تبادلۂ خیال:ڈیرہ اسماعیل خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں

ڈیرہ اسماعیل خان میں سرائیکی بولنے والے لوگوں کو ہمیشہ ایسی قیادت پر بھروسہ کرنا پڑا جو ان کے حقوق کے لیے کبھی بھی آواز بلند نہیں کریں گے۔ کیونکہ پشتو بولنے والے لوگ سرائیکیوں پر مسلط کردیے گئے۔ جنہوں نے ہر اہم عہدے پر پیسوں کے بل پر قبضہ کرلیا۔ اسی لیے یہاں کے لوگ دالحکومت پشاور سے شاکی رہتے ہیں کہ وہ باہر کے لوگوں کو ان پر مسلط کردیتے ہیں اور ان کی رائے کا احترام نہیں کرتے۔ Maqbool2010 03:47, 22 اکتوبر 2010 (UTC)