تاؤ تی چنگ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
تاؤ تی چنگ
 
Mawangdui LaoTsu Ms2.JPG
مصنف لاؤزی (trad.)
اصل عنوان '
ملک چین (ژؤ خاندان)
زبان کلاسیکی چینی
صنف فلسفہ
تاریخ اشاعت چوتھی صدی قبل مسیح
تاریخ اشاعت
انگریزی
1868
ذرائع ابلاغ کتاب


Tao Te Ching
روایتی چینی 道德經
سادہ چینی 道德经
ہانیو پنین Dàodéjīng (اس آڈیو کے متعلق listen )
متبادل چینی نام
چینی 老子

تاؤ تی چنگ (راستہ اور اور اس کی طاقت)،[Note 1] Daodejing, Dao De Jing, یا Daode jing (سادہ چینی: ; روایتی چینی: ; پینین: Dàodéjīng)، جسے صرف لاؤزی بھی کہا جاتا ہے(چینی: 老子; پینین: Lǎozǐ),[1][2][Note 2] سے منسوب ایک کلاسیکی چینی متن ہے۔ یہ چینی زبان میں فلسفے پر پہلی کتاب ہے، اس کتاب کو مختصر طور پر صرف راستہ بھی کہا جاتا ہے۔ اس میں کنفیوشسی اقدار پر تنقید کی گئی ہے۔ کتاب کا ساتواں باب کنفیوشس مت اور تاؤ مت کے مابین اختلافات سے بحث پر مبنی ہے۔ یہ ایک صوفیانہ و فلسفیانہ طرز تحریر میں ہے۔[3]

معلومات[ترمیم]

تاؤ تی چنگ تاؤ مت کے فلسفہ کا ماخذ ہے جو چین میں مقدس ترین مذہبی صحائف میں شمار ہوتی ہے۔لاؤزی نے منظوم انداز میں اپنے افکار اس کتاب میں تفصیل کے ساتھ بیان کیے ہیں۔ تاؤ تی چنگ بانسوں کی چپٹیوں پر لکھی ہوئی تحریر کی صورت میں پائی گئی تھی اور اس کی تاریخ تصنیف کے بارے میں عمومی رائے یہ ہے کہ چوتھی صدی قبل مسیح میں اسے تصنیف کیا گیا۔یہ تقریباً پانچ ہزار چینی الفاظ پر مشتمل ہے اور اسے دو حصوں میں تقسیم کیا گیا ہے جن میں تاؤ اور کردار کی فضیلت جیسے موضوعات کو زیر بحث لایا گیا ہے۔<ref>http://humshehrionline.com/2015/01/چینی-انسان-دوست-مکر-لاؤزی/>

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. /ˈd dɛ ˈɪŋ/"Tao Te Ching"۔ Random House Webster's Unabridged Dictionary۔
  2. Ancient Chinese books were commonly named after their real or supposed author, in this case Laozi meaning "Master Lao".
  1. Cite error: حوالہ بنام stanford کے لیے کوئی متن فراہم نہیں کیا گیا ().
  2. "The Tao Teh King, or the Tao and its Characteristics by لاؤزی – Project Gutenberg"۔ Gutenberg.org۔ 2007-12-01۔ اخذ کردہ بتاریخ 2010-08-13۔ 
  3. مارٹن سیمورسمتھ، سو عظیم کتابیں، صفحہ 34 تا 39، 2011ء، تخلیقات، لاہور۔

بیرونی روابط[ترمیم]