تبادلۂ خیال صارف:Abdul Moin Ansri

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 18:28, 23 مارچ 2015 (م ع و)محترم طاہر محمود صاحب اور محترم امین اکبر صاحب اسلام علیکم
میرا آرٹیکل آشوری کہاں غائب ہو گیا ہے؟ معین انصاری محترم طاہر محمود صاحب اور محترم امین اکبر صاحب اسلام علیکم
مجھ جیسے کم علم کا وکی میں لکھنے کی ایک وجوہ یہ بھی ہے کہ وکی میں جس مضمون کو دیکھا تو اس میں صرف چند مضمون ہی علمی معیارپر پورے اترتے ہیں ورنہ اکثر مضمون بھرتی کے ہیں۔ اس لیے وکی میں لکھنے کی میری ہمت ہوءی۔ یہی وجہ ہے میں نے بہت سے مضمون جو ڈالے ہیں اس کے لیے مجحے پہلے سے لکھے ہوءے مضمونوں کو ڈیلٹ کرنا پڑا۔ میں پہلے بھی بہت کچھ کام مختلف موضوعات پر کر چکاہوں اور ان کے بارے میں میرے پاس پہلے ہی لکھا ہوا ہے۔ مگر ان کو وکی میں اس لیے نہیں ڈال سکتا ہوں کہ یہ مضمون یتیم کہلاءیں گے۔ مثلا گزشتہ رات کو ڈالا ہوا مضمون راجپوت سے ربط رکحنے والے چندر بنسی، سورج بنسی، اگنی کل، اس طرح پشتون میں سرابند، کش،بٹن، گرگشت اور اس طرح کے بہت سارے مضمون شامل ہیں ۔ میرے پاس وساءل ہوتے تو میں دس بیس لڑکے ان پیج میں لکھنے والے ملازم رکھ لیتا اور ان کو مختلف موضوع پر کتابوں میں نشان لگا کر دیتا کہ ان کو ان پیج میں ڈھالیں اور ان کے ان پیج میں لکھے ہوءے مضمون کو اڈیٹ کرکے وکی میں ڈآتا رہتا۔ لیکن یہ میرے بس کی بات نہیں ہے لہذا میں کوشش کر کے وکی کے لیے پانچ سے دس گھنٹے نکال تا ہوں حالانکہ اس کے لیے مجھے بیگم اور دوسرے لوگوں کی بہت باتیں سننے کو مل رہی ہیں۔ آخر میں میری یہ تجویز ہے کہ آریہ میں سے آریاءی زبانیں اور آریاءی مذہب، پشتون میں سے پٹھان اور افغان کو ایک الگ مضمون کے تو پر شامل کر لیا جاءے۔ اس طرج ایک طرح تو مضمن کی تعداد میں اضافہ ہوگا اور دوسرا لوگوں کو ڈھونڈنے میں آسانی ہوگی، لہذا اس پر غور کیا جاءے المخلص معین انصآری

فہرست

یتیم مضمون[ترمیم]

امین اکبر صاحب اسلا، علیکم میں نے موریہ نامی ایک آرٹیکل ڈالا ہے۔ مگر وکی میں ایک اور آرٹیکل موریہ نام کا بھی موجود ہے۔ لہذا اس کو موریا کر دیں اور مزید یہ ہے کہ موریا سلطنت کا بانی جس کے بانی کا نام چندر گپت موریا تھا مگر اس مضمون کو یتیم بتا رہا ہے اسے کیوں یتیم بتایا جا رہا ہے۔ لہذا اس موریا سے ربط کر دیں۔ آج ہی میں نے ایک مضمون کشان نام کا وکی میں لکھا ہے۔ مگر کنشک جو اس کے سب سے مشہور بادشاہ کنشک کے متعلق مضمون لکھا ہے ابھی وکی میں نہیں ڈالا ہے۔ کیوں کہ غالبا آپ اسے بھی یتیم بتائیں گے۔ لہذا میں اسے نہیں ڈال رہا ہوں۔ آپ نے چندر گپت موریا کا ربط موریا سے بتایا تو میں اسے ڈال دوں گا۔ المخلص وکی کی ترقی کے لیے دعاگو امین اکبر صاحب جٹ جاٹ جت یہ ایک ہی کلمہ کی مختلف شکلیں ہیں۔ وکی میں ان دونوں کے بارے میں لکھا ہے۔ لیکن وہ میری ناقص رائے میں درست نہیں ہے۔ معین انصاری

معین بھائی یتیم مضمون ایسے مضمون کو کہتے ہیں جس کا کسی بھی دووسرے مضمون میں ربط نہ ہو۔موریا کے مضمون میں اگر چندر گپت موریا کے نام کے آگے پیچھے دو دو [ [ ] ] بڑی بریکٹ لگانے سے چندرگپ کا مضمون یتیم مضمون نہیں رہے گا۔ اگر اس کے باوجود آپ کو چندرگپت موریا کے مضمون میں یتیم لکھا نظر آئے تو مضمون کو ایڈٹ کریں اور سب سے اوپر جو درمیانی بریکٹ کے درمیان یتیم لکھا نظر آئے تو اسے ختم کر دیں۔ کشان سلطنت کے مضمون میں کنشک کے نام کے آگے پیچھے بھی دو دو بڑی بریکٹ ڈال دٰں، اگر کنشک کا مضمون ہوا تو محفوظ کرنے پر نیلا نظر آئے گا، ورنہ لال۔ اس کے بعد جب کنشک کا مضمون بنائیں گے تو وہ یتیم نہیں ہوگا۔ جو مضمون یتیم سے درجے سے ہٹانا ہو تو اس کے متعلقہ مضامین کے مزید دیکھیں حصہ میں اس مضمون کا ربط دو دو بریکٹ سے ڈال دیں۔ اس کے علاوہ اگر اوپر زنجیر کے نشان پر کلک کریں گے تو وہاں بھی الفاظ لکھیں گے تو وہ اندرونی ربط بن جائے گا۔ آپ اپنا کام جاری رکھیں۔ میں سیٹ کرتا رہوں گا ور آپ کو سیکھاتا بھی رہوں گا۔ بس جس مضمون میں مسئلہ ہو، یہاں لکھ دیا کریں۔ امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 20:03, 20 دسمبر 2014 (م ع و)

اردو سافٹ وئیر[ترمیم]

امین اکبر صاحب ٓاسلام علیکم میں نے وکی پیڈیا میں ’پشتون‘ بوجہ بغیر ایڈیٹ کیے ہوئے ڈالا تھا۔ اس میں مجھے ایڈیٹ کرتے ہوئے بڑی دقت کا سامنا ہے۔ اس کی وجوہات میں میرے پاس وقت کی کمی کے علاہ وکی کا سوفٹ ویر بہت سلو چل رہا ہے اور یہ بہت وقت لے رہا ہے۔ دوسری اہم وجہ ہے میں جس طرح اس مضمون کو پیش کرنا چاہ رہا ہوں اس طرح وکی قبول نہیں کر رہا ہے اور تیسری اہم وجوہات اس میں ٹبیل نہیں بن پا رہا ہے۔ اس کے علاوہ ان پیج کا کون سا ورجن جس کی کاپی وکی پیڈیا میں دائریکٹ جاسکی ہے ہے بتادیں۔ مہربانی کرکے میری پریشانی دور کریں اور میں جتنا بھی اڈیٹ کروں اسے قبول کریں اور ٹیبل کا مسلہ حل کریں تاکہ میں تندہی سے کام کر سکوں شکریہ المخلص معین انصاری

معین بھائی،میں ابھی ان پیج کے تازہ ترین ورژن کا لنک دیتا ہوں۔ اس میں کاپی کر کے ڈائریکٹ ویکی پیڈیا میں پیسٹ کرنے سے کوئی مسئلہ نہیں ہوتا۔ ٹیبل کو ہمیں ویکی پیڈیا کے فارمیٹ میں لکھنا ہوتا ہے۔ آپ اوپر جدول کا آئیکون دیکھ رہے ہونگے اس پر کلک کرنے سے جدول آ جاتی ہے۔ مثال کے طور پر
سرنامہ 1 سرنامہ 2 سرنامہ 3
صف 1, خانہ 1 صف 1, خانہ 2 صف 1, خانہ 3
صف 2, خانہ 1 صف 2, خانہ 2 صف 2, خانہ 3
باقی جی مضمون میں آپ پشتون کا مسئلہ بیان کر رہے ہیں وہ کون سا ہے؟ دیکھتے ہیں اس میں کیا مسئلہ ہے۔امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 16:22, 13 دسمبر 2014 (م ع و)

خوش آمدید[ترمیم]

خوش آمدید!

ہمارے ساتھ سماجی روابط کی ویب سائٹ پر شامل ہوں: F icon.svg اور G 2014-04-24 22-48.png

Welcome! Bienvenue! Willkommen! Benvenuti ¡Bienvenido! ようこそ Dobrodosli 환영합니다 Добро пожаловать Bem-vindo! 欢迎 Bonvenon Welkom
(?_?)
ویکیپیڈیا میں خوش آمدید


Wikipedia laurier wp.png

جناب Abdul Moin Ansri کی خدمت میں آداب عرض ہے! ہم امید کرتے ہیں کہ آپ اُردو ویکیپیڈیا کے لیے بہترین اضافہ ثابت ہوں گے۔
ویکیپیڈیا ایک آزاد بین اللسانی دائرۃ المعارف ہے جس میں ہم سب مل جل کر لکھتے ہیں اور مل جل کر اس کو سنوارتے ہیں۔ منصوبۂ ویکیپیڈیا کا آغاز جنوری سنہ 2001ء میں ہوا، جبکہ اردو ویکیپیڈیا کا اجرا جنوری 2004ء میں عمل میں آیا۔ فی الحال اردو ویکیپیڈیا میں کل 149,942 مضامین موجود ہیں۔
اس دائرۃ المعارف میں آپ مضمون نویسی اور ترمیم و اصلاح سے قبل ان صفحات پر ضرور نظر ڈال لیں۔



Samarbetare.svg

یہاں آپ کا مخصوص صفحۂ صارف بھی ہوگا جہاں آپ اپنا تعارف لکھ سکتے ہیں، اور آپ کے تبادلۂ خیال صفحہ پر دیگر صارفین آپ سے رابطہ کر سکتے ہیں اور آپ کو پیغامات ارسال کرسکتے ہیں۔

  • کسی دوسرے صارف کو پیغام ارسال کرتے وقت ان امور کا خیال رکھیں:
    • اگر ضرورت ہو تو پیغام کا عنوان متعین کریں۔
    • پیغام کے آخر میں اپنی دستخط ضرور ڈالیں، اس کے لیے درج کریں یہ علامت --~~~~ یا اس (Insert-signature.png) زریہ پر طق کریں۔

Signature-guide-ur.png


Under construction icon-green.svg

ویکیپیڈیا کے کسی بھی صفحہ کے دائیں جانب "تلاش کا خانہ" نظر آتا ہے۔ جس موضوع پر مضمون بنانا چاہیں وہ تلاش کے خانے میں لکھیں، اور تلاش پر کلک کریں۔

آپ کے موضوع سے ملتے جلتے صفحے نظر آئیں گے۔ یہ اطمینان کرنے کے بعد کہ آپ کے مطلوبہ موضوع پر پہلے سے مضمون موجود نہیں، آپ نیا صفحہ بنا سکتے ہیں۔ واضح رہے کہ ایک موضوع پر ایک سے زیادہ مضمون بنانے کی اجازت نہیں۔ نیا صفحہ بنانے کے لیے، تلاش کے نتائج میں آپ کی تلاش کندہ عبارت سرخ رنگ میں لکھی نظر آئے گی۔ اس پر کلک کریں، تو تدوین کا صفحہ کھل جائے گا، جہاں آپ نیا مضمون لکھ سکتے ہیں۔ یا آپ نیچے دیا خانہ بھی استعمال کر سکتے ہیں۔


  • لکھنے سے قبل اس بات کا یقین کر لیں کہ جس عنوان پر آپ لکھ رہے ہیں اس پر یا اس سے مماثل عناوین پر دائرۃ المعارف میں کوئی مضمون نہ ہو۔ اس کے لیے آپ تلاش کے خانہ میں عنوان اور اس کے مترادفات لکھ کر تلاش کر لیں۔
  • سب سے بہتر یہ ہوگا کہ آپ مضمون تحریر کرنے کے لیے یہاں تشریف لے جائیں، انتہائی آسانی سے آپ مضمون تحریر کرلیں گے اور کوئی مشکل پیش نہیں آئے گی۔


--طاہر محمود (تبادلۂ خیالشراکتیں) 05:29, 13 نومبر 2014 (م ع و)

بہت خوشی ہوئی کہ اردو ویکی پر بھی کوئی تاریخ کے حوالے سے چھوٹی چھوٹی غلطیاں درست کر رہا ہے۔ شکریہ۔امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 20:54, 16 نومبر 2014 (م ع و)

اشکانی[ترمیم]

اسلام علیکم! آپ نے ایک مضمون اشکانی کے نام سے لکھا ہے۔ اس حوالے سے ایک مضمون پہلے ہی سلطنت اشکانیان کے نام سے موجود ہیں۔ آپ اگر پہلے سے موجود مضمون میں نئے مضمون کی معلومات ڈال دیں تو پہلا مضمون کافی بہتر ہو جائے گا۔ امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 13:22, 17 نومبر 2014 (م ع و)

امین اکبر صاحب آپ کا بہت شکریہ ہے کہ آپ نے میری توجہ اس کی طرف دلائی ہے کہ ایک مضمون پہلے ہی سلطنت اشکانیان کے نام سے موجود ہے۔ اصولا اس مضمون کو اشکانیاں کے نام سے ہونا چاہیے۔ یہ غلطی اس لیے ہو گئی ہے ۔
عبد المعین بھائی، میں نے آپ کا صفحہ دیکھا تو انگریزی ویکی پیڈیا کے متعلقہ صفحے سے اس کا ربط بنانے کے لیے انگریزی ویکی پیڈیا پر Arsacids سے سرچ کیا۔ انہوں نے Arsacids کو Parthian Empire کے صفحے تک رجوع مکرر(ری ڈائریکٹ) کیا ہواہے۔ پارتھین ایمپائر پر دیکھا تو پتہ چلا اردو میں سلطنت اشکانیاں کا مضمون پہلے سے بنا ہوا ہے۔ آپ کی بات درست ہے کہ اسے اشکانیاں کے نام سے ہونا چاہیے، مگر ہم کوشش کرتے ہیں کہ اگر مضمون انگریزی کے کسی مضمون سے ربط میں ہو تو اس کا نام انگریزی والا ہی رکھیں۔ اگر تعارف دینا ہو تو صرف اشکانی کا مضمون بھی ٹھیک ہے۔ اس صورت میں دونوں مضامین کے مزید دیکھیے والے حصے میں ایک دوسرے کے ربط ڈال دیے جاتے ہیں۔ کوئی مضمون بنانے سے پہلے انگریزی پر سرچ کر لیا کریں۔ ایک تو اس سے تھوڑی معلومات میں اضافہ ہو گا، دوسرا ہمیں پتہ چل جائے گا کہ اس پر اردو میں کوئی مضمون ہے یا نہیں۔ انگریزی ویکی پیڈیا کے کسی بھی مضمون کے بائیں جانب Languages ہوتی ہیں۔ جہاں نیچے اُن تمام زبانوں کے لنک ہوتے ہیں جن میں یہ مضمون مل سکتا ہے۔ اگر اردو میں نہیں تو اردو میں مضمون بنا لیں۔ اس کے بعد دائیں جانب زبانیں پر کلک کرنے سے اضافہ رووبط پر کلک کرنے سے ایک ونڈو کھل جائے گی۔ اس میں اوپرenglishلکھ کر انگریزی منتخب کر لیں اور نیچے انگریزی مضمون کا عنوان پیسٹ کر نے کے بعد لنک کرنے سے اردو مضمون کا ربط انگریزی سے لگ جائے گا۔ ایک درخواست اور کہ جہاں بھی تبادلہ خیال کریں تو آخر میں اس باکس کے اوپر ایک پنسل کا نشان ہے اس دبا دیا کریں۔ اس سے چار ٹیلڈا کے نشان آ جائیں گے اور محفوظ کرنے کے بعد وہاں آپ کا نام بطور دستخط کے لکھا ہو گا۔امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 13:00, 18 نومبر 2014 (م ع و)

زمرہ:زبانیں[ترمیم]

آپ نے ایک جگہ زبانوں کے زمرہ کے حوالے سے پوچھا ہے۔ اس حوالے سے پہلے سے موجود ہے۔ اگر آپ کوئی اور زمرہ چاہتے ہیں تو بتا دیں۔ وہ بھی بنا دیا جائے گا۔ کسی بھی قسم کے رہنمائی کے لیے اپنے یا میرے تبادلہ خیال پر مسئلہ لکھ دیں۔ ان شاء اللہ حل کر دیا جائے گا۔امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 08:16, 19 نومبر 2014 (م ع و)

محترم طاہر محمود صاحب اور محترم امین اکبر صاحب
اسلام علیکم
میں کوئی عالم و فاضل نہیں ہوں بس ایک عام آدی ہوں اور یہ بھی نہیں ہے کہ میرا تعلق درس و تدریس سے ہو، میں تو ایک عام آدمی بلکہ ایک معمولی کلرک ہوں جو کرائے کے ایک چھوتے سے گھر میں رہتا ہے، جس کو فرصت بہت کم میسر ہوتی ہے کیوں کے فکر روزگار کے علاوہ دوسرے دیگر امور بھی مجھے انجام دینے ہوتے ہیں۔ بس علم سے محبت رکھتا ہوں اس لیے جب میں نے وکی پیڈیا دیکھا تو اس میں بہت کچھ کمی نظر آئی لیکن میری ہمت نہیں پڑی کے اس میں کچھ لکھوں۔ لیکن امین صاحب کی ترغیب پر لکھنے کی اہمت کی۔ اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ وکی پیڈیا بہت کچھ کام کرنے کی گنجائش ہے۔ میں اس میں مضامین ڈالنے کی رفتار کو بڑھا دیتا۔ مگر لائٹ اور نیٹ کا مسلہ میری راہ میں رکاوٹ بنے ہوئے ہیں۔ کیوں کے میں پہلے بھی ان پیج پر کام کرتا تھا اور کافی کچھ میں نے لکھا ہوا ہے۔ جس کو ایڈیٹ کرکے بھی ڈال رہا ہوں اس کے علاوہ کچھ نیا بھی لکھا ہے۔ میرے ساتھ مسلہ یہ ہے کہ میں نے نیٹ پر کام ابھی شروع کیا۔ اس لیے مجھے نیٹ کے بارے میں زیادہ کچھ نہیں جانتا ہوں۔ اور فیس بک میں کچھ بلکہ ڈیرھ دو ماہ سے استعمال کر رہا ہوں۔ اس لیے وکی پیڈیا کی سافٹ ویر استمعال کرتے ہوے دقت ہوئی اور اب بھی اس کو پوری طرح سمجھ نہیں پایا ہوں۔ اس لیے میرے مضامین جس طرح ڈالے جا رہے ہیں یا پیش کیے جا رہے ہیں میں ان سے مطمعین نہیں ہوں۔ دوسرا مسلہ یہ ہے آپ نے مختلف عنوانات جو رکھے ہیں میں ان سے مطمعین نہیں ہوں۔ سلطنت اشکانیان کو اشکانی یا اشکانیان کے نام سے ہونا چاہیے۔ اس طرح سلوقی سلوکی کے نام سے، اس طرح ہمارے یہاں کا ہر پڑھا لکھا فرد جانتا ہے کہ نوشیروان عادل کون تھا۔ لیکن اس کو خسرو کے نام سے پڑھے لکھے بھی نہیں جانتے ہیں۔ لہذاآپ سے گزارش ہے معروف نام کو اختیار کریں۔ رہا لکھنے کو میرے پاس اتنا مواد ہے کہ دس سال تک بھی کام کروں تو ختم نہیں ہوگا بشرطیکہ زندہ رہا۔ لہذا میرا قلمی تعاون جاری رہے۔ ایک گزارش یہ کرنی ہے کہ میرے اکاونٹ بناتے ہوئے مجھ سے اے رہے گیا جس کی وجہ سے انصاری کی بجائے انصری ہو گیا اس کو درست کر دیں تو نوازش ہوگئ۔
المخلص
عبد المعنی انصاری
انصاری صاحب، آپ کے مضامین ماشاء اللہ بہت اچھے ہوتے ہیں ِ۔ آج تو ایک مضمون میں دیکھا کہ حوالہ جات بھی ویکی پیڈیا کے طریقے کے مطابق تھے۔ جب میں ویکی پیڈیا پر آیا تھا تو ایک ایک لفظ طاہر بھائی اور شعیب بھائی سے پوچھا کرتا تھا۔ آپ فکر نہ کریں۔ آپ بھی ویکی پیڈیا سے اور انٹر نیٹ سے بہت اچھے سے واقف ہو جائیں گے۔ لائٹ اور نیٹ کی سپیڈ سب کا مسئلہ ہے۔ بس جب فرصت ملے تھوڑا ساٹائم نکال لیا کریں۔ آپ کی بات بالکل درست ہے کہ عنوانات مشہور ناموں پر ہی ہونے چاہیے، اس میں ایک قباحت یہ ہے کہ ہم نے ویکی پیڈیا کی پالیسی بنائی ہوئی ہے کہ عنوانات انگریزی ویکی پیڈیا کے مطابق رکھیں گے۔ اس سے پہلے عنوانات پر کافی اعتراض ہوتے تھے، سو وہ ختم ہو گئے۔ مگر آپ فکر نہ کریں۔ اس کا طریقہ ہمارے پاس ہے۔ سب سے پہلے تو مضمون کی پہلی لائن میں ہی مشہور نام ساتھ لکھ کر وضاحت کر دی جاتی ہے۔، اس کے بعد مشہور نام سے صفحہ بنا کر اسے مضمون کی طرف ری ڈائریکٹ کر دیتے ہیں، یعنی اگر کوئی مشہور نام سے بھی تلاش کرے تو بھی وہ اصل مضمون تک پہنچ جائے۔ انگریزی ویکی پیڈیا پر اشکانی کا الگ سے مضمون نہیں، انہوں نے اشکانی کو سلطنت اشکانی کی طرف ہی ری ڈائریکٹ کیا ہوا ہے۔ اگر آپ اشکانی پر الگ صفحہ بنانا چاہتے ہیں تو بنا سکتے ہیں، انگریزی والے جب اشکانی کا الگ صفحہ بنائیں گے تو تب ہم مربوط کر دیں گے، ورنہ ہمارا صفحہ موجود رہے گا، اشکانی اور سلطنت اشکانی میں ایک دوسرے کے روابط بھی ڈال دیں گے۔ باقی مسائل بھی وقت کے ساتھ ساتھ حل ہوتے رہیں گے، ان شائ اللہ۔ طاہر بھائی، انصاری بھائی کے نام کو ری نیم کر دیں یا کروا دیں۔ اگر میٹا ویکی پر کروانا ہے تو لنک خود درخواست دے دیں۔ باقی انصاری بھائی سافٹ وئیرز کے حوالے سے کوئی بات پوچھنی ہو تو بھی پوچھ لیا کریں۔ اگر آپ ان پیج کا نیا ورژن استعمال کر رہے ہیں تو آپ ٹیکسٹ کو ان پیج میں ہی ایڈٹ کرنے کے بعد کاپی کر کے ویکی پیڈیا میں پیسٹ کر سکتے، اگر پرانا ورژن ہے تو اس کے لیے بھی میرے پاس سافٹ وئیرز ہیں۔امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 20:58, 5 دسمبر 2014 (م ع و)

نام[ترمیم]

السلام علیکم عبد المعین صاحب،کیسے مزاج ہیں؟ Smiley kabelsalat.gif
ماشاء اللہ آپ کی تحریریں پر از معلومات ہیں، ان سے استفادہ کر رہا ہوں خوب۔ بس ایک بات خیال رکھیں کہ اپنا نام مضمون میں درج نہ کریں، آپ کا نام مضمون کے تاریخہ میں خودبخود محفوظ ہوجاتا ہے۔ اور دوسری بات اپنا مواد پہلے سے موجود مواد کے بعد درج کریں۔ امید ہے آپ کے معلوماتی مضامین پڑھنے ملتے رہیں گے۔ ممنون :) یہ صارف منتظم ہے—خادم—  19:18, 28 نومبر 2014 (م ع و)

نیز متن میں حوالہ جات اس انداز میں درج کیے جاتے ہیں، اس سے مربوط انداز میں حوالہ جات مضمون کے آخر میں ظاہر ہوجاتے ہیں۔ --:) یہ صارف منتظم ہے—خادم—  19:43, 28 نومبر 2014 (م ع و)
میرا خیال ہے، میرے اوپر والے پیغام سے شاید غلطی فہمی ہوئی ہے، معین بھائی، نام اور دستخظ صرف تبادلہ خیال کے صفحات پر لکھا جاتا ہے۔ مضمون میں نہیں۔امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 08:14, 29 نومبر 2014 (م ع و)

ایرج[ترمیم]

اسلام علیکم، آپ کے مضمون ایرج کا سارا مواد ایرج بن فریدون کے نام سے پہلے سے موجود صفحے میں منتقل کر دیا گیا ہے۔ تور اور سلم کے عنوانات سے بھی پہلے سے صفحات موجود ہیں۔ آپ جب بھی مضمون بنایا کریں توانگریزی ویکی پیڈیا پر انگریزی مضمون دیکھ لیا کریں۔ وہاں بائیں جانب زبانیں کا آپشن ہوتا ہے، اس کے نیچے وہ تمام زبانیں لکھی ہوتی ہیں، جن میں وہ مضمون دستیاب ہوتا ہے۔ اگر وہاں اردو کا نام نہ ہو تو اردو میں مضمون بنا لیا کریں۔ اگر اردو میں مضمون ہو تو سارا مواد موجودہ مضمون میں ڈال دیا کریں َ۔امین اکبر (تبادلۂ خیالشراکتیں) 12:17, 3 دسمبر 2014 (م ع و)

صارف نام کی تبدیلی[ترمیم]

صارف نام کے لیے اس صفحہ پر دوخواست دینا پڑتی ہے۔17:10, 14 دسمبر 2014 (م ع و)

گزارش[ترمیم]

السلام علیکم عبد المعین صاحب یقینا آپ کے درج کردہ معلومات انتہائی مفید اور قابل استفاد ہیں اور ہم آپ کے اس محنت اور کوششوں کو سراہتے ہیں اور شکریہ ادا کرتے ہیں۔ بس گزارش یہ تھی کہ اگر ہو سکے تو مضامین کو عام الفاظ میں لکھیے اور کوشش کریں کہ ایک جملے میں دو تین جملوں کا نچوڑ ہو یعنی اختصار ہوئی۔ میں تنقید نہیں بلکہ انتہائی نرمی سے کہہ رہا ہوں اور اگر کسی قسم کی مدد کی ضرورت ہو تو آپ مجھ سے ضرور اظہار کریں یا طاہر بھائی یا محمد شعیب سے مدد لے سکتے ہیں۔ آپ کا بھائی عثمان

ملکیت مضامین[ترمیم]

معین انصاری بھائی، ماشہ اللہ آپ کافی اچھا کام کر رہے ہیں۔ آپ سے ایک گزارش ہے کہ ویکیپیڈیا پر مضامین کسی ایک شخص کی ملکیت نہیں، اس لیے براہ مہربانی مضمون کے آخر میں اپنا نام تحریر نہ کریں۔ جیسا کہ آپ جانتے ہی ہیں کہ ہر صارف کی جانب سے ویکیپیڈیا پر کی گئی کوئی بھی تبدیلی اس صفحہ کے تاریخچہ میں محفوظ ہو جاتی ہے۔ دیکھیے ویکیپیڈیا:ملکیت مضامین۔ --طاہر محمود (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:23, 3 جنوری 2015 (م ع و)

  • محترم طاہر محمود صاحب

اسلام علیکم * آج الحمد للہ میں نے اکسٹھواں مقالہ برہمن شاہی وکی میں ڈالا ہے۔ لیکن اب میں سوچ رہا ہوں کے آئندہ وکی میں لکھوں کہ نہیں لکھوں؟ اس کی بنیادی وجہ یہ ہے کہ وکی کے بیشتر لکھے گئے مضامین چند لائنوں پر مشتنمل ہیں اور ان کا مواد بھی تاریخ سے ماخذ نہیں ہے لہذا ان کا معیار نہایت ادنیٰ ہے۔ بلکہ یہ کہنا بہتر ہوگا کے خالی جگہ پر کی گئیں ہیں۔ مثلاً سہارن پور پر ایک طویل مضمون لکھا گیا ہے لیکن اس کا سہارن پور سے کوئی تعلق نہیں ہے اس طرح اودھ کے شاہی خاندان کو مجوکہ کی شاخ بتایا گیا ہے۔ اس طرح کے مضامین مستند نہیں ہوتے ہیں اور نہ ہی ان کو ریفرنس کے طور پر استعمال کیا جاسکتا ہے۔ اس طرح اکثر مضامین ایک آدھ لائنوں مشتمل ہیں، جو مضمون کہلانے کا حق نہیں رکھتے ہیں اور بہت سے مضامین ایسے ہیں جو خرافات سے پر ہیں لہذا کوئی مستند اضافہ ان کے ساتھ اپنی اہمیت کھودے گا۔ اس لیے ان کے ساتھ میں نے لکھنے سے پ رہی ز کیا ہے۔ میرا خیال ہے وکی صرف شوقیہ اور چند لائیں لکھنے والوں کے لیے بہتر ہے، جب کہ مستند مقالوں کے لیے وکی نہیں ہے۔ کیوں کہ وکی تو تختہ سیاہ کی طرح ہے جہاں کوئی بھی آکر پرانی تحریر ہٹا کر اپنی پسند کی تحریر لکھ سکتا ہے، لہذا اس پر لکھنے کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔ جب کہ طویل مضمون لکھنے والوں کے مصارف بھی زیادہ آتے ہیں، اس لیے میں بہتر سمجھتا ہوں کہ وکی پر نہیں لکھوں۔

  • آپ نے وکی میں اردو میں لکھے ہوئے مضامین کی تعداد ایک لاکھ تک بڑھانے کے لیے ایک سال کا ٹارگیٹ مقرر کیا ہے، وکی میں جس طرح کے مضامین لکھے گئے ہیں اس طرح کے مضامین ہر موضوع ایک سال کیا میں ایک ماہ میں لکھ سکتا ہوں، مگر اس کی کوئی علمی حیثیت نہیں ہوگی۔
  • اگر وکی کا ایک مستند اور ریفرنس کے طور پر استعمال دیکھنا چاہتے ہیں تو میری گزارش ہے کہ آپ وکی کے آرگنائزر سے مندرجہ ذیل تجاویز منظور کروائیں * وکی میں لکھے جانے والے مقالوں کا ایک معیار ہونا چاہیے اور لکھے جانے والا مقالہ کو ایک ماہرین کی کمیٹی بغور جائزہ لے کر اس کی منظوری دے اور اس میں کسی کی دسترس نہیں ہونا چاہیے۔ بے شک اس میں اضافہ یا کمی بیشی کی جاسکتی ہے لیکن یہ منظوری بھی متلقہ کمیٹی دے۔

* وکی میں بہتر مضامین لکھوانے کے لیے علمی حیثیت کے ماہرین کی خدمات حاصل کی جائیں اور ضروری نہیں ہے کہ لکھنے والا ہی وکی پر وہ خود ہی لوڈ کرے بلکہ یہ وکی کو چاہیے کہ خود ہی کام کرے، کیوں کہ اکثر اہل علم انپیج پر ٹائپ کرنا نہیں جانتے ہیں وکی کے سافٹ ویئر کا ذکر کیا۔ * ہر وہ شخص جو وکی کے لیے مضامین لکھے اور اس کو متعلقہ کمیٹی معیاری قرار دیدے تو لکھنے والے کا مقالے پر اس کا نام آنے کے علاوہ کچھ نہ کچھ ایواڈ ملنا چاہے، کیوں کہ لکھنے والا لکھنے کے لیے اپنی بہترین تحقیقی صلاحییتں استعمال کرتا ہے، جس میں وقت کا استعمال، محنت و مشقت کرنی ہوتی ہے اور وکی میں ایڈ کرنے میں لکھنے والے کو اس کے مصارف اٹھانے پڑتے ہیں۔ جب کہ جو لوگ وکی کو دیکھتے ہیں اس کی ڈاؤن لوڈنگ کا معاوضہ بھی وکی کو ملتا ہے۔

  • رہا میرے نام کے لکھنے کا سوال میں نے ان مقالوں کو لکھنے میں محنت اور تحقیق سے کام لیا ہے لہذا میں سمجھتا ہے ان مقالوں پر نام لکھنا میرا حق ہے۔ اگر آپ یہ سمجھتے ہیں کہ نام لکھنا غلط ہے تو میری گزارش ہے کہ میرے مقالوں کو ڈیلٹ کر دیں۔
  • وکی ترقی کے لیے دعا گو
  • المخلص
  • معین انصاری
معین انصاری صاحب، دراصل جب بھی کوئی نیا صارف ویکیپیڈیا پر آتا ہے تو اور خوش آمدید کا پیغام دیا جاتا ہے، جس میں ویکیپیڈیا کے اصول و ضوابط بھی درج ہوتے ہیں۔ دیکھیے:
آپکی بات درست ہے کہ اردو ویکیپیڈیا پر مضامین کا معیار انگریزی ویکیپیڈیا کے مقابلے میں بہت کم ہے، جس کی سب سے بڑی وجہ صارفین کی کم تعداد ہے۔ اردو بولنے والوں (دیگر زبانوں کے مقابلے میں) کی نسبت سے اردو ویکیپیڈیا پر صارفین کا تناسب بہت کم ہے۔ صارفین کی کم تعداد کی وجہ کمپیوٹر اور موبائل پر اردو کی بجائے رومن اردو کا استعمال ہے۔ یہاں تمام ساتھی بطور رضاکار (بلا معاوضہ) ویکیپیڈیا سے زیادہ اردو کی ترویج کے لیے کام کر رہے۔ کامیابی کے لیے آپ جیسے ساتھیوں کی اشد ضرورت ہے۔
نام لکھنے کے بارے میں عرض ہے کہ مضمون کے تاریخچہ میں صارف کا نام متعلقہ ترامیم کے ساتھ درج ہو جاتا ہے۔ جو ویکیپیڈیا کی مختلف رپورٹس میں بھی دیکھا جا سکتا ہے۔
--طاہر محمود (تبادلۂ خیالشراکتیں) 08:51, 4 جنوری 2015 (م ع و)

اعزاز آپ کے لیے![ترمیم]

عثمان صاحب اسلام علیکم آپ نے جو اعزاز بخشا ہے اس کا شکریہ یہ آپ کی محبت ہے کہ مجحے اس قابل سمجھا۔ پشتون میں آپ کے حوالے سے جو اعتراضات کیے ہیں وہ میری سمجھ میں نہیں آ رہے ہیں، براہ مہربانی اس کی وضاحت کر دیں۔ میں انہیں دور کرنے کی کوشش کروں گا۔ المخلص معین انصاری

Team Barnstar Hires.png اعزاز برائے تعاون
آپ نے جو محنت کیا ہے اردو ویکیپیڈیا پر۔ ہم تہ دل سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔ مستقبل میں بھی اسی طرح جاری رکھیے۔ شکریہ
Animalibrí.gif
خیرخواہ عثمان 00:46, 2 فروری 2015 (م ع و)

اسلام علیکم میں نے ذکری فرقہ پر وکی میں آڑٹیکل دیکھا ہے۔ اس میں جو کچھ لکھا گیا ہے وہ انسائکیلوپیڈیا کے مظابق نہیں ہے۔ کیوں کہ اس میں ذکریوں کے خلاف اور ان کے خلاف اخدامات کرنے کی اپیل کی گئی ہے۔ حالانکہ مولف کو کسی بھی فرد یا گرہ کے خلاف نہیں لکھنا یا اقدامات کی اپیل نہیں کرنا چاہیے۔ بلکہ غیر جانبدار ہو کر بیان کرنا چاہیے۔ میری گزارش ہے۔ وکی میں اس قسم کی ذاتی عناد سے اجتناب کیا جائے۔ شکریہ معین انصاری

Nuvola apps edu languages.svg
سلام Abdul Moin Ansri!
تبادلۂ خیال:حخمانیشی سلطنت پر آپ کے لیے نیا پیغام ہے۔
آپ اس اطلاع کو کسی بھی وقت ختم کرسکتے ہیں؛ اس کے لیے آپ {{باز گفتگو}} کو ختم کردیں۔

مضمون کے لوازمات[ترمیم]

محترم!
آپ کافی کچھ لکھ چکے ہیں، مگر آپ نے دیکھا ہو گا کے آپ مضمون کے آخر پر کچھ ضروری سرخیاں ہوتی ہیں، وہ نہیں ڈال رئے، جس سے مضمون خوبصورت نظرنہیں آتا،

  • سب سے پہلے تو مضمون کے شروع میں پورے مضمون کی بنیادی باتیں کو بطور خلاصہ لکھا جاتا ہے (یہ کام آپ مضمون لکھنے کے بعد بھی کر سکتے ہیں، آسانی کے لیے)
  • اس کے بعد الگ الگ مواد کو الگ الگ سرخیوں سے ظاہر کیا جاتا ہے، تا کہ قاری کی توجہ حاصل کی جا سکے، جیسے کسی شخصیت یا شہر یا سلطنت پر آپ مضمون لکھتے ہیں، تو پہلی سرخی میں شخصیت کے لیے خاندان، ابتدائی تعلیم، وغیر کی سرخی دی جا سکتی ہے، اسی طرح کسی شہر کے مضمون میں یا سلطنت کے مضمون میں پہلی سرخی تاریخ یا وجہ تسمیہ وغیرہ ہو سکتی ہے،
  • باقی میں تصنیفات، اعزازات، اعتراضات یا تنقید، اہم نظریات، اہم جنگیں، واقعات، وفات، قتل، تدفین، مزار، قبر، اثرات، وغیرہ اس طرح آپ اپنے مواد کو اگر سرخیوں میں بانٹ دیں گے تو پڑھنے والے کے لیے اپنے مطلوبہ مواد کو تلاش کرنے میں بھی آسانی ہو گی اور بعد میں آپ یا کوئی اور میں اضافہ کرنا چائے گا تو اسے بھی مناست مقام کا پتہ ہو گا کہ کس سرخی میں مواد کو شامل کرے۔
  • آخر پر مزید دیکھیے، حوالہ جات، بیرونی روابط، زمرہ جات ہوتے ہیں، اگر آپ اس جھنجھٹ میں نہیں پڑھنا چائتے تو اس کے لیے میں نے ابھی ابھی ایک سانچہ بنایا ہے اسے کاپی کر لیں یا یا د کر لیں، مضمون کے مواد جہاں پر ختم ہو اس کے نیچے اس طرح کی دو بریکٹ {{ کے اندر لوازمات لکھ کر پھر ایسی ہی بریکٹ کو الٹے رخ سے ڈال دیں، اس طرح {{لوازمات}}، تو محفوظ کرنے پر خود بخود یہ آخر والی سرخیاں بن جائيں گی۔

--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 06:54, 14 فروری 2015 (م ع و)


معین انصاری بھائی، آپ اردو ویکیپیڈیا پر کافی اچھا اضافہ کر رہے ہیں۔ برائے مہربانی ان باتوں کا خیال رکھیں۔

  1. نیا پیراگراف شروع کرنے کے لیے ایک اضافی سطر خالی چھوڑ دیں اس کے لیے * لگانے کی ضرورت نہیں۔ اسی طرح <br /> زمز سے بھی نئی سطر پر جا سکتے ہیں۔
  2. بنیادی سرخی کے لیے == بنیادی سرخی == یہ رمز استعمال کریں۔ درجہ دوم سرخی کے لیے === درجہ دوم سرخی===

بنیادی سرخی[ترمیم]

درجہ دوم سرخی[ترمیم]

درجہ سوم سرخی[ترمیم]

درجہ چہارم سرخی[ترمیم]
  1. اپنے مضامین (اگر انگریزی ویکیپیڈیا پر بھی موجود ہوں) کو بین اللسانی روابط دیں۔ دیکھیے معاونت:بین اللسانی روابط
  2. اپنے مضامین مناسب زمرہ جات میں رکھیں۔ اس کے لیے صفحہ کے آخر میں یہ ترمیز داخل کریں۔ [[زمرہ:مناسب زمرہ بمطابق مضمون]] اگر یہ زمرہ انگریزی ویکیپیڈیا پر بھی موجود ہو تو معاونت:بین اللسانی روابط کے مطابق اسے بھی بین اللسانی ربط دیں۔
  3. ہدایات برائے تحریر بھی دیکھ لیں۔

--طاہر محمود (تبادلۂ خیالشراکتیں) 05:40, 17 فروری 2015 (م ع و)

تمثیلی ہدایات[ترمیم]

السلام علیکم معین بھائی، امید ہے مزاج بخیر ہونگے! ماشاء اللہ آپ کی وجہ سے اردو ویکیپیڈیا کا وہ خلا پر ہورہا ہے جو ایک عرصہ سے موجود تھا، جس تندہی، دلجمعی اور استقامت کے ساتھ آپ مضامین لکھ رہے ہیں وہ نہ صرف قابل صد ستائش بلکہ قابل تقلید بھی ہے۔ آپ کے تحریر کردہ مضامین انتہائی قیمتی معلومات کے حامل ہوتے ہیں، ابھی عاجز نے آپ کے تحریر کردہ ایک مضمون میں یہ ترمیم کی ہے، اسے بغور دیکھیں، ان ترامیم کی وجہ سے مضمون کی شکل کتنی نکھر گئی ہے۔ میں نے مواد کا اضافہ نہیں کیا، مواد آپ ہی کا تحریر کردہ ہے تاہم چند معمولی ترامیم ہیں، مثلا کسی کتاب کا حوالہ دینا ہو تو اس کو کیسے لکھتے ہیں، آغاز سطر میں کسی قسم کا خلا نہ رہے وغیرہ۔ آپ اس مثال سے اچھی طرح سمجھ جائیں گے۔ ان معمولی امور کی پیروی آپ کے تحریر کردہ مضمون کو ویکی معیار پر لے آئے گی۔ نیز ایک بات مزید کہ کسی بھی نئے مضمون کو تحریر کرنے سے قبل اس امر کی یقین دہانی فرمالیجیے کہ پہلے سے اس موضوع پر کوئی مضمون موجود نہ ہو، مثلا آج آپ نے فاطمین مصر نامی مضمون لکھا جو پہلے سے سلطنت فاطمیہ کے نام سے موجود ہے۔ ویکیپیڈیا میں اوپر بائیں جانب تلاش کا خانہ موجود ہے، آپ اس کے ذریعہ پہلے سے موجود مضامین کی تلاش بآسانی کرسکتے ہیں۔ امید ہے ان انتظامی گذارشات پر یقینا عمل فرمائیں گے، والسلام --:) یہ صارف منتظم ہے—خادم—  04:09, 5 مارچ 2015 (م ع و) م ع و صاھب اسلام علیکم صاحب ۔ آپ کا مضمون درست کرنے کا شکریہ ۔ حقیقت میں کوئی شخص کتنا ہی بڑا عالم ہو وہ کہیں نہ کہیں غلطیاں کر سکتا ہے ، پھر تو میں ایک مبتدی ہوں ۔ لہذا ضرورت اس بات کی ہے کہ جو مضامین وکی میں ایڈ ہوتے ہیں ان کی درستگی کے لیے بھی کسی بوڈ کا ہونا ضروری ہے ۔ مجھے سوفٹ ویر کے بارے میں زیادہ معلومات نہیں ہے اس لیے مجھے اس بات کا احساس ہے کہ میرے مضامین درست طرح سے ایڈ نہیں ہو رہے ۔ لہذا ان کی درستگی کی توجہ دلانے کا شکریہ ۔ فاطمین مصر کے نام کو میں نے تلاش کیا تھا ، مجھے نہیں ملا اس لیے میں نے اس پر مضمون لکھا ہے ۔ رہا سلطنت فاطمین میں ایڈ کرنے کا سوال تو ذیل بالا پر غور کر کے فیصلہ کریں ( �۱ �) تاریخ میں فاطمین مصر کے نام سے مشہور ہیں لہذا اس کو فاطمین مصر کے نام سے ایڈ ہونا چاہے یا سلطنت فاطمین کے نام سے ؟ (� ۲ ) آپ کا کیا خیال ہے کون سا مضمون جامع ہے ؟

اگر آپ کا خیال ہے کہ سلطنت فاطمین جامع ہے تو میں اپنا مضمون ڈیلٹ کردوں گا ۔

مجھے امید ہے آپ درست اور بہتر فیصلہ کریں گے ۔

المخلص معین انصاری

مضمون کی اہمیت[ترمیم]

محترم! بہت خوشی کی بات ہے کہ آپ مسلسل لکھ رئے ہیں، آپ کو پہلے بھی محتلف باتوں کا خیال رکھنے کا کہا گيا ہے، آپ اپنے مضامین کے آخر میں اپنا نام نہیں لکھ سکتے (یہ تاریخچہ میں بلحاظ ترامیم، وقت اور مقدار شامل کیے گئے مواد کے ساتھ خود ہی محفوظ ہوتا رہتا ہے)، دوسری بات اگر آپ کو دوسری زبان کے انہی مضامین سے اپنے مضامین کا ربط کرنا نہیں آتا یا آپ اس کےلیے وقت نہیں نکال سکتے تو کوئی مسئلہ نہیں وہ کام میں کرتا جا رہا ہوں، لیکن آپ صرف ایک کام ضرور کریں، عنوان کو انگریزی میں بلکل نا دیں۔ اردو میں عنوان لکھیں، اور کم از کم مضمون کے اندر جو شہروں کے نام آتے ہیں ان میں ایک دو کو ہی مربع قوسین شہر نام میں اس طرح کر دیا کریں، تب ہی آپ کا مضمون گنتی میں آتا ہے جب اس کا ربط دوسرے مضامین سے ہو جاتا ہے۔ عبیداللہ مہدی کو آپ اگر اب دیکھیں تو آپ کو پیٹرن سمجھنے میں آسانی ہو گی۔ یہ کام صرف 3 منٹ میں آپ خود بھی کرنا چائیں تو ہو جائے گا، بس آپ انگریزی ویکیپیڈیا کا مضمون ترمیم کے لیے کھول کر اس کا سائیڈ بار کاپی کر کے پیسٹ کر دیں اور آخر میں زمروں سے اوپر ایکسٹرنل لنک تک کا مواد کاپی کر کے پیسٹ کر دیں، باقی کام میں اور روبہ جات کر دیں گے، مضمون جتنا خوبصورت دیکھنے میں ہوگا اتنا ہی عوام اسے پڑھنے کی کوشش کرے گی، اس طرح آپ کی محنت کا حق بھی ادا ہو گا، کیوں کہ اصل مقصد تو لوگوں تک معلومات پہنچانا ہے جب وہ مضمون تک ہی نا پہنچ سکیں یا مضمون حوالہ جات سے عاری تو آپ کی محنت ضائع ہونے کا خطرہ ہوتا ہے۔ امید ہے آپ اپنی رائے سے آگاہ کریں گے۔

کسی بھی جگہ پر اپنے پیغام کے آخر میں اپنے دستخط ضرور ڈالیں، اس کے لیے درج کریں یہ علامت --~~~~ یا اس (Insert-signature.png) بٹن پر کلک کریں۔ Signature-guide-ur.png

--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 19:30, 8 مارچ 2015 (م ع و) محترم عبید صاحب میں اردو میں لکھ رہا ہوں اس لیے انگلش میں نام لکھنے کا سوال ہی پیدا ہوتا ہے ۔ میں نے سلطنت فاطمیہ کے لکھے ہوئے ناموں کو کلک کیا تو اس نام کا پیج آیا تو وہ انگلش میں تھا ۔ اس لیے میں نے اس ہی میں اپنا مضمون لوڈ کیا ۔ مہربانی کرے اس خرابی کو درست کریں ۔ باقی آپ کی ہدایات پر عمل کرنے کی کوشش کروں گا ۔ شکریہ المخلص معین انصاری

او اچھا، اصل میں یہاں پر کچھ روبوٹ ہوتے ہیں (روبہ) جن کا کام انگریزی سرخ روابط کو (اگر اردو میں مضمون لکھا ہوا ہو یا لکھا جائے، اور وہ انگریزی ویکی کے مضمون سے جڑا ہوا ہو تو اسے خود کار طور پر اردو میں بدل دیتا ہے۔ جب کوئی بڑی فہرست دی جاتی ہے تو اس میں ہم لوگ انگریزی میں بعض دفعہ چھوڑ دیتے ہیں، جس وجہ سے آپ کے ساتھ یہ مسئلہ ہوا۔ کیونکہ بعض دفعہ مضمون نگار کو پتہ نہیں ہوتا کہ ان شخصیات کے اصل نام کیا ہیں، اور یہ بھی کہ کن کن پر مضمون لکھا ہوا ہے تو وہ ان ناموں کو انگریزی میں ہی چھوڑ دیتا، جو جو مضامین ہوتے ہیں ان کو روبہ جات اردو میں منتقل کر دیتے ہیں۔ بہر حال آپ فہرست فاطمین مصر والے کو بھی اگر ممکن ہو تو خود ہی سب ناموں کو اردو میں جو نام ہونا چائیے اس سے بدل سکتے ہیں۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 03:52, 9 مارچ 2015 (م ع و)

قانون اسلامی کے مآخذ[ترمیم]

محترم عبید رضا صاحب آپ نے میرا لکھا ہوا ایک مضمون ’’ اسلامی فقہ کے ماخذ ‘‘ حذف کردیا ۔ برائے مہربانی اس کا جواز بتادیں تو مہر بانی ہوگی ۔ شکریہ المخلص --Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 10:05, 23 مارچ 2015 (م ع و)معین انصاری

اسے قانون اسلامی کے مآخذ سے رجوع مکرر کر دیا ہے اب، آپ کا مضمون اس موضوع پر برائے راست نا تھا بلکہ شاہ ولی اللہ صاحب اور ماخذ فقہ پر تھا، جو غیر ویکی انداز کا مواد تھا۔ اور انداز تحریر میں بھی کسی مذہبی رسالے کا گمان ہوتا تھا۔ ویکی پیڈیا میں کیونکہ رسائل و جرائد والا انداز نہیں ہوتا، یہ بھی وجہ تھی۔ اور مواد میں غیر ضروری تفصیل تھی (کیوں کہ وہ شاہ صاحب کے نقطہ نظر کو بیان کرنے کے لیے تھا) امید ہے، آپ سمجھ گئے ہونگے، ہاں آپ اس میں اب مناسب تبدیلی کر سکتے ہیں، مگر یاد رئے پورے کا پورا مقالہ کسی رسالے سے لینا مناسب نہیں، کیونکہ اس طرح صرف ایک ہی شخص کی ذاتی رائے اور علم پر مبنی معلومات شامل ہوتی ہیں، جس میں غلطی و اختلاف کی گنجائش زیادہ ہونے کا خدشہ ہوتا ہے۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 10:42, 23 مارچ 2015 (م ع و)
محترم عبید رضا صاحب

آپ نے میرا لکھا ہوا مضمون ’اسلامی فقہ کے ماخذ‘ 21 مارچ کو حذف کردیا اور آپ 23 مارچ کو اس نام سے لکھا ہوا اپنا مضمون وکی میں ڈالا ہے۔ میرے دریافت کرنے پر آپ کا کہنا ہے کہ اس مضمون میں شاہ ولی اللہ کا نام آنے سے رسالے کا گمان ہورہا ہے اور یہ ویکی کا انداز نہیں ہے۔

محترم عبید صاحب میں نے دو ماہ پہلے یہ مضمون وکی میں شامل کیا تھا۔ آپ نے اس کی طرف میری توجہ نہیں دلائی۔ بلکہ پہلے اسے حذف کر دیا اور پھر خود اپنا لکھا ہوا مضمون ڈال دیا۔ جو کہ میرے مضمون کا خلاصہ ہے۔

محترم صاحب اس مضمون میں میں نے چند جگہوں پر شاہ ولی اللہ کا اس لیے دیا ہے کہ وہ عالم اسلام کے ایک ایک بڑے عالم اور ایک مکتبہ فکر کے بانی ہیں۔ جن جگہوں پر شاہ ولی اللہ کا حوالہ آیا ہے کیا اس بارے میں تمام امہ کا موقف اس سے الگ ہے؟ یا یہ شاہ ولی اللہ کا ذاتی موقف ہے؟ میں نے تو شاہ ولی اللہ کا حوالہ تو ان کے ایک بڑے عالم ہونے کی وجہ سے پیش کیا ہے۔ کیا ان کا اس بارے میں موقف دوسرے علماء سے الگ ہے؟ اور آپ نے جو مضمون لکھا ہے وہ میرے مضمون کا خلاصہ ہے۔ جب کہ میرا مضمون اس سے کہیں زیادہ تفصیلی اور جامع تھا۔

عبید صاحب آپ کہنا ہے کہ اس کا معیار ویکی کے مطابق نہیں ہے۔ کیا وکی میں نہایت ادنیٰ اور عامیانہ انداز کے مضامیں شامل نہیں کیا ہے۔ ان میں سے ایک ’ذکری‘ کی طرف میں طوجہ دلاچکا ہوں۔ اس طرح کے وکی میں لکھے گئے بہت سے مضامین نشاندہی کر سکتا ہوں۔ کیا وجہ ہے آپ کی توجہ ان طرف نہیں گئی؟

کیا اس کا مطلب یہی ہے کہ آپ نہیں چاہتے ہیں کہ میں وکی میں لکھوں۔۔۔۔ تو ٹھیک ہے ایسا ہی ہوگا۔ اس کے لیے میرے تمام مضامین حذف کردیں اور مجھے آپ سے کوئی شکایت نہیں ہوگی اور میں مزید وکی میں نہیں لکھوں گا۔

آپ سے گزرش ہے یا آپ نے میرا مضمون واپس اپ لوٹ کردیں تو میں لکھو گا ورنہ نہیں۔ دوسری صورت میں میرے تمام مضامین حذف کردیں اور میں مزید نہیں لکھوں گا۔ ورنہ دوسری صورت میں مجھے کچھ اور کرنا ہوگا۔

شکریہ

المخلص معین انصاری Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 18:28, 23 مارچ 2015 (م ع و)

اسلامی قانون کی بنیاد قران و سنت پر ہے۔ قران پر اس لیے کہ یہ خدا کا کلام ہے۔

شاہ ولی اللہ مضامین قران کو پانچ علوم میں تقسیم کرتے ہیں۔
شاہ ولی للہ نے اس علم کو فقہہ کا دائرہ کار قرار دیا ہے اور ہمارا موضع بحث یہی علم احکام ہے
ہمارا موضع بحث چونکہ محکامات ہے، اس لیے ہم اس کی بعض اہم تعریفات درج کرتے ہیں۔
شاہ ولی اللہؒ صاحب کا کہنا ہے کہ سنت کی دو حثیتیں ہیں۔
شاہ ولی اللہ کا کہنا ہے کہ چونکہ سنت قران کا بیان ہے۔
ترتیب معین انصاری
ماخذ
ڈاکڑ مولانا مظہر بقا - اصول فقہ اور شاہ ولی اللہ -ادارہ تحقیقات اسلامی اسلام آباد

آپ نے صرف ایک ہی ماخذ کا ذکر کیا ہے، وہ ہے ایک مذہبی رسالے کے ایک ہی مضمون کا جو صرف شاہ ولی اللہ اور ماخذ فقہ سے بحث کرتا ہے۔ اس میں جو چند جملے بطور حوالہ پیش کیے ہیں، آپ بتائیں کہ کیا یہ رسالے کا مضمون گمان ہوتا ہے یا نہیں؟ اور آپ کا یہ کہنا کہ میں نے آپ کے ہی مضمون کا خلاصہ دے دیا، حیرت کی بات ہے، آپ نے کوئی کہانی یا افسانہ تونہیں لکھا کہ میں اس کی نقل کی ہو۔ میں نے حوالہ جات کے ساتھ لکھا۔ اس موضوع پر جو 14 صدیوں سے چلا آرہا ہے اور صرف ماخذ کی نشاہدہی پر ہے، تو ہر وہ شخص جس نے بھی اس موضوع پر لکھا، اس نے انہی باتوں کا ذکر کرنا تھا، نا کہ کوئی نیا ماخذ بیان کرنا تھا۔ یہ چار مآخذ ہیں، ان کے بعد کچھ ضمنی مآخذ ہیں، ان سب پر الگ الگ مضامین ہیں، کچھ پر نہیں ہیں۔ مقالہ اس طرح ہی مکمل ہوتا ہے۔ اب یہ تو نہیں تو کہ ماخذ فقہ میں بھی سنت اور حدیث کی حجیت کا مسئلہ ہو اور قرآن کی تفصیل کا، قرآن پر الگ سے کئی مقالات ہیں، سنت پر ہیں، حدیث پر ہیں، فقہ اور اصول فقہ پر ہیں، اسی طرح فقہ کے ان مآخذ پر بھی ہیں۔ تو اس میں صرف خلاصہ ہی ہوگا۔ اور اصل مضامین کے ربط، مزید دیکھیے، سائیڈ بار، ناؤ بار، زمرے لگا کر لوگوں کو دوسرے مضامین کی طرف متوجہ کیا جائے گا۔

اور ہاں یہاں پر لکھنا یا نا لکھنا، یہ صارف کی مرضی پر منحصر ہوتا ہے۔ ہم کسی سے زبردستی تو نہیں لکھوا سکتے۔ نا ہی کسی کو لکھنے سے منع کرتے ہیں، مگر آپ جانتے ہیں، ہر رسالے، اخبار، چینل کتاب کا ایک طے شدہ طریقہ کار ہوتا اور وہاں پر اسی طرح لکھا جا سکتا ہے۔ اس کا یہ مطلب نہیں ہوتا کہ آپ کا لکھا غیر معیاری تھا، اس کا مطلب صرف یہ ہوتا ہے کہ وہ ہماری پالیسی کے مطابق نہیں تھا۔
ویکیپیڈیا پر کوئی بھی صارف کسی بھی مضمون میں کچھ بھی ترمیم کر سکتا ہے، کسی دوسرے کے لکھے ہوئے مواد کو مٹا کر اپنا مواد حوالہ کے ساتھ ڈال سکتا ہے۔اس لیے کسی کا یہ کہنا کہ وہ لکھے اور کوئی اس پر کچھ بھی مزید نا عمل کرے یہ ممکن نہیں، یہاں ہر صارف کے لکھے ہوئے، میں سے مضامین حذف ہوئے ہیں، مواد میں ترمیم ہوئی ہے، میرے اپنے مضامین حذف ہوئے ہیں۔ ظاہر ہے جو کچھ منتظمین کو یا صارفین کو بہتر نا لگے وہ اسے اپنے خیال میں بہتر مواد سے بدل دیتے یا حذف کر دیتے ہیں۔آپ کا باقی سارا مواد بھی ایک ہی ماخذ سے لکھا جاتا ہے، ہم نے تو کبھی اعتراض نہیں کیا۔ آپ ضرور لکھیں، پیچھے مٹ ہٹیں--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 04:57, 24 مارچ 2015 (م ع و)

محترم عبید رضا صاحب

میرے ابتدا میں لکھے ہوئے مضمون دیکھں کتنے حوالے دیئے ہیں اور وہ مستند کتاہیں ہیں۔ اگر ایک کتاب کا حوالہ دیا گیا تو اس کا مطلب یہی ہے کہ حوالہ مضمون کی ضرورتوں کو پورا کر رہا ہے۔ لیکن اس پر آپ کو رسالہ کا گمان ہورہا ہے تو میں کیا کہہ سکتا ہوں۔

رہا ضمنی موضوعات پر میں مزید تفصیل سے اور بہت سی کتابوں کے حوالوں سے لکھ سکتا تھا۔ آپ کی نظر وکی میں ڈالے ہوئے دوسرے مضامین پر نہیں گئی جو غیر مستند کتابوں کے حوالے سے فصول قسم کے مضوعات پر لکھ گئے۔ ان کو درست کرنے کے بارے میں آپ نے نہیں سوچا۔

اس کا مطلب یہی میں سمجھتا ہوں کہ آپ پسند نہیں کرتے ہیں کہ میں وکی میں لکھوں اس لیے آپ نے میری راہ میں روڑے اٹکانے شروع کئے ہیں۔ اس لیے آپ نے ایسی حرکت کی ہے۔ اگرچہ لکھنے اور ترمیم کرنے کے لیے مضوعات بہت تھے۔

Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:22, 24 مارچ 2015 (م ع و) Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:22, 24 مارچ 2015 (م ع و) معین انصاری

آپ الزام پر الزام دیئے جا رہے ہیں، اور مسئلہ سمجھنے کی کوشش نہیں فرما رئے، یہاں پر کوئی بھی صارف آپ کے مضمون میں تبدیلی کر سکتا ہے۔آپ کے موادکو ترمیم کرنا اور کسی بھی دوسرے صارف کے مواد کو ترمیم کرنا، ہر صارف کا حق ہے۔بے شک یہاں پر کچھ مواد غیرمعیاری ہے اور کچھ غیر حوالہ جاتی بھی، مگر اس سے یہ ثابت نہیں کیا جا سکتا کہ اب نئے لوگ بھی یہی غلطی کریں۔ پرانے منتظمین نے کچھ مواد کو قبول کیا ہوگا یا اسے چیک نا کیا ہو گا، جس وجہ سے آہستہ آہستہ کافی مواد غیر ضروری بھی شامل صفحات ہے۔ جسے ہم مسلسل پڑولنگ کے دوران درست کرنے کی سعی کرتے رئتے ہیں، یہ سمجھنا کہ پرانے مواد کو قبول کر لیا گیا غلط تاثر ہے۔ ذاتی کمپیوٹر کا تاریخچہ ملاحظہ کریں، یہ 2008 کا مضمون تھا جس میں، میں نے ترمیم کی ہے۔ اور کچھ مواد حذف کیا ہے۔ اسی طرح 2005 اور 2004 کے بلکل ابتدائی مواد کی بھی نشاہدہی کر سکتا ہوں۔اوپر آپ دیکھیں میں نے آپ سے کہا تھا کہہ اگر آپ زمرے، تصاویر، سانچے، اندرونی ربط، سائیڈ بار، ناؤ باکس، خانہ معلومات نہیں شامل کرنا چائتے (آپ نے کبھی ایسی کوشش نہیں کی ہے اور جواب بھی دیا ہے کہ یہ کام آپ نہیں کر سکتے) جس وجہ سے میں نے کہا تھا کہ ٹھیک ہے آپ لکھیں میں باقی کام کرتا جاتا ہوں، آپ نے دیکھا ہوگا آپ کے مواد میں اب بین الاویکی ربط، خانہ معلومات، سائیڈ بار، ناؤ باکس، اندرونی ربط وغیرہ شامل ہوتے جارئے ہیں۔ مگر آپ نے اسے روڑے اٹکانا کہہ دیا۔ آپ اگر یہ چائتے ہیں کہ آپ لکھیں اور ہم اسے من عن قبول کریں تو یہ ویکیپیڈیا اصولوں کے خلاف ہے۔ کوئی بھی صارف آپ کے مضمون میں ترمیم کر سکتا ہے۔اور ہاں جن جن فضول موضوعات پر اور فضول مضامین ہیں اور جو جو بلا حوالہ ہیں ان پر آپ سانچہ {{حذف}}، {{غیر متوازن}}، {{ویکائی}} {{انضمام}}، {{حوالہ دیں}}، {{حوالہ درکار}} کے سانچہ لگا دیا کریں تا کہ وہ نظر میں آجائیں۔ مضامین کی تعداد 70 ہزار ہے اور ہم 3 متحرک منتظیمن ہیں۔ ہم کیا کیا کر سکتے ہیں؟ ہم مستقل مزاجی سے لگے ہوئے ہیں، اور قدیم مواد کو بھی درست کیا جا رہا ہے ساتھ میں، نئے صارفین کی ترامیم خاص:حالیہ تبدیلیاں کی وجہ سے ہر وقت ہماری نظر میں ہوتی ہیں جس وجہ سے نئے مواد کو زیادہ وقت ملتا ہے اور ویسے بھی نئے لکھے ہوئے کو ساتھ ساتھ درست کروانا ہی منتطمین کی ذمہ داری ہوتی ہے، حوصلہ افزائی کے ساتھ تنقید بھی صلاحیتوں کو نکھارتی ہے۔ آپ نے جس موضوع پر لکھا اس پر مقالہ اب نئی صورت میں موجود ہے۔ جو میرے خیال میں مناسب ہے، آپ اس میں ترمیم کر سکتے ہیں، مگر اسے کوئی بھی صارف مزید ترمیم کرنے کا حق رکھتا ہے۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 19:04, 24 مارچ 2015 (م ع و)
محترم عبید رضا صاحب

عبید رضا صاحب میں آپ کی مشکلات کو سمجھتا ہوں۔ لیکن میں الزام نہیں لگا رہا ہوں، بلکہ میں حقیقت بیان کر رہا ہوں۔ کسی عام صارف نے نہیں بلکہ وکی کو کنڑول کرنے والے نے 21 مارچ کو ”اسلامی فقہ کے ماخذ“ کو سرے سے ہی حذف کردیا۔ اگر ترمیم کرتے تو کم از کم میرا نام رہتا۔ مگر خدا جانے میں نے آپ کا کیا بگاڑا تھا کہ مضمون کو سرے سے ہی حذف کردیا اور جب ۲۳ مارچ کو اس کا سبب پوچا تو آپ نے اپنا مضمون اس جواز کے ساتھ ڈال دیا کہ وکی میں ترمیم کرنے کا ہر شخص کو حق حاصل ہے۔ اگر آپ اس طرح اپنی ذمہ داری نبھاتے ہیں؟ ایسی صورت میں کیا سمجھوں؟ کاش اپنی توانائی کسی نئے مضمون کو لکھنے میں سرف کرتے۔ میں نے وکی کی خاطر عام دن میں کم از کم پانچ گھنٹے اور چھٹی وا لے دن کم از کم بارہ گھنٹے کام کرتا ہوں۔ مگر مجھے ایسا لگتا ہے کہ میرا وکی کے لیے لکھنا ناپسند کیا جارہا۔ شاید میرا زیادہ یا تیزی سے لکھنا ہی آپ کو ناگور گزرا ہے۔ اس لیے آج چوتھا دن ہے میں نے وکی کے لیے ایک لفظ نہیں لکھا۔ شکریہ المخلص معین انصاری

آپ کے لکھنے کی رفتار سے مجھے کیوں جلن ہو گی؟ اور اگر میں آپ کے ہی مضمون میں یہ سارا مواد ڈال دیتا تب بھی آپ کا اعتراض یہی ہوتا نا۔ میں بھی روزانہ 12 گھنٹے دیتا ہوں، لیکن میں نے کبھی کسی کو یہ نہیں جتایا کہ میں کتنا وقت دیتا ہوں اور نا ہی کسی صارف کو یہ کہا کہ اس نے میرا مواد حذف کر کے اپنا کیوں ڈال دیا۔مجھے آپ سے کوئی بغض ہوتا تو کیا صرف ایک یہی موضوع تھا جس سے میں اختلاف کرتا، حالانکہ میں سنی ہوں، اور شاید آپ بھی، مگر ہم دونوں نے اسماعیلی شیعہ پر لکھا اور اسے مل کر بہتر کیا، الٹا مجھے آپ سے گلہ کرنا چائیے کہ آپ کے مضامین میں اتنا ساری مفید ترامیم کرتا ہوں مگر کبھی آپ نے شکریہ کا ایک لفظ تک نہیں کہا :)۔ مگر جیسےہی کچھ مواد حذف ہوا، آپ دھمکی دینے پر اتر آئے، کیا میرے لیے یا میری وجہ سے لکھتے ہیں؟ نہیں نا۔۔۔ تو کیوں ایک مضمون کی بات لے کر آپ لکھنا ہی چھوڑ دینا چائتے ہیں؟ --Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 19:15, 26 مارچ 2015 (م ع و)

محترم عبدالمعین صاحب! میں نے پہلے بھی آپ کی کوششوں کو سراہا تھا۔لیکن جہاں تک آپ نے بات کی ترمیم و ترتیب کے متعلق تو میں یہی کہوں گا کہ عبید بھائی ایک بہترین صارف ہے اور چونکہ عبید بھائی انتظامی امور سرانجام دے رہے ہیں اور منتظم ہیں اسلئے ان کا کام ہی یہیں ہے کہ اگر کوئی مضمون میں غلطی کرے تو اس کو درست کریں۔ ہم بہت سے غلطیاں کرتے ہیں اور ویکیپیڈیا پر موجود منتظم ان غلطیوں کو درست کرتے رہتے ہیں،بلکہ اکثر ہمارے لکھے ہوئے مضامین میں کسی مخصوص شخص یا گروہ کی طرف داری نظر آرہی ہوتی ہے لیکن وہ عبید صاحب ہی ہیں جو مضامین کو غیر جانبدار بناتے ہیں تاکہ کسی کو اذیت نہ پہنچے۔ اسی طرح یہاں کے تمام منتظمین بے شمار اصلاحات کرتے ہیں، ہمیں ان پر تنقید کرنے کی بجائے ان کا شکر گزار ہونا چاہئے۔ آپ ان اصلاحات سے ناراض نہ ہو اور دل پر نہ لے بلکہ بخوشی اس بات پر پر غور کیا کریں کہ جو میں نے لکھا تھا اس میں مجھ سے کیا غلطی ہوئی تھی اور پھر آپکو آئندہ گذشتہ غلطیوں کا خیال رہے گا۔ آخر میں پھر کہوں گا کہ کسی بات کو دل پر نہ لے اور ناراض نہ ہو، یہاں کے تمام منتظمین انتہائی بہترین اور خوش مزاج لوگ ہیں :) --

Animalibrí.gif

عثمان 19:58, 26 مارچ 2015 (م ع و)

رائے درکار[ترمیم]

السلام علیکم۔ آپ کی رائے انعامی مقابلہ 2015 پر درکار ہے۔--Animalibrí.gifعثمان 14:38, 15 اپریل 2015 (م ع و)

اپنی رائے ، اپنے دستخط کے ساتھ شامل کریں، اسے استرجع کر دیا میں نے۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 19:04, 19 اپریل 2015 (م ع و)

آپ کی رائے درکا ہے![ترمیم]

محترم Abdul Moin Ansri ! مزمل صاحب کو منتظمی کے لئے نامزد کیا گيا ہے، آپ کی قیمتی رائے درکار ہے۔
یہاں رائے دیں، رائے شماری برائے منتظم صارف مزمل
--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 09:43, 22 اپریل 2015 (م ع و)

عرض[ترمیم]

السلام علیکم عبد المعین صاحب،امید ہے آپ بخیریت ہونگے Face-smile.svg۔ماشاءاللہ آپ ویکیپیڈیا میں تفصیلی مضامین لکھتے ہیں ،بس چند اور باتوں کا بھی اگر خیال رکھا جائے تو مضامین میں مزید بہتری لائی جاسکتی ہے۔سب سے پہلے تو یہ کہ ایک تفصیلی مضمون کو کبھی بھی ایک سرنامے کے نیچے نہ لکھے بلکہ کہیں قطعوں (سیکشن) میں تقسیم کیا کرے اُس قطعے کے مناسبت سے قطعے کا نام رکھے ۔۔اور اگر آپ نے کسی جگہ حوالہ دینا ہے تو خانہ ترمیم کے اوپر کتاب کی علامت (Vector toolbar insert reference button.png) پر کلک کریں اس میں حوالہ درج کریں (علامتوں کے متعلق مزید معلومات کیلئے یہاں کلک کیجئے) ۔دوسری بات یہ کہ مضمون کے آخر میں اپنا نام درج نہ کرے ، آپ کا نام خود بخود اس مضمون کے تاریخچہ میں محفوظ ہوجاتا ہے۔ تحریر کے متعلق مزید معلومات کیلئے ملاحظہ فرمائیے: ہدایات برائے تحریر--Animalibrí.gifعثمان خان||تبادلہ خیال 05:33, 7 جولا‎ئی 2015 (م ع و)

گزشتہ سے پیوستہ[ترمیم]

6 نمبر پر جو کتاب کی تصویر ہے اس پر کلک کرنے کر کے جو حانہ ظاہر ہو، اس میں حوالہ کی عبارت لکھ کر محفوظ پر کلک کریں

۔

  • کسی بھی سطر سے پہلے خالی جگہ (اسپیس) نا دیں،
  • کاما اور فل اسٹاپ (،۔) سے پہلے خالی جگہ نا دیں۔ کامے کے بعد خالی جگہ دی جاتی ہے۔
  • مضمون میں سرخیاں قائم کریں۔
  • کتاب سے پورے کا پورا مضمون من و عن نقل کرنے سے گریز کریں، یہ حقوق نسخہ کی پامالی میں آتا ہے۔ بلکہ عبارات کو ویکی کے مطابق استعمال کریں۔
  • مختصر عنوانات پر الگ الگ مضامین نا لکھیں، جیسے پاکستان میں حجری دور اور سندھ میں حجری دور، اور ان سے متعلق کئی صفحات آپ نے بنائے ہیں، ان سب کو مطلق حجری دور میں شامل کیا جانا چاہیے، خاص سندھ سے متعلق مواد کو تاریخ سندھ اور پاکستان سے متعلق مواد کو تاریخ پاکستان، تاریخ پاکستان قبل از تاریخ کے عنوان سے دیں۔
  • اپنے مضامین کے آخر میں {{ربط درکار}} کا سانچہ رکھ دیں۔
  • اس سے آپ کے مضمون پر یہ عبارت ظاہر

وہ جائے اور یہ ایک خاص زمرے مین چلے جائے گا جس سے کوئی اور اسے دیگر زبانوں میں موجود مضامین سے جوڑ (لنک) کور دے گا۔

  • کتاب کا حوالہ دیتے وقت سن اشاعت، صفحہ یا صفحات کے نمبر، جلد نمبر، ناشر کی معلومات میں دیں، آپ نے بیسیوں جگہ یحیٰی امجد ۔ تاریخ پاکستان قدیم دور کو بطور حوالہ دیا ہے، مگر، یہ کتاب کب کس نے شائع کی، اس کے صفحات کے نمبرات، آّ نے کبھی بھی نہیں دیئے۔

یحیٰی امجد، تاریخ پاکستان قدیم دور، سن، ناشر، جلد نمبر، صفحہ نمبر اس ترتیب سے حوالہ دیں، تا کہ اسے کوئی جانچنا چاہیے یا اصل ماخذ حاصل کرنا چاہیے تو اس کو تلاش کرنے میں آسانی ہو۔

  • کتابوں اور شخصیات کے متعلق اصل تحقیق بیان نا کریں، رائے زنی نا کریں، ان کو غلط یا درست ثابت نا کریں، اگر کسی ماہر کی ایسی رائے ہو تو اس سے منسوب کر کے شامل کریں۔ جیسے آپ نے مخزن افغانی (جس کی روایتیں خود تاریخ سے ماخذ نہیں ہیں) کا جملہ لکھا لے۔ ایسے بیان سے گریز کریں۔

اور خدا کا واسطہ ہے ان پر عمل کرنے کی کوشش کریں، پہلے دن سے ہر منتظم نے آپ کو ان باتوں کی طرف توجہ دلائی ہے مکر مجال ہے کہ آپ نے کبھی جواب دینے یا معل کرنے کی کوشش کی ہو۔اگر آپ کو کسی اصول یا طریقہ کار سے اختلاف ہو تو وہ ہی بتا دیا کریں، تا کہ اس مسئلہ کوحل کیا جائے۔--«User-rollbacker-admin.gif عبید رضا » 14:11, 14 جولا‎ئی 2015 (م ع و)

آپکی فوری توجہ مطلوب ہے[ترمیم]

مکرمی معین انصاری صاحب تسلیمات!
اردو ویکی پیڈیا کے ایک لاکھ مضامین کا ہدف 30 دسمبر 2015 تک مکمل کرنا ہے! موجودہ رفتار ہی قائم رہی تو ہمارا ہدف کو پانا غیر ممکن ہوتا جا رہا ہے ۔ آئیے ، توجہ دیں ! ابھی اور آج ہی! ہدف کو مل کر پائیں۔ وضاحت کے لیے مندرجہ ذیل جدول پیش ہے۔ ۔

جدول برائےمضمون شماری
دن تاریخ تعداد مضامین فی صد آج کا اضافہ مزید درکار مضامین
10 1 اکتوبر 81641 81.64% 025 18334
11 2 اکتوبر 81666 % 81.66 027 18307
12 3 اکتوبر 81693 % 81.69 025 18282
13 4 اکتوبر 81718 % 81.71 029 18253
13 5 اکتوبر 81747 % 81.74 034 18219
14 6 اکتوبر 81781 % 81.78 013 18206
15 7 اکتوبر 81794 % 81.79 065 18141
16 8 اکتوبر 81859 جاری جاری جاری
17 9 اکتوبر
100 30 دسمبر 100000 % 100 ۔ ۔

نوٹ: یومییہ 216 مضامین کی ضرورت ہے--Drcenjary (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:59, 8 اکتوبر 2015 (م ع و)

اچھا میں کچھ کرتا ہوں.Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 17:41, 11 اکتوبر 2015 (م ع و)

سومرہ دور حکومت[ترمیم]

سومرہ دور حکومت اور مذہب کے لئے دیکھے ۔ تاریخ طاہری کے حوالے تاریخ سندھ میں صفحہ 412-413 اور 418 سومرہ حکومت کا دور 143 سال لکھا گیا ہے ، صفحہ 412 میں مضمون کے شروع میں ان کی مدت حکومت 700ھ ) 1 ۔ 1300ئ ( تا 843 ) 40 ۔ 1439ئ ( لکھا ہوا ہے۔

اس طرح تاریخ معصومی میں صفحہ 82-83 دیکھے اس طرح شمس العمائ عمر داؤد پوٹا اور ڈاکٹر بنی بخش بلوچ کی توضیحات دیکھے اس میں مدت حکومت مذہب پر تفصیلی بحث کی ہے۔ سندھی ادبی بورڈ 2006 کا ایڈیشن دیکھے

اس طرح راجپوتوں کے چھتیس راج کلی میں سومرہ کے لئے جمیز ٹاد کی تاریخ راجستان میں دیکھے صفحہ 106 دیکھے ۔ مجھے امید ہے آپ کی تسلی ہوجائے گی ۔

--Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:13, 13 اکتوبر 2015 (م ع و)شکریہ


میں نے کتاب کا ریفرنس دیا ہے مگر آپ کو ان پر اعتبار نہیں میرے خیال میں آپ کے معیار پر پورا نہیں اترتا ہوں اور مجھ سے پہلے ہی مطعین نہیں ہیں ۔ اس لئے میں یہ بہتر سمجھتا ہے میرا مزید لکھنا فضول ہے لہذا اب مزید لکھنا وقت کا ضیائ ہے ۔ اور ہاں اگر چاہیں تو میرے تمام مضمون حذف کرسکے ہیں مجھے کوئی اعتراض نہیں ہوگا ۔

شکریہ

معین انصاری --Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:43, 13 اکتوبر 2015 (م ع و)

محترم وہاں سے سانچہ حذف نکال دیا گيا تھا۔ اور مضمون کو بھی مزید بہتر کرنے کی کوشش کی ہے۔ جس صارف نے اعتراض کیا تھا، اس کے تبادلۂ خیال پر بھی پیغام دیا گیا ہے۔ آپ کے پاس اگر ساری کتب ہیں تو تو مطلوبہ مقامات پر الگ الگ کتاب کا حوالہ دے دیا کریں، کیوں کہ یہی طریقہ کار ہے۔ آپ نے صرف ایک حوالہ آخر پر دیا ہے۔ جو ظاہر ہے کہ اس سارے مواد کا ماخذ نہیں۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 15:37, 13 اکتوبر 2015 (م ع و)
محترم عبید رضا صاحب

اس مضمون کا سارا مواد ایک ہی کتاب اعجاز الحق قدوسی کی کتاب ’تاریخ سندھ ‘ میں صفحہ نمبر 412 تا 418 سے لیا ہے ۔ صرف چھتیس راج کلی سے سومروں راجپوت ہونے کا حوالہ دیا ہے ۔ اس لئے مجھے دوسری کتاب کی ضرورت پیش نہیں آئی ہے ۔ اور ظاہرہے مقالہ نہیں لکھ رہا تھا ۔ کیوں کہ مقالہ لکھنے صورت میں بہت کچھ تجزیہ بھی شامل کرنا پرتا ہے ۔ جو کہ وکی کے لئے شجر ممنوع ہے ۔

عبید صاحب میں جو کچھ لکھتا ہوں وہ خرافات نہیں حقائق پر مبنی ہوتا ہے ، رہا اعتراض کی بات میرے لئے بھی وکی بہت کچھ قابل اعتراض یعنی خرافات پر مشتل ہے ۔ میں کئی دفعہ آپ کو اس کے لئے توجہ بھی دلائی مگر مجھے نہیں معلوم آپ نے کیا کیا ۔

میں نے زندگی میں کوئی کوئی جائیداد بنائی ہے تو کتابیں ۔ میں جن کتابوں کا حوالہ دیتا ہوں وہ سب میرے پاس موجود ہیں ۔ دوسری اہم بات یہ میں وکی کا ٹارگیٹ کو پورا کرنے کے لئے دو دن میں بہت کچھ لکھ دیا ۔ اس کا آپ کو اندازہ ہوگا ۔ مگر اب میں نے فیصلہ کرلیا ہے کہ میرا مزید لکھنا سود اور وقت کا ضیاء ہے ۔

شکریہ

عبدالمعین انصاری --Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 16:50, 13 اکتوبر 2015 (م ع و)-

محترم عبدالمعین انصاری آپ تاریخ کو مسخ کررہے ہیں۔ ڈاکٹر نبی بخش بلوچ کی کتاب میں اصل نسل کے عنوان سے یہ لکھا ہے۔
"روایت کے مطابق سومروں کی نسل کے بارے میں جو اشارے ملے ہیں اُس کے مطابق سومروں کا سلسلہ عربوں سے ملتا ہے۔ سومروں کے عرب ہونے کے بارے میں مندرجہ ذیل ثبوت ملتے ہیں،
  • پہلا یہ کہ سومرہ حضرت علی کرم اللہ وجہہ کی اولاد سے ہیں۔
  • دوسرا یہ کہ کے سومروں کے عرب قبیلہ کربلا کی جنگ میں حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی طرف سے لڑے، سب مارے گئے صرف ایک بزرگ مرد اور اُن کی بزرگ بیوی باقی رہ گئے جن کا ایک"سومرا"نامی کم سن بیٹا تھا، اُسے ماں نے حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ کی خدمت میں جنگ میں قربان ہونے کے لئے پیش کیا لیکن حضرت امام حسین رضی اللہ عنہ نے اُسےدعا دی کہ زندہ رہے اور صاحبِ اولاد ہو۔
  • تیسرا یہ کہ سومروں کا جدِ امجد جو کسی عرب گھرانے کا تھا بلکہحضرت علی کرم اللہ وجہہ کی اولاد سے تھا، مکہ میں پیدا ہوا، بعد میں سندھ آیا یہیں پلا اوربڑھا۔ وہ بڑی طاقت اور کلاں والا تھا اور اس قدر کہ اُسے ہوا اُڑا کر سندھ لیکر آئی۔ دیو اُسکے قبضے میں تھے اور انہوں نے ہی اُس کے پایۂ تخت وگھ کوٹ کی تعمیر کی" (سومروں کا دور (سندھی) از ڈاکٹرنبی بخش خان بلوچ، مطبع سندھی ادبی بورڈ جامشورو سندھ، 2006، ص 173-174)
آپ نے تاریخ طاہری اور تاریخ ریگستان کا حوالہ دیا لیکن دوسرے تاریخی ماخذ کا حوالہ دینا مناسب خیال نہیں کیا۔ آخر کیوں؟ اعجازالحق قدوسی تاریخِ سندھ حصہ اول میں تمام کتابوں کے حوالے دیتے ہوئے سومروں کے بارے میں آخر میں اپنی رائے دیتے ہیں کہ:
"سومرا نہ تو ہندو تھے اور نہ ہندو راجپوت، بلکہ وہ عرب تھے جو ہندوستان میں آباد ہوگئے تھے اور پشت ہا پشت یہاں رہ کر یہیں کے باشندے شمار ہونے لگے۔" ( تاریخِ سندھ حصہ اول از اعجازالحق قدوسی، مطبع اُردو سائنس بورڈ، لاہور، ص 417)
آپ نے صرف ایک کتاب کا حوالہ دیا ہے اور میں نے بے شمار کتابوں کا حوالا دیا ہے۔ اور آپ نے حکومت کا دورانیہ بھی صرف ایک کتاب سے لیا ہے لیکن دوسری کتابوں کا آپ نے حوالا نہیں دیا وہ میں دے دیتا ہوں:
"سومروں نےسندھ پر445ء - 843ء تک21 حکمرانوں نے حکومت کی (تحفتہ الکرام (اردو) از میر علی شیر قانع ٹھٹوی، سندھی ادبی بورڈ، 2006ءجامشورو،ص 115)
جبکہ
ابوالفضل نے آئین اکبری میں سومروں کی حکمرانی 500 سال بتائی ہے ( آئین اکبری حصہ دوم از ابوالفضل، ص 120)

۔ ابو ظفر صاحب ندوی کے مطابق

"سومروں کے 25 حکمرانوں نے سندھ پر حکومت کی"( تاریخ سندھ از ابو ظفر صاحب ندوی مطبع معارف اعظم گڑہ 1947 ء، ص326)
محترم اب ذرا اپنے مضمون کو دیکھئے اور سومرہ کو دیکھئے کیا یہ ایک ہی موضوع پر نہیں؟ کم از کم مضمون لکھنے سے پہلے پڑھ تو لیتے۔ اگر ایک موضوع پر دو مضمون ہیں تو ویکیپیڈیا کی پالیسی کے مطابق ایک مضمون کو حذف کرنا ضروری ہے تاکہ قارئین کو مغالظہ نہ ہو۔ کیا آپ کا مضمون اور سومرہ میں سے کون سا بہتر اور مختلف حوالوں والا ہے؟ یہ اب منتظمین کا کام ہے کہ وہ آپ کا مضمون یا کہ میرا "سومرہ" والا۔ میں آپ کے مضمون کو دوبارہ حذف کا سانچہ لگا رہا ہوں--محمد عارف سومرو (تبادلۂ خیالشراکتیں) 04:16, 14 اکتوبر 2015 (م ع و)

دعوت رائے دہی[ترمیم]

جناب Abdul Moin Ansri صاحب/صاحبہ! اس رائے شماری میں آپ کی رائے درکار ہے۔ میڈیاویکی پیغامبر (تبادلۂ خیال) 16:19، 14 اکتوبر 2015 (م ع و)

جناب عبید رضا صاحب و عارف سومرہ صاحب

اسلام علیکم

مجھے خوشی ہے آپ نے اس کی کھوج کے لئے اتنی محنت کی ہے ۔ میں نے صرف ان کتابوں کا حوالہ دیا ہے جن کی مدد سے مضمون لکھا ہے ۔ اب آپ نے چند اور حوالے دیئے ہیں ۔ یہاں سوال یہ پیدا ہوتا ہے آپ نے جو حوالاجات دیئے ہیں وہ تاریخ کی کسوٹی پر اترتے ہیں کہ نہیں ؟ کیوں کہ ہر لکھا ہوا مستند نہیں ہوتا ہے لہذا میں اس پر تفصیلی بحث آپ کو جلد دے دوں گا ۔ کیوں کہ میں صرف نام ہی نہیں دوں گا بلکہ ان پر تفصیلی بحث کروں گا ۔

اور ہاں سومرہ کے لکھے مضمون میں بہت سی باتوں سے اختلاف کرتا ہوں اور اس میں ابھی ترمیم نہیں کرنا چاہتا تھا اس لئے میں نے ایک نیا مضمون ’سومرہ حکمرانوں کی فہرست ‘ لکھا ۔ کیوں کہ وکی میں اس طرح ایک مضمون کا اضافہ ہو گیا ۔ رہا اس پر حذف لگادیں یا حذف کردیں اس حقائق نہیں بدلیں گے اور نہ ہی میری صحت پر کوئی اثر پڑے گا ۔

المخص

عبدالمعین انصاری --Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 17:34, 14 اکتوبر 2015 (م ع و)

حکمرانوں کی فہرست ویکیپیڈیا پر ایک الگ مضمون کا حامل عنوان مانا جاتا ہے۔ اس لیے وہ سانچہ ہٹا دیا گيا۔ باقی حوالہ جات، کا مستند ہونا یا کم تر ہونا ایک تاریخی اور تحقیقی بحث ہوتی ہے۔ جس سے علم کم نہیں ہوتا بلکہ بڑھ جاتا ہے۔ امید کرتا ہون کہ آپ مناسب انداز میں اپنی تحقیق و حوالہ جات مہیاکریں گے تا کہ مضمون کو بہتر کیا جا سکے۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 17:47, 14 اکتوبر 2015 (م ع و)
عبدالمعین انصاری میں نے اپنے مضمون سومرہ میں حکمرانوں کی فہرست اس لئے نہیں دی کہ تاریخ نویسوں میں اختلاف ہے۔ ورنہ جب میں مضمون لکھ سکتا ہوں تو حکمرانوں کی فہرست بھی دے سکتا تھا۔ محترم آپ جس انداز سے مضمون لکھتے ہیں اس سے اختلاف ہے۔ آپ نے ایک مضمون میں سیف المک اور بدیع الجمال میں دلو راء کو سومرہ حکمران لکھا ہے جو ایک ظالم و فاسد تھا۔ عبارت دیکھیں
روایت کے مطابق سومرہ حکمران دیو رائے بہت ظالم تھا ، کوئی خوبصورت عورت دیکھتا تو اس کو چھین لیتا ۔
تاریخ میں یہ ثابت ہے کہ دلو راء سومرہ حکمران نہیں سومرہ دور میں اروڑ کا علاقائی حاکم تھا (اس حوالے کے لئے دیکھیں "سومروں کا دور" (سندھی) از ڈاکٹرنبی بخش خان بلوچ، مطبع سندھی ادبی بورڈ جامشورو سندھ، 2006، ص 47، 81-82 اور "تحفۃالکرام" (اردو)، میرعلی شیر قانع ٹھٹوی، سندھی ادبی بورڈ جامشورو، 2006ء، ص 141 ) جس کا براہِ راست سومرہ خاندان سے تعلق نہیں ہے۔ آپ نے "تاریخ طاہری" کا حوالہ دیا ہے لیکن آپ کے پاس تاریخ طاہری موجود ہے؟۔ کیونکہ آپ کہہ چکے ہیں کہ میں نے تمام حوالے ایک کتاب "تاریخ سندھ" سے لئے ہیں۔ "تاریخ طاہری" پڑھ کر دیکھ لیجئے اس کتاب میں بہت جگہ پر بہت سی غلط باتیں لکھی ہیں۔ آپ پوری کتاب پڑھیں گے تو آپ کو اندازہ ہوگا کہ تاریخ طاہری کے مصنف نے کہاں کہاں تعصب برتا ہے اور دوسرے تاریخی ماخذ تحفۃالکرام اور تاریخ معصومی، تاریخ طاہری سے کتنی مختلف مواد فراہم کرتی ہے۔ آپ کے مضمون سیف المک اور بدیع الجمال کی عبارت پڑھ کر لگتا ہے کہ آپ تمام سومرہ خاندان کو ظالم و فاسد ثابت کرنے پر تلے ہوئے ہیں۔
میں اپنا بھی آپ کو تعارف کرا دوں۔ میری لائبریری میں 1000 سے زائد کتب موجود ہیں۔ سندھ کی تاریخ پر زیادہ تر کتب میرے پاس موجودہیں۔ سومرہ خاندان پر 30 سے زائد کتب کا ذخیرہ ہے۔ میرے والد فقیر محمد سومرو، سومرہ خاندان کی تاریخ پر ایک کتاب کے مصنف ہیں۔ محترم آپ ضرور لکھیں لیکن آپ کو اردو ویکیپیڈیا کی پالیسی کے مطابق لکھنا ہوگا۔ اردو ویکیپیڈیا کو کسی کی ذات یا خاندان پر حملہ کرنے کے لئے مت استعمال کریں۔ نیازمند--محمد عارف سومرو (تبادلۂ خیالشراکتیں) 06:51, 15 اکتوبر 2015 (م ع و)

بدون داخلی روابط[ترمیم]

محترم Abdul Moin Ansri!
اس ویکیپیڈیا:رودادہائے ڈیٹابیس/مضامین بدون داخلی روابط نامی صفحہ پر ایسے تمام صفحات کی فہرست موجود ہے، جن میں کوئی اندرونی ربط موجود نہیں۔ (یعنی کسی موجود مضمون کے نام کو اس طرح کی مربع قوسین [[ ]] میں نہیں رکھا گيا، جس وجہ سے مضمون اردو ویکیپیڈیا کے مجموعی تعداد مضامین میں شامل نہیں سو سکا۔ کیوں کہ کسی مضمون کے گنتی میں شامل ہونے کے لیے اندرونی ربط کا ہونا لازم ہے۔ برائے مہبربانی آپ اس صفحہ پر موجود اپنے صفحات جن کی تعداد اس وقت 84 ہے، ان میں اندرونی ربط شامل کرنے کی کوشش کریں۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 15:56, 15 اکتوبر 2015 (م ع و)

عبید صاحب میں جواب کا حصہ دے رہا ہوں امید ہے اس کا بھی مناسب جواب دیں گے ۔ رہا مضمونوں میں ربط نہیں آپ انہیں حذف کردیں ۔

عبید صاحب درست بات تو یہ سومروں کے بارے میں ہمارے پاس جو کچھ ہمارے پاس یعنی ان کی نسلی اصلیت ، ان مذہب ، ان حکمرانوں کے نام ، حکمرانوں کی تعداد ، ان کا دور حکومت اور ان کی حکمرانی کا دور وغیرہ ان سب کے بارے ہم لاعلم ہیں ۔ ان کے باہر ہم تک جو کچھ پہنچا ہے وہ روایتیں ہیں یا قصے کہانیاں ہیں ۔ ہم تک ان کا کسی قسم کا تحریری مواد ، کتبات ، تعمیرات اور سکے نہیں ملے ہیں ۔ ان کے بارے میں جو کچھ مورخوں نے لکھا ہے وہ بہت بعد میں لکھا گیا ہے ۔ لہذا ان کو لکھنے کے لئے قیاس آرائیاں کی گئیں یا روایتوں پر انحصار کیا گیا ۔ لہذا ہم صرف یہ تعین کرسکتے ہیں جو لکھا گیا ہے وہ کس حد تک درست ہے ۔

لہذا ہم سب سے پہلے ان نسلی اصلیت پربحث کر لیتے ہیں ۔

تحفہ الکرام میں ہے کہ سومرہ سامرہ کے عربوں سے نکلی ہے صفحہ 122 پر مولف اس بات کا اعراف کرتا ہے کہ اس قوم کی اصلیت کے بارے کوئی ثبوت دستیاب نہیں ہوا ہے �(گمان غالب ہے�) یہ ’’سامرہ ‘‘ عرب ہیں جو چھوتی صدی ہجری میں سندھ آئے تھے ۔ کچھ لوگ کہتے ہیں کہ دلو رائے امرانی کا بھائی چھٹو امرانی اپنے بھائی کے مظالم سے عاجز آگیا اور بھائی کے مظالم اور اپنے بھائی کی نحوست کی وجہ سے شہر اڑوڑ کی ویرانی اور بھانبھرا ( برہمن آباد ) کی بربادی کا حال اس نے خود اپنی آنکھوں سے دیکھا تو اس نے بغداد جاکر خلیفہ سے ( امداد چاہی اور �) سید علی موسی کی سردگی میں ایک سو عربوں کو لے کر سندھ آیا ۔ یہاں آخر کار اس کے بھائی دلو رائے نے �( سید علی ) اطاعت قبول کی اور اپنی بیٹی اس سے بیاہی ۔‘‘ میر شیر علی قانع ۔ تحفہ الکرام صفحہ 123 تا122 ۔ 2006 تیسرا ایڈیشن سندھی ادبی بورڈ کیا آپ اس کہانی پر یقین کرنے کو تیار ہیں ۔ اگر تسلیم کریں گے تو ایک فائدہ کم از کم ہوگا سومرہ سید بن جائیں گے اور محمد عارف صاحب ک چاہیے وہ بھی اپنے نام کا ساتھ سید کا لائقہ لگا لیں ۔ حالانکہ میر شیر علی قانع نے اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ اس کی اصلیت کے بارے میں کوئی ثبوت دستیاب نہیں ہوا ہے ۔ ایک اور دوسری جگہ لکھا ہے کہ یہ سومرہ قوم سامرہ کے عربوں سے نکلی ہے یہ قوم آل تمیم کے ساتھ دوسری صدی ہجری میں سندھ آئی اور یہاں کی سکونت اختیار کی ۔

مولانا سلمان ندی نے اپنی کتاب ’ عرب و ہند کے تعلقات ‘ میں ایک خط پیش کیا ، جو دروزیوں کی مقدس کتاب میں ہے ۔ یہ خط فاطمی خلیفہ الحاکم ) 386 تا 411 ( نے ملتان اور ہندوستان کے موحدوں کے نام عموماً اور شیخ ابن سومرہ راجہ پال کے نام خصوصاً لکھا ہے ۔ اس کے مطابق

ملتان اور ہندوستان کے اہل توحید کے نام خصوصاً ۔

اے معزز راجہ اپنے خاندان کو اٹھا ، موحدین اور داؤد اصغر کو اپنے سچے دین میں واپس لا کہ مسعود نے جو حال ہی میں قید و غلامی آزاد کیا ہے ، وہ اس وجہ سے ہے کہ تو اس فرائض کو انجام دے سکے ، جو تجھ کو اس کے بھانجے عبداللہ اور ملتان کے مام باشندوں کے بر خلاف انجام دینے کے لئے مقرر کیا گیا ہے ، تاکہ تقدس اور توحید کے مانے والے جہالت ، ضد اور سرکشی والی جماعت سے ممتاز ہوجائیں ۔

اس خط کا منشا یہ تھا کہ سومر راجہ کو سلطان مسعود ، عبداللہ اور اہل ملتان کے خلاف ابھارے ۔ داؤد اصغر کو واپس دین میں لائے ۔

اس خط کی بنیاد پر اعجاز الحق قدوسی صاحب نے سومررں کو کو عرب نژاد سمجھتے ہیں ۔

میر معصوم نے سومرہ کون تھے اس بارے میں خاموش ہے ۔

لیکن عبید صاحب یہ عہد نامہ قدیم کہا ہے کہ یعقوب کے گھرانے کے ستر افراد مصر آئے تھے اور خروج کے وقت ان کی تعداد دو لاکھ تھی ۔ اس پر ابن خلدون نے سخت اپنے مقدمہ تاریخ میں تنقید کی تھی ۔ اس کی تفصیل میں نہیں جاتا ہوں ، کیوں کے یہ ہمارے موضع سے باہر ہے ۔ یہاں درج کرنے کا مقصد یہ یعقوب کے گھرانے کے ستر افراد مصر آئے تھے ۔ مگر محمد بن قاسم کے ساتھ یا بعد میں آئے ہوئے چند افراد جو سامرا سے آئے تھے اور دو سے تین سو سال میں ان کی تعداد لاکھوں ہوگئی اور وہ پورے سندھ میں جگہ جگہ ان کی آبادیاں وجود میں گیں اور ان تعداد لکھوں ہوگئی ۔ کیا ؟ ایسا ممکن ہے ؟

آپ نے ڈاکٹر نبی بخش بلوچ کا بلوچ کے حوالہ دیا ہے وہ ڈاکٹر صاحب کا موقف نہیں بلکہ حوالہ ہے ۔ اس بارے میں ڈاکٹر صاحب کا موقف یہ ہے کہ جو کہ انہوں نے تاریخ طاہری کی توضیحات میں سومروں کے مذہب کے بارے میں ان کا موقف کچھ اس طرح ہے ’’ صاحب طاہری کا یہ بیان کہ ساتویں صدی سے آٹھویں صدی اور تینتالیس سال تک سومرہ جو ہندو مذہب تھے حاکم تھے ۔ حکمران سندھ کے متعلق اس کی بعض روایت صدری اور غیر محققانہ ہیں ، جنہیں قصے کہانیاں اور خرافات کہا جاسکتا ہے ۔ ہمارا خیال ہے کہ سومرہ قبیلہ دوسرے قبیلوں کی طرح سندھ میں اصلاحاً ہندو یا بدھ مذہب سے تعلق رکھتے تھے ۔ یہاں تک کہ اس علاقہ کو 93 ہجری میں محمد قاسم نے فتح کرلیا اور اس علاقے کے شہروں میں اسلام پھیل گیا ۔ چنانچہ قبائل سمہ سہتہ اور لوہانہ وغیرہ عرب حکمرانوں کے زیر اثر چوتھی صدی ہجری تک مشرف بہ اسلام ہوگئے ۔ سومرہ لوگوں نے بھی اپنی حکومت سے بہت پہلے اسلام سے متاثر ہوکر اسلام قبول کرلیا تھا اور انہوں نے اپنی حکومت کے زمانے میں شاہان اسلام کے لقب اختیار کئے ۔ مثلاً عصام الدین بھونگر ، سنان الدین چنیسر ۔ لہذا صاحب طاہری کا یہ بیان کہ سومرہ قبیلہ کے حاکم لوگ ہندو تھے تاریخی شہادت اور صدری روایات کے اعتبار جو سندھ میں مشہور ہیں صحیح نہیں ہیں ۔

تاریخ طاہری میر طاہر محمد نیسانی نے عمر ماروی داستان ضمن میں لکھا ہے کہ سومرہ ہندو مذہب تھے ۔

مولانا عبداحلیم شرر اپنی کتاب تاریخ سندھ میں لکھا ہے کہ یہ نو مسلم یہودی تھے ۔ مولانا کو یہ خیال سامرا سے آیا جو فلسطین کا ایک شہر اور سامری فرقہ کا مرکز تھا ۔

یورپی محقیقن نے انہیں ہندو راجپوت لکھا ہے ۔

جیمز ٹاد نے راجپوتوں کے چھتیس راج کی یعنی راجپوتوں چھتیس شاہی خاندان میں سومروں کا نام شامل کیا ہے ۔ یہ شجرہ نسب پہلے پہل چندر بروے اور بعد میں پنڈٹ کلہیان نے ’ ترنگی راج ‘ میں اس کو بیان کیا ہے ۔

اس کا سارا دارو مدار ابن بطوطہ کے اس بیان پر ہے جو کہ سفرنامہ ابن بطوطہ پر ہے ۔

’’ ہم دریائے سندھ سے دو دن کا سفر کرکے شہر جنائی پہنچے ۔ دریائے سندھ کے کنارے بڑا خوبصورت شہر ہے اور اس کے دلکش بازار ہیں ۔ یہاں باشندوں کے ایک گروہ کو سامرہ کہتے ہیں ، جنہوں نے زمانہ قدیم سے اس شہر کو اپنا وطن بنایا ہے ۔ ان کے بزرگ اس شہر میں رہتے آئے ہیں کہ جب وہ حجاج بن یوسف کے زمانے سے ۔ جیسا کہ فتح سندھ کے حوالے سے تاریخ نویسوں نے تحریر کیا ہے ۔

آپ نے سومروں کے اصل نسل کے عنوان سے جو حوالہ دیا ہے ۔ اس کتاب کو آپ نے حوالہ دیا ’’ سومرن جو دور ‘‘ بنیادی طور ڈاکٹر صاحب میں سومروں کے بارے میں مختلف روایات کو جمع کیا ۔ یہ ڈاکٹر صاحب کا ایک بڑا کارنامہ ہے کہ انہوں نے سومروں کے مطلق جتنی بھی روایات ملی ہیں وہ اس کتاب میں جمع کرلی ہیں ۔ لیکن ڈاکٹر صاحب نے صاف صاف صفحہ 172 پر لکھا ہے کہ یہ روایات تاریخی بیان نہیں ہے بلکہ پس منظر کو سمجھنے کے مدد دیتی ہیں ۔ آپ جس بیان کا سہارا لے کر مجھ پر تاریخ مسخ کرنے کا الزام لگایا ہے وہ ڈاکٹر صاحب کا موقف نہیں بلکہ لوگوں میں پھیلی ہوئی روایات ہےں ۔ یہ دو روایات ہیں ، پہلی ڈاڑھوں شیدی جی روایت ہے اور دوسری محمد خان کیری کی روایت ہے ۔ اس مضمون میں کل چھ روایتیں ہیں جو کہ بقول آپ کے ڈاکٹر صاحب کا موقف ہے ۔ سوال میرا آپ سے باقی چار روایتں کیوں پیش کی گئیں ؟ اگر یہ دو روایتیں ڈاکٹر صاحب کا موقف ہیں تو باقی کیوں نہیں ؟

عبید صاحب آپ مجھ پر تاریخ کو مسخ کرنے کا بہتان لگانے سے پہلے ڈاکٹر صاحب کو پڑھ لیتے تو بہتر ہوتا ۔ اس کتاب میں ہی آپ کو دیو رائے کے بارے معلومات حاصل ہوجائیں گئیں ۔ --Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 18:39, 15 اکتوبر 2015 (م ع و)

او جناب میں نے کس وقت آپ پر تاریخ مسخ کرنے کا الزام لگایا ہے۔ میں نے تو اس بارے ایک لفظ نہیں کہا۔ اندرونی ربط کی بات صرف آپ کو نہیں کہی گئی، بلکہ دیگر منتظمین اور صارفین کو بھی ان کے ایسے صفحات کی تعداد بتائی گئی ہے۔ آپ نے محنت کی ہے، مگر سب اس وقت تک بے کار ہے جب تک اس کو ویکیپیڈیا کے مطابق نہیں لکھا جاتا۔ آپ پورے مضمون کا ایک حوالا دینا کافی سمجھتے ہیں، مگر ایسا بلکل بھی نہیں ہے۔ جیسے اب آپ کو ایک بات کے 10، 10 حوالے سوجھ رہے ہیں ایسے اہی اپنے ان مضامین میں شامل کریں، آپ کو پہلے دن سے ہی بار بار کچھ چیزوں کا دھیان رکھنے کا کہا جاتا رہا، مگر یا تو اپ فوری الزام لگا دیتے ہیں یا نا لکھنے کی دھمکی دینے لگتے ہیں۔ میں نے بارہا کہا ہے کہ اگر آپ محنت کر رہے ہیں تو اسے اس قابل تو بنائیں کہ لوگ اس تک پہنچ سکیں، اس سے فائدہ اٹھا سکیں۔ اندرونی ربط نا ہونے کی وجہ سے مضمون گم نام سا ہو جاتا ہے۔ بین الویکی ربط نا کرنے کی وجہ سے زمرہ جات اور سانچے تک نہیں لگ سکتے۔ اب بتائیں۔ جب آّپ اتنی محنت کر رہے ہیں اتنا کچھ لکھ رہے ہیں تو اس میں مزید کچھ جملوں سے حوالہ جات شامل کر دیں، اوپر اگر آپ سارے تبادلۂ خیال کو ایک بار پھر سے پڑھیں تو آپ کو بہت ساری باتیں مل جائیں گی، جن پر عمل کرنا کافی مفید ہے۔--Obaid Raza (تبادلۂ خیالشراکتیں) 19:06, 15 اکتوبر 2015 (م ع و)


عبید صاحب

مجھے بخوبی انداہ ہوگیا ہے میں آپ کے معیار پر نہیں اترتا ہوں اس میں اس سلسلے کو بند کررہا ہوں ، شکریہ

عبدالمعین انصاری --Abdul Moin Ansri (تبادلۂ خیالشراکتیں) 02:15, 16 اکتوبر 2015 (م ع و)

محترم عبدالمعین میں اپنے نام کے ساتھ سید لگاؤں یا علوی اسے آپ کو تکلیف نہیں ہونی چاہیے۔ اب آپ کہہ رہے ہیں کہ سومرہ عرب تھے۔ آپ نے حوالے بھی دے دیے۔ لیکن اپنے مضون "سومرا حکمرانوں کی فہرست" میں آپ نے یہ حوالے کیوں نہیں دیے؟ آپ اب بھی بہت ساری باتیں گول کر گئے۔ اپنی غلطی تسلیم کرنا ظرف والوں کا کام ہے ۔آپ بھی اپنے ظرف سے کام لیتے ہوئے غلطی تسلیم کریں اور دونوں مضامین میں مختلف حوالے دے کر عبارت میں مندرجہ ذیل تبدیلیاں کریں تاکہ دونوں طرف کا موقف پیش ہو نہ کہ صرف تاریخ ریگستان کا :
نسل
  • سومرہ عرب تھے (حوالہ)، بعض مورخین کے نظر سومرہ راجپوت تھے (حوالہ) جمہور مورخین کے مطابق۔۔۔۔۔۔۔۔ (حوالہ)
  • دلوراء سومرہ حکمران نہیں بلکہ سومرہ دور میں اروڑ کا مقامی سردار یا حاکم تھا (میرے دیے گئے حوالے)
  • سومرہ حکمرانوں کا دور مختلف بیا ن کا گیا ہے۔ تحفۃ الکرام میں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سال (حوالہ) تاریخ معصومی میں ۔۔۔۔۔۔۔ سال (حوالہ)، تاریخ طاہری میں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ سال (حوالہ)
تبادلۂ خیال کے لئے مبہم عبارت نہ لکھیں۔ ایسی عبارت لکھیں جس سے مطلب بخوبی سمجھ آئے۔ ویسے سید سلیمان ندوی نے بھی سومرہ کو عرب لکھا ہے۔ جب آپ کو پتہ تھا کہ سومرہ حسب نسب پر مورخین میں تضاد ہے تو آپ نے یکطرفہ موقف کیوں دیا؟ ایسے موضوع سے پرہیز کرنا چاہیے جس سے میں اختلاف ہو۔ میں آپ سے دوبارہ پوچھتا ہوں آپ کے پاس تاریخ ریگستان یا تاریخ طاہری ہے؟ آپ جس قرامطی شخ کے خط کی بات کررہے ہیں اس خط کی عبارت ہی یہ ثابت کرتی ہے کہ ابنِ سومار یا راج پال یا راج بل جو پہلا سومرہ حکمران تھا، مسلمان تھا--محمد عارف سومرو (تبادلۂ خیالشراکتیں) 05:55, 16 اکتوبر 2015 (م ع و)

دعوت رائے دہی[ترمیم]

آپ کی خدمت میں سلام عرض ہے، اردو ویکیپیڈیا میں نیا تبادلۂ خیال نظام Flow نصب کرنے کے لیے آپ کی موافقت درکار ہے، امید ہے یہاں جاری رائے شماری میں اپنی تائیدی رائے سے نوازیں گے۔ ممنون! میڈیاویکی پیغامبر (تبادلۂ خیال) 19:19، 2 نومبر 2015 (م ع و)

رائے درکار[ترمیم]

جناب Abdul Moin Ansri، اس رائے شماری میں آپ کی رائے درکار ہے. میڈیاویکی پیغامبر (تبادلۂ خیال) 12:07، 21 نومبر 2015 (م ع و)

جدید ترمیمی سہولیات[ترمیم]

جناب Abdul Moin Ansri صاحب! اردو ویکیپیڈیا کے خانہ ترمیم کے لیے دیگر ٹیکسٹ ایڈیٹرز کی طرز پر تدوینی شارٹ کٹس ترتیب دیے گئے ہیں، جن کی تفصیلات آپ یہاں اس صفحہ پر ملاحظہ کر سکتے ہیں؛ امید ہے ان سہولیات سے محظوظ ہونگے اور آپ کی ترمیم کاری کا عمل مزید تیز تر ہوگا۔ مخلص میڈیاویکی پیغامبر (تبادلۂ خیال) 13:17، 25 نومبر 2015 (م ع و)

دعوت رائے دہی[ترمیم]

آداب جناب Abdul Moin Ansri! اس رائے شماری میں آپ کی قیمتی رائے درکار ہے، امید ہے ہمیں اپنی قیمتی رائے سے نوازیں گے، والسلام --میڈیاویکی پیغامبر (تبادلۂ خیال) 19:24، 3 دسمبر 2015 (م ع و)

اردو املا کے متعلق اور اہم فیصلہ کن رائے شماری[ترمیم]

محب گرامی! اردو ویکیپیڈیا پر اردو زبان کی املا سے متعلق ایک اہم اور فیصلہ کن رائے شماری جاری ہے، آپ سے درخواست ہے کہ اپنی رائے بھی یہاں اس صفحہ میں درج فرمائیں، نوازش -- میڈیاویکی پیغامبر (تبادلۂ خیال) 07:17، 22 دسمبر 2015 (م ع و)

آپ کو معاونت درکار ہے؟[ترمیم]

آنجناب کی خدمت میں آداب و تسلیمات! آپ کو یہ اطلاع دیتے ہوئے مسرت محسوس ہو رہی ہے کہ اردو ویکیپیڈیا کی معاونت میز کو باقاعدہ فعال کیا جا رہا ہے، جہاں تبادلہ خیال کا جدید نظام آپ کا منتظر ہے۔ اگر اردو ویکیپیڈیا کے متعلق آپ کو کسی بھی قسم کی معاونت کی ضرورت ہے تو براہ کرم اس میز پر تشریف لائیں اور اپنا سوال چھوڑ دیں۔ اگر آپ اردو ویکیپیڈیا کے ماحول سے واقف اور یہاں کے طریقہ کار سے آگاہ ہیں تو براہ کرم اس معاونت میز کو اپنے پاس نشان زد کر لیں تاکہ جب بھی کوئی صارف یہاں اپنا سوال رکھے تو آپ کو فوراً اطلاع مل جائے اور آپ اپنا حصہ ڈال سکیں۔ مقصد یہ ہے کہ اردو ویکیپیڈیا سے متعلق اس طرح کی گفتگو کو مرکزیت دی جائے اور صارفین کو متعلقہ معلومات یکجا دستیاب ہو سکیں۔ امید ہے کہ اس میز کو فعال کرنے میں آپ کا تعاون مل سکے گا، والسلام میڈیاویکی پیغامبر (تبادلۂ خیال) 12:32، 14 ستمبر 2016 (م ع و)

اردو زبان میں ویکی ہاؤ شروع کرنے درخواست میں آپ مدد کی سخت ضرورت ہے[ترمیم]

محترم دوست احباب،

آداب و تسلیم!

آپ سب سے گزارش ہے کہ اردو زبان میں مزید معلوماتی مواد کی تیاری کے عظیم مقصد کی خاطر Com.icon.png ویکی ہاؤ کی ویب سائٹ پر جاکر اپنا ایک الگ کھاتہ کھولیں (راست یا اسکرین پر فیس بک / گوگل لاگ کے ان ربط کی مدد سے)۔ کھاتہ کھولنے کے بعد Notebook blue.png اردو ویکی ہاؤ منصوبے کی ٹیم سازی کے صفحے پر جائیں اور اپنی تائید درج کریں۔ یوں ہی تائید درج کرنے کے بجائے کوئی وجہ بھی لکھیے، مثلاً:

# I am one of the many users of [https://ur.wikipedia.org Urdu Wikipedia]. I am interested in seeing the launch of Urdu version of Wikihow.I would definitely contribute to it as this will help many of our community members in knowing how daily activities are accomplished. --~~~~

ویکی ہاؤ کیا ہے؟

یہ ویکیپیڈیا سے مختلف ویب سائٹ ہے۔ اس کا مقصد کئی کاموں کے کرنے کے طریقوں کی رہنمائی کرنا ہے، مثلاً مرغ کی بریانی پکانا، کراس اسٹیچینگ، ملازمت کی درخواست کا خط، پہلے بین الاقوامی سفر کی تیاری، وغیرہ، اس میں موضوع کی قید نہیں، بس جو بھی کام ہو، اس کے کرنے کی تفصیلات لکھنا ہے۔

اردو ویکی ہاؤ سے کیا فائدہ ہے؟
  1. اردو والوں کو روزمرہ کی زندگی کے کاموں کے کرنے سے واقف کروانا۔
  2. انگریزی کا مواد اردو میں ترجمہ کرنا۔
  3. بہت سے لوگ ویکی کلچر کو سمجھ نہیں پاتے کہ یہ ثانوی ذرائع کی مدد ہی سے تیار ہوتا ہے۔ تاہم ان کے پاس انجینیرنگ، طب، تعلیم وغیرہ کا عملی تجربہ ہے، جسے اردو ویکی ہاؤ پر منتقل کیا جا سکتا ہے۔
  4. گھریلو خواتین پکوان، ٹیلرنگ، بچوں کی دیکھ ریکھ وغیرہ کے مضامین دیکھ بھی سکیں گی اور ان پر تعاون بھی کر سکتی ہیں۔
ویکی ہاؤ کن کن زبانوں میں ہے؟

ویکی ہاؤ دنیا کی سترہ زبانوں میں ہے، جن میں انگریزی، عربی، اطالوی، وغیرہ شامل ہیں۔

کیا یہ کسی جنوبی ایشیا کی زبان میں موجود ہے؟

جی ہاں، یہ ہندی میں موجود ہے: http://hi.wikihow.com

کیا یہ اردو میں نہیں ہے؟

افسوس! 2014ء میں کوشش کے باوجود ابھی تک نہیں ہے کیونکہ پچھلے دو سال سے اب تک صرف سات صارفین نے الگ الگ وقتوں میں اس کے لیے دلچسپی ظاہر کی ہے۔

کیا میں اس کے اردو میں شروع ہونے میں مدد کرسکتا ہوں؟

بے شک! آپ http://www.wikihow.com/wikiHow:Urdu-wikiHow-Project پر جایئے اور اپنی تائید درج کیجیے۔ مگر اس سے پہلے آپ کو http://www.wikihow.com پر ایک رجسٹرڈ ممبر ہونا پڑے گا۔

اردو ویکی ہاؤ کی تائید کے لیے میں کیا لکھوں؟

ویسے تو آپ کچھ بھی لکھ سکتے ہیں۔ تاہم آپ کی سہولت کے لیے اسی صفحے پر (اوپر) ایک نمونے کا متن دیا گیا ہے۔ براہ کرم اسے پڑھیے اور کچھ تبدیلی کے ساتھ درخواست کے ربط http://www.wikihow.com/wikiHow:Urdu-wikiHow-Project پر اپنی تائید درج کیجیے۔ --مزمل (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:02, 28 ستمبر 2016 (م ع و)

اردو زبان میں ویکی ہاؤ شروع کرنے درخواست میں آپ مدد کی سخت ضرورت ہے[ترمیم]

محترم دوست احباب،

آداب و تسلیم!

آپ سب سے گزارش ہے کہ اردو زبان میں مزید معلوماتی مواد کی تیاری کے عظیم مقصد کی خاطر Com.icon.png ویکی ہاؤ کی ویب سائٹ پر جاکر اپنا ایک الگ کھاتہ کھولیں (راست یا اسکرین پر فیس بک / گوگل لاگ کے ان ربط کی مدد سے)۔ کھاتہ کھولنے کے بعد Notebook blue.png اردو ویکی ہاؤ منصوبے کی ٹیم سازی کے صفحے پر جائیں اور اپنی تائید درج کریں۔ یوں ہی تائید درج کرنے کے بجائے کوئی وجہ بھی لکھیے، مثلاً:

# I am one of the many users of [https://ur.wikipedia.org Urdu Wikipedia]. I am interested in seeing the launch of Urdu version of Wikihow.I would definitely contribute to it as this will help many of our community members in knowing how daily activities are accomplished. --~~~~

ویکی ہاؤ کیا ہے؟

یہ ویکیپیڈیا سے مختلف ویب سائٹ ہے۔ اس کا مقصد کئی کاموں کے کرنے کے طریقوں کی رہنمائی کرنا ہے، مثلاً مرغ کی بریانی پکانا، کراس اسٹیچینگ، ملازمت کی درخواست کا خط، پہلے بین الاقوامی سفر کی تیاری، وغیرہ، اس میں موضوع کی قید نہیں، بس جو بھی کام ہو، اس کے کرنے کی تفصیلات لکھنا ہے۔

اردو ویکی ہاؤ سے کیا فائدہ ہے؟
  1. اردو والوں کو روزمرہ کی زندگی کے کاموں کے کرنے سے واقف کروانا۔
  2. انگریزی کا مواد اردو میں ترجمہ کرنا۔
  3. بہت سے لوگ ویکی کلچر کو سمجھ نہیں پاتے کہ یہ ثانوی ذرائع کی مدد ہی سے تیار ہوتا ہے۔ تاہم ان کے پاس انجینیرنگ، طب، تعلیم وغیرہ کا عملی تجربہ ہے، جسے اردو ویکی ہاؤ پر منتقل کیا جا سکتا ہے۔
  4. گھریلو خواتین پکوان، ٹیلرنگ، بچوں کی دیکھ ریکھ وغیرہ کے مضامین دیکھ بھی سکیں گی اور ان پر تعاون بھی کر سکتی ہیں۔
ویکی ہاؤ کن کن زبانوں میں ہے؟

ویکی ہاؤ دنیا کی سترہ زبانوں میں ہے، جن میں انگریزی، عربی، اطالوی، وغیرہ شامل ہیں۔

کیا یہ کسی جنوبی ایشیا کی زبان میں موجود ہے؟

جی ہاں، یہ ہندی میں موجود ہے: http://hi.wikihow.com

کیا یہ اردو میں نہیں ہے؟

افسوس! 2014ء میں کوشش کے باوجود ابھی تک نہیں ہے کیونکہ پچھلے دو سال سے اب تک صرف سات صارفین نے الگ الگ وقتوں میں اس کے لیے دلچسپی ظاہر کی ہے۔

کیا میں اس کے اردو میں شروع ہونے میں مدد کرسکتا ہوں؟

بے شک! آپ http://www.wikihow.com/wikiHow:Urdu-wikiHow-Project پر جایئے اور اپنی تائید درج کیجیے۔ مگر اس سے پہلے آپ کو http://www.wikihow.com پر ایک رجسٹرڈ ممبر ہونا پڑے گا۔

اردو ویکی ہاؤ کی تائید کے لیے میں کیا لکھوں؟

ویسے تو آپ کچھ بھی لکھ سکتے ہیں۔ تاہم آپ کی سہولت کے لیے اسی صفحے پر (اوپر) ایک نمونے کا متن دیا گیا ہے۔ براہ کرم اسے پڑھیے اور کچھ تبدیلی کے ساتھ درخواست کے ربط http://www.wikihow.com/wikiHow:Urdu-wikiHow-Project پر اپنی تائید درج کیجیے۔ --مزمل (تبادلۂ خیالشراکتیں) 14:02, 28 ستمبر 2016 (م ع و)

اصطلاح ریتخانہ کی تبدیلی[ترمیم]

اطلاع:_ اردو ویکیپیڈیا میں sandbox کے لیے عرصہ سے اردو متبادل ریتخانہ استعمال کیا جاتا رہاہے، یہ لفظ اردو میں معروف بھی نہیں اور انگریزی لفظ کا ہو بہو اور بھونڈا ترجمہ ہے۔ چنانچہ اس لفظ کو تبدیل کرکے تختہ مشق کر دیا گیا ہے۔ آنجناب سے گزارش ہے کہ یہاں کلک کرکے اپنے تختہ مشق کا نام ریتخانے سے منتقل کرکے تختہ مشق کر لیں۔ امید ہے یہ تبدیلی پسند آئے گی۔

اردو ویکیپیڈیا پر 500 ترامیم کا سنگ میل عبور کرنے پر مبارک باد قبول فرمائیں[ترمیم]

Bästa nyskrivna.svg 500 ترامیم
اردو ویکیپیڈیا پر 500 ترامیم کا سنگ میل عبور کرنے پر مبارک باد قبول فرمائیں، جو کہ اردو ویکیپیڈیا برادری کے لیے ایک بڑی خوشی اور فخر کی بات ہے!

--طاہر محمود (تبادلۂ خیالشراکتیں) 13:28, 20 نومبر 2016 (م ع و)

ویکی بان[ترمیم]

یہاں پر آپ کی رائے درکار ہے۔ MediaWiki message delivery (تبادلۂ خیالشراکتیں) 11:05, 10 جنوری 2018 (م ع و)

ویکی لغت پر رائے شماری[ترمیم]

محترم Abdul Moin Ansri آپ جانتے ہی ہوں گے کہ، اردو ویکیپیڈیا کا ایک ذیلی منصوبہ ویکی لغت بھی ہے۔ جس پر کوئی مامور اداری نہیں ہے اب ضرورت ہے کہ ویکی لغت پر مامور اداری ہو، اس کے لیے ووٹوں کی ضرورت ہے۔ امید ہے کہ آپ اس کام کے لیے وقت نکالیں گے۔ رائے شماری کے لیے یہاں جائیں۔

ویکیپیڈیا کے منصوبے[ترمیم]

دعوت برائے ویکی منصوبہ ہندومت[ترمیم]

ویکی منصوبہ ہندومت میں خوش آمدید
Om symbol.svg

ویکی منصوبہ ہندومت — ہندومت کے متعلق مضامین کو مل کر بہتر بنانے کی ایک کاوش

تبادلہ خیال ہندومت — ہندو مت متعلقہ مضامین کے مسائل کے بارے میں ایک صفحہِ گفتگو

تختہ اطلاعات — ہندومت-متعلقہ اعلانات

ہندو ویکیپیڈیا صارفین — صارفین جو درحقیقت  ہندو ہیں

باب — ہندومت متعلقہ مضامین، تصاویر اور زمرہ جات کا ایک مفید باب

گروہان — ہندو فرقوں کا ایک ذیلی منصوبہ

دعوت برائے ویکی منصوبہ یہودیت[ترمیم]

آپ کو ویکی منصوبہ یہودت میں حصہ لینے کی دعوت دی گئی ہے

ویکی منصوبہ یہودیت کا اصل مقصد یہ ہے کہ یہودیت سے متعلق ویکیپیڈیا پر مضامین کو بہتر اور وسیع کیا جائے اور یہودیت سے متعلق موضوعات پر نئے مضامین لکھے جائیں۔

Star of David.svg

دعوت برائے ویکی منصوبہ مسیحیت[ترمیم]

آپ کو ویکی منصوبہ مسیحیت میں حصہ لینے کی دعوت دی گئی ہے

ویکی منصوبہ مسیحیت کا اصل مقصد یہ ہے کہ مسیحیت سے متعلق ویکیپیڈیا پر مضامین کو بہتر اور وسیع کیا جائے۔ اِس منصوبے کے تحت متعدد مسیحی فرقوں پر مضامین کی معتدبہ تعداد موجود ہے اس لیے اس امر کی وضاحت ضروری ہے کہ ہم مسیحیت کی کسی مخصوص روایت یا فرقے کی مذمت نہیں کرتے، اور کوشش کرتے ہیں کہ مضامین میں تمام مسیحی روایات کی منصفانہ، درست اور مناسب نمائندگی ہو۔۔

Christian cross.svg

بخاری سعید (گفتگو!)

رائے درکار[ترمیم]

محترم Abdul Moin Ansri صاحب!

آداب

آپ کی یہاں پر رائے درکار ہے۔ — بخاری سعید (گفتگو!)

رائے شماری برائے توسیع عناصر مضمون[ترمیم]

محترم Abdul Moin Ansri صاحب!

آداب،

توسیع عناصر مضمون کے لیے آپ کی یہاں رائے درکار ہے۔ — :) یہ صارف منتظم ہے—محمد شعیب— 

ویکی ماخذ[ترمیم]

محترم Abdul Moin Ansri صاحب!

آداب!


ویکی ماخذ (ویکی سورس) ویکیمیڈیا فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام چلنے والا ایک آن لائن برقی دار الکتب ہے جو آزاد مصادر و مراجع کے متون پر مشتمل ہے۔ اس منصوبے کا بنیادی مقصد یہ ہے کہ دنیا کی مختلف زبانوں میں موجود تمام اقسام کے آزاد متون یکجا کیے جائیں خواہ وہ کسی شکل میں دستیاب ہوں۔

اسی منصوبے کو اردو زبان میں شروع کرنے کی میٹا پر درخواست دی گئی ہے، امید ہے کہ آپ ویکی ماخذ کے لیے مثبت آرا سے نوازیں گے۔— بخاری سعید (گفتگو!)

رائے درکار[ترمیم]

آداب!

آپ کی یہاں رائے درکار ہے۔ — بخاری سعید (گفتگو!)

ٹائیگر ترمیمی دوڑ میں خوش آمدید[ترمیم]

Ghostscript Tiger.svg
جناب Abdul Moin Ansri کی خدمت میں آداب عرض ہے۔

ویکیمیڈیا فاؤنڈیشن اور گوگل نے سینٹر برائے انٹرنیٹ و سوسائٹی (سی آئی ایس) اور ویکیپیڈیا انڈیا چیپٹر (ڈبلیو ایم آئی این) کے تعاون سے ایک تحریری مسابقہ کا انتظام کیا ہے تاکہ کچھ متعین موضوعات پر معیاری مواد فراہم کرنے اور تحریر کرنے میں بھارتی زبانوں کی برادریوں کی حوصلہ افزائی کی جائے۔

  • ترمیمی دوڑ کے اصول و ضوابط یہاں دیکھ سکتے ہیں۔

اگر آپ ویکیپیڈیا پر نئے ہیں تو ذیل میں کچھ صفحات ہیں جن سے آپ مدد حاصل کر سکتے ہیں:

  • اگر آپ اس تحریری مسابقے میں حصہ لے رہے ہیں تو اپنے نئے تحریر کردہ مضامین یہاں شامل کریں۔

امید ہے کہ آپ اس ترمیمی دوڑ میں شامل ہو کر اردو زبان کی خدمت فرمائیں گے۔ اگر آپ کو اس ضمن میں کوئی سوال دریافت کرنا ہو تو بلا جھجھک یہاں رابطہ کریں۔ ممنون — ناظمین ٹائیگر ترمیمی دوڑ (تبادلۂ خیال!)


نیز آپ دوسری بھارتی زبانوں کی ترمیمی دوڑوں میں بھی شمولیت اختیار کر سکتے ہیں:

مراٹھیتملکنڑبنگالیتیلگوگر مکھی پنجابیانگریزیاڑیہملیالمگجراتیہندی

منصوبہ امن کے پیامبر میں حصہ لیں[ترمیم]

Dove peace.svg
جناب Abdul Moin Ansri کی خدمت میں آداب عرض ہے۔

امن کے پیامبر اردو اور عبرانی ویکیپیڈیا کے درمیان باہمی تعاون ہے۔ منصوبے کا آغاز 20 جون سے ہے اور اختتام 20 اگست کو ہوگا۔ آپ سے منصوبے میں شرکت کی درخواست ہے۔

  • آپ باہمی تعاون کے اصول و ضوابط یہاں ملاحظہ کر سکتے ہیں۔

  • اگر آپ اس باہمی تعاون میں حصہ لے رہے ہیں تو اپنے نئے تحریر کردہ مضامین یہاں شامل کریں۔

امید ہے کہ آپ اس باہمی تعاون میں شامل ہو کر اردو زبان کی خدمت فرمائیں گے۔ اگر آپ کو اس ضمن میں کوئی سوال دریافت کرنا ہو تو بلا جھجھک یہاں رابطہ کریں۔ ممنون — ناظمین منصوبہ امن کے پیامبر (تبادلۂ خیال!)

اسرائیل پاکستان تعلقات[ترمیم]

محترم Abdul Moin Ansri صاحب!

آداب، یہاں اپنی رائے دیجیے۔ MediaWiki message delivery (تبادلۂ خیالشراکتیں) 19:21، 21 ستمبر 2018ء (م ع و)

رائے درکار[ترمیم]

یہاں پر رائے دیں۔ MediaWiki message delivery (تبادلۂ خیالشراکتیں) 06:53، 30 ستمبر 2018ء (م ع و)

ویکیپیڈیا: منصوبہ ایشیائی فلمی شخصیات، 2018ء[ترمیم]

محترم صاحب!

جناب Abdul Moin Ansri کی خدمت میں آداب عرض ہے۔

'ایشیائی فلمی شخصیات اردو ویکیپیڈیا پر ایک منصوبہ ہے جس کے تحت ایشیائی فلمی شخصیات کے متعلق مضامین تخلیق کرنے اور پرانے مضامین میں توسیع کرنی ہے۔ منصوبے کا آغاز 1 اکتوبر، 2018ء سے ہے اور اختتام 1 نومبر کو ہوگا۔ آپ سے منصوبے میں شرکت کی درخواست ہے۔

  • آپ باہمی تعاون کے اصول و ضوابط یہاں ملاحظہ کر سکتے ہیں۔

  • آپ 11:59 PM (یو ٹی سی)، 1 نومبر 2018ء تک کسی بھی وقت شامل ہو سکتے ہیں۔

اس منصوبے کا اہم مقصد ایشیاء کی فلمی شخصیات کو اردو ویکیپیڈیا کے قارئین سے متعارف کروانا ہے۔ اردو ویکیپیڈیا پر کئی اہم ایشیائی اداکاروں، فلم پروڈیوسروں اور فلم ہدایتکاروں کے صفحہ/مضامین نہیں ہیں۔ اس منصوبہ کے ذریعے ہم ان سب اشخاص کا اردو ویکیپیڈیا کے قارئین سے متعارف کروا سکتے ہیں۔

امید ہے کہ آپ اس تعاون میں شامل ہو کر اردو زبان کی خدمت فرمائیں گے۔ اگر آپ کو اس ضمن میں کوئی سوال دریافت کرنا ہو تو بلا جھجھک یہاں رابطہ کریں۔ ممنون — ناظمین منصوبہ ایشیائی فلمی شخصیات (تبادلۂ خیال!)

منصوبہ ایشیائی فلمی شخصیات، 2018ء کل سے شروع[ترمیم]

جناب Abdul Moin Ansri کی خدمت میں آداب عرض ہے۔


ایشیائی فلمی شخصیات، 2018ء اردو ویکیپیڈیا پر ایک منصوبہ ہے جس کے تحت ایشیائی فلمی شخصیات کے متعلق مضامین تخلیق کرنے اور پرانے مضامین میں توسیع کرنی ہے۔ منصوبے کا آغاز کل سے ہے اور اختتام 1 نومبر کو ہوگا۔ آپ سے منصوبے میں شرکت کی درخواست ہے۔

  • آپ باہمی تعاون کے اصول و ضوابط یہاں ملاحظہ کر سکتے ہیں۔

  • آپ 11:59 PM (یو ٹی سی)، 1 نومبر 2018ء تک کسی بھی وقت شامل ہو سکتے ہیں۔

یہاں پر ایک فہرست فراہم کی گئی ہے جس میں غیر موجود اہم مضامین کا ذکر ہے۔

امید ہے کہ آپ اس تعاون میں شامل ہو کر اردو زبان کی خدمت فرمائیں گے۔ اگر آپ کو اس ضمن میں کوئی سوال دریافت کرنا ہو تو بلا جھجھک یہاں رابطہ کریں۔ ممنون — ناظمین منصوبہ ایشیائی فلمی شخصیات (تبادلۂ خیال!)

رائے درکار[ترمیم]

ویکیپیڈیا:ویکی بان/رائے شماری/حسیب احمد پر آپکی رائے درکار ہے۔ اگر آپ یہ پیغام دوبارہ دیکھ رہے ہیں تو اس کے لیے میں معذرت چاہتا ہوں۔ MediaWiki message delivery (تبادلۂ خیالشراکتیں) 05:44، 15 اکتوبر 2018ء (م ع و)

اردو چینی برادری ہمکاری منصوبہ[ترمیم]

چینی اور اردو ویکی برادریوں نے ہمکاری منصوبے کا فیصلہ کیا ہے۔ آپ کی یہاں رائے درکار ہے۔MediaWiki message delivery (تبادلۂ خیالشراکتیں) 16:09، 16 دسمبر 2018ء (م ع و)

اردو چینی برادری ہمکاری منصوبہ[ترمیم]

چینی اور اردو ویکی برادریوں نے ہمکاری منصوبے کا فیصلہ کیا ہے۔ آپ کی یہاں رائے درکار ہے۔MediaWiki message delivery (تبادلۂ خیالشراکتیں) 16:15، 16 دسمبر 2018ء (م ع و)

اردو چینی ہمکاری منصوبہ[ترمیم]

Accessories-text-editor.png
جناب Abdul Moin Ansri کی خدمت میں آداب عرض ہے۔

اردو چینی تحریری مسابقہ اردو اور چینی ویکیپیڈیا کے درمیان ایک ہمکاری منصوبہ ہے۔ منصوبے کا آغاز 1 مارچ سے ہے اور اختتام 15 اپریل کو ہوگا۔ آپ سے منصوبے میں شرکت کی درخواست ہے۔

  • آپ ہمکاری منصوبے کے اصول و ضوابط یہاں ملاحظہ کر سکتے ہیں۔

  • آپ 11:59 PM (یو ٹی سی)، 15 اپریل 2019ء تک کسی بھی وقت شامل ہو سکتے ہیں۔

  • اگر آپ اس ہمکاری میں حصہ لے رہے ہیں تو اپنے نئے تحریر کردہ مضامین یہاں شامل کریں۔

امید ہے کہ آپ اس ہمکاری منصوبے میں شامل ہو کر اردو زبان کی خدمت کریں گے۔ اگر آپ کو اس ضمن میں کوئی سوال دریافت کرنا ہو تو بلا جھجھک یہاں رابطہ کریں۔ ممنون — ناظمین اردو چینی ہمکاری منصوبہ (تبادلۂ خیال!)