تبادلۂ خیال:کالا آزار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
Skin ulcer due to leishmaniasis, hand of Central American adult 3MG0037 lores.jpg
وسطی امریکی بالغ کے ہاتھ میں کیوٹینیئس لشمنیاسس
جماعت بندی اور بیرونی ذرائع
خاصیت Infectious disease
آئی سی ڈی-10 B55.
آئی سی ڈی-9 085
بنیادی معلومات 3266 29171
میڈ لائین پلس 001386
ای میڈیسن emerg/296
عنوانات D007896

کالا آزار یعنی لشمنیاسس، جسے لشمنیوسس بھی کہا جاتا ہے، ایک بیماری ہے جو پروٹوجوآن طفیلیے کی وجہ سے ہوتا ہے جو لشمنیا جنس سے تعلق رکھتا ہے اور کچھ مخصوص قسم کے سینڈ فلائی (sandflies) کے کاٹنے سے پھیلتا ہے۔[1] بیماری ظاہر ہونے تین اہم طریقوں ہو سکتے ہیں: کیوٹینیئس (cutaneous)میوکوکیوٹینیئس (mucocutaneous)، یا وسرل لشمنیاسس (visceral leishmaniasis)۔[1] اس کا کیوٹینیئس شکل جلد کے السر کے طور پر ظاہر ہوتا ہے، جبکہ میوکوکیوٹینیئس شکل جلد، منہ، اور ناک پر السر کے طور پر، اور وسرل شکل جلد پر السر کے ساتھ شروع ہوتا ہے، اور بعد میں بخار، خون میں سرخ خلیات کی کمی، اور اسپلین اور جگر کی سوجن کے طور پر ظاہر ہوتا ہے۔[1][2]

انسان میں انفیکشن "لشمنيا" 20 سے زیادہ اقسام کی وجہ سے ہوتی ہے۔[1] خطرے کے عوامل میں غربت، غذائی قلت، جنگلات کی کٹائی، اور شہر کاری شامل ہیں۔[1] ان تینوں اقسام کی تشخیص خوردبین میں طفیلی دیکھ کر کیا جا سکتا ہے۔[1] اس کے علاوہ، وسرل مرض کی تشخیص خون کی جانچ کے ذریعہ کی جا سکتی ہے۔[2]

جراثیم کش سے تدبیر شدہ مچھردانی کے اندر سونے سے کالا آزار کی کچھ حد تک روک تھام کی جا سکتی ہے۔[1] دیگر کارروائیوں میں سینڈ فلائی کو مارنے کے لئے جراثیم کش اسپرے کرنا اور بیماری کو زیادہ پھیلنے سے روکنے کے لئے اس میں مبتلا لوگوں کا جلد علاج کرنا شامل ہے۔[1] مناسب علاج ان باتوں پر مبنی ہوتا ہے: انفیکشن کہاں ہوا، "لشمنيا" کے انواع، اور بیماری کی قسم۔[1] وسرل بیماری کے لئے مناسب ادویات میں لیپوسومل ایمفوٹریسین بی (liposomal amphotericin B) شامل ہے،[3] جو پینٹاویلینٹ ایٹيمونیلس (pentavalent antimonials) اور پیرومومائسین (paromomycin)، [3] اور ملٹی فوسین (miltefosine) کا مرکب ہے۔.[4] کیوٹینیئس بیماری کے لئے، پیرومومائسین، فلكونازول (fluconazole)، یا پینٹامائڈين (pentamidine) مؤثر ہو سکتے ہیں۔[5]

تقریبا 98 ممالک میں کچھ 12 لاکھ لوگ اس وقت متاثر[6] ہیں۔[2] ہر سال تقریبا 20 لاکھ نئے معاملے[2] ہوتے ہیں اور 20 سے 50 ہزار کے درمیان اموات ہوتی ہیں۔[1][7] ایشیا، افریقہ، جنوبی اور وسطی امریکہ، اور جنوبی یورپ میں تقریبا 200 ملین لوگ ایسے علاقوں میں رہتے ہیں جہاں یہ بیماری عام ہے۔[2][8] عالمی ادارہ صحت (World Health Organization) نے اس بیماری کے علاج کے لئے بنی کچھ ادویات پر چھوٹ حاصل کی ہے۔[2] یہ بیماری کتوں اور کترنے والے جانوروں سمیت کئی دوسرے جانوروں میں ہو سکتا ہے۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ ت ٹ ث ج چ ح خ د "Leishmaniasis Fact sheet N°375"۔ World Health Organization۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 فروری 2014۔
  2. ^ ا ب پ ت ٹ ث Barrett، MP; Croft, SL (2012). "Management of trypanosomiasis and leishmaniasis.". British medical bulletin 104: 175–96. doi:10.1093/bmb/lds031. PMID 23137768. 
  3. ^ ا ب Sundar، S; Chakravarty, J (Jan 2013). "Leishmaniasis: an update of current pharmacotherapy.". Expert opinion on pharmacotherapy 14 (1): 53–63. doi:10.1517/14656566.2013.755515. PMID 23256501. 
  4. Dorlo، TP; Balasegaram, M; Beijnen, JH; de Vries, PJ (Nov 2012). "Miltefosine: a review of its pharmacology and therapeutic efficacy in the treatment of leishmaniasis.". The Journal of antimicrobial chemotherapy 67 (11): 2576–97. doi:10.1093/jac/dks275. PMID 22833634. 
  5. Minodier، P; Parola, P (May 2007). "Cutaneous leishmaniasis treatment.". Travel medicine and infectious disease 5 (3): 150–8. doi:10.1016/j.tmaid.2006.09.004. PMID 17448941. 
  6. "Leishmaniasis Magnitude of the problem"۔ World Health Organization۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 فروری 2014۔
  7. Lozano، R (Dec 15, 2012). "Global and regional mortality from 235 causes of death for 20 age groups in 1990 and 2010: a systematic analysis for the Global Burden of Disease Study 2010.". Lancet 380 (9859): 2095–128. doi:10.1016/S0140-6736(12)61728-0. PMID 23245604. 
  8. Ejazi، SA; Ali, N (Jan 2013). "Developments in diagnosis and treatment of visceral leishmaniasis during the last decade and future prospects.". Expert review of anti-infective therapy 11 (1): 79–98. doi:10.1586/eri.12.148. PMID 23428104.