تبادلۂ خیال:جلیل مانک پوری

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

متصلاً تخلیق کردہ صفحہ جلیل مانک پوری اا کا متن[ترمیم]

جلیل مانک پوری کا حقیقی نام جلیل حسن تھا۔ ان کے والد کا نام حافظ عبدالکریم تھا. گھر میں بنیادی تعلیم کے بعد تعلیم کے میدان میں اپنازیادہ تر وقت انہوں نے لکھنؤ میں گزارا تھا. انہیں شاعری سے دل چسپی تھی اور وہ 20 سال کی عمر میں جلیل امیر مینائ کے شاگرد بن گئے تھے. جب مینائ نے 'امیر اللغات' کیلئے رامپور میں ایک دفتر قائم کیا تھا، تب انہوں نے جلیل کو اس کا معتمد مقرر کیا گیا تھا. 1900 ء میں انہوں نے اپنے استاد کے ساتھ حیدرآباد کا دورہ کیا اور 'محبوب الکلام' اور 'دبدبہ آصفی' کی اشاعت کا انتظام کیا. جلیل منیکپوری حیدرآباد کے درباری شاعر کے طور پر داغ کےبعد ماموری میں کامیابی حاصل کی اور دو نظام حکمرانوں کے استاد ہونے کا منفرد اعزاز حاصل کیا تھا. 1946 میں حیدرآباد وہ میں انتقال کر گئے.[1]

حوالہ جات[ترمیم]

سوال[ترمیم]

غالبًا اس حذف شدہ دہرے صفحے اوپر کے متن کو موجودہمضمون میں کمی بیشی کے ساتھ شامل کر لیا جا سکتا ہے۔ --مزمل (تبادلۂ خیالشراکتیں) 15:05, 23 اکتوبر 2015 (م ع و)