018)۔ "بے پناہ شادمانی کی مملکت: ارُندھتی رائے کے تازہ ناول پر خرم سہیل کا تبصرہ"۔ اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2019۔