تفاسیر کی فہرست

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

تفسیر مذہب اسلام کی بنیادی کتاب قرآن مجید کی تحریر کے مطالب کی تشریح و وضاحت ہے۔ ذیل میں کتب تفاسیر و تشریحات کی فہرست دی جاتی ہے۔

عربی تفاسیر[ترمیم]

قدیم/روایتی عربی تفاسیر[ترمیم]

  • تنویر المقباس از عبداللہ بن عباس (وفات:68ھ/687ء)۔ یہ تفسیر حضرت ابن عباس سے منصوب ہے۔ یہ تفسیر قرآن سے متعلق عبد اللہ ابن عباس کی روایات کا مجموعہ ہے۔ اس تفسیر کی اسناد پر اعتراض کیا جاتا ہے۔
  • تفسیر کبیر از مقاتل بن سلیمان (80ھ-150ھ)۔ مقاتل بن سلیمان البلخی سے منسوب پہلی مکمل تفسیر
  • تفسیر امام جعفر صادق از جعفر صادق (83-148ھ)
  • معانی القرآن (قرآن کے مطالب) از یحییٰ بن زید فارا (207ھ)
  • تفسیر طبری از محمد بن جریر طبری (224-310ھ؛ 839-923ء)
  • نکات القرآن الدلاالبیان از قصاب (وفات:360ھ/970ء) بنیادی طور پر اطلاقی قوانین اسلام کے نقطۂ نظر سے کی گئی
  • احکام القرآن از الجصاص (وفات:370ھ/981ء) قوانین فقہ حنفی کی بنیاد پر کی گئی تفسیر۔ یہ تین جلدوں میں شائع ہوئی تھی اور بھارت، مشرق وسطیٰ اور ترکی کے احناف میں بہت مشہور ہے۔
  • تفسیر فرآت کوفی از فرآت بن فرآت ابراہیم کوفی(9-10 صدی عیسوی)
  • تفسیر ثعلبی از احمد بن محمد ثعلبی (وفات:247ھ/1035ء)۔ یہ تفسیر الکبیر کے نام مشہور ہے۔
  • معالم التنزیل از حسن بن مسعود بغوی (وفات:510ھ/1116ء)۔ یہ تفسیر البغوی کے نام سے مشہور ہے۔ تفسیر الثعلبی پر یہ سنی تفسیر بہت انحصار کرتی ہے جبکہ اس میں احادیث پر زیادہ زور دیا گیا ہے۔
  • الکشاف از زمحشری (وفات:1144ء)۔ الزمحشری معتزلہ فرقہ سے تعلق رکھتے تھے، البتہ ان کی یہ تفسیر کئی سال تک علما میں مقبول رہی اور عموماً سنی تفاسیر کے تحت چھاپی جاتی ہے۔
  • احکام القرآن از ابو بکر بن العربی (وفات:543ھ/1148ء)۔ اس کے مصنف قاضی ابن العربی کے نام سے بھی مشہور ہیں تاکہ صوفی ابن العربی سے ممتاز رہ سکیں۔ آپ اسپین میں قاضی کے عہدہ پر فائز تھے۔ آپکی یہ تفسیر  مالکی مذہب کے مطابق قرآن کے قوانین پر مشتمل ہے جو تین جلدوں میں شائع ہوئی۔
  • مفاتیح الغیب ("غیب کی چابیاں") از فخر الدین رازی(1149-1209ھ)۔ تفسیر کبیر کے نام سے مشہور ہے۔
  • المحرر الوجیز فی تفسیر الکتاب العزیز ('پاک کتاب کی تشریح کی مختصر تمثیل') از ابن عطیہ(وفات: 541ھ یا 546ھ)۔ یہ اپنے مصنف کی نسبت سے تفسیر العطیہ کے نام سے مشہور ہے جو اندلس میں قاضی تھے اور فقہ مالکی سے تعلق رکھتے تھے۔ یہ تفسیر شمالی افریقہ میں مشہور ہے۔
  • زاد المسیر فی علم التفسیر از ابو الفرج ابن جوزی(وفات: 597ھ)۔ جوزی ایک متبحر عالم تھے اور فقہ حنبلی سے متعلق تھے۔
  • الجامع لأحكام القرآن("احکامات قرآن کا مجموعہ") از قرطبی(1214ء-1273ء)۔ قرطبی فقہ مالکی سے متعلق تھے اور قرطبہ، اندلس میں قاضی تھے۔ دس جلدوں پر مشتمل یہ تفسیر قانونی معاملات سے متعلق ہے۔ اگرچہ مصنف فقہ مالکی کے پیروکار تھے، لیکن انہوں نے دوسرے مذاہب کی آراء بھی پیش کی ہیں؛ اس وجہ سے یہ تمام مذاہب اسلامی کے قاضیوں میں معروف ہیں۔ اس تفسیر کی ایک جلد کا ترجمہ عائشہ بیلے نے انگریزی میں کیا ہے جو شبکہ پر دستیاب ہے۔
  • انوار التنزیل از عبد اللہ بن عمر بیضاوی(وفات:685ھ/1286ء) جو تفسیر بیضاوی کے نام سے مشہور ہے، کشاف کی تخلیص ہے، جس میں معتزلہ کے حوالہ جات کو بدل دیا گیا ہے۔ یہ دو جلدوں میں چھپی ہے۔ ترکی کے عالم قوناوی کے حوالے سے یہ حاشیہ پر سات جلدوں میں چھاپی جاتی ہے۔
  • البحر المحیط از ابو حیان غرناطی(وفات:745ھ/1344ء) ایک لسانی تفسیر ہے جو عربی نحو اور بلاغت کے نظریہ سے لکھی گئی ہے۔
  • تفسیر ابن کثیر از ابن کثیر(1301-1373ء) جو تفسیر طبری کی تخلیص ہے اور شبکہ پر دستیاب ہے۔
  • ارشاد العقل السلیم الی مزایا القرآن الکریم از عبد السوساد العمادی(وفات:911ھ/1505ء) جو تفسیر ابی سعود کے نام سے جانی جاتی ہے۔
  • تفسیر جلالین('دو جلالوں کی تفسیر') از جلال الدین محلی نے 1459ء میں تحریر کی اور بعد ازاں ان کے شاگرد رشید مشہور شافعی عالم جلال الدین سیوطی(وفات:911ھ/1505ء) نے اسے 1505ء میں اسی طرز پر مکمل کیا۔ فیرس حمزہ نے اس کی انگریزی ترجمہ کیا ہے۔ یہ تفسیر اپنے آسان طرز بیان کے باعث پوری دنیائے اسلام میں مقبول ہے۔
  • در منثور('') از جلال الدین سیوطی۔ یہ تفسیر ہر قرآن کے موضوع اور آیت کے حوالے سے روایت کردہ احادیث کے مطابق کی گئی ہے۔ اس کو چھ جلدوں میں شائع کیا گیا۔
  • روح البيان از شيخ اسماعيل حقي البرسوي(وفات:1725ء)۔ مصنف ترکی کے شہری اور مشہور سلسلہ طریقت جیلویتی کے بانی تھے۔ ان کی یہ 10 جلدوں پر مشتمل ہے۔
  • بحر المحیط('سمندر کو گھیرے ہوئے') از احمد بن عجیبہ(وفات:1809ء) جو تفسیر ابن عجیبہ کے نام سے مشہور ہے۔ یہ دو جلدوں پر مشتمل ہے۔ مصنف مراکش کے درقروی سلسلہ طریقت کی شاخ شاذلی کے شیخ تھے۔
  • روح المعانی فی تفسیر القرآن العظیم('قرآن کے معانی کی روح سے قرآن کی تفسیر') از محمود آلوسی حنفی(وفات:1270ھ/1854ء)
  • بیان سادات(19ویں صدی) از صوفی سلطان علی شاہ

جدید عربی تفاسیر[ترمیم]

  • فی ظلال القرآن('قرآن کے سایہ میں') از سید قطب (1906ء-1966ء)۔ بہت سے علما نے اس تفسیر کی تعریف کی ہے جبکہ اکثر نے اس پر تنقید کی ہے کہ قطب کا اسلام سے متعلق علم کم ہے اور انہوں نے اپنی رائے سے یہ تفسیر لکھی ہے۔ اس میں قدیم تفاسیر کا اسلوب اختیار نہ کرنے پر بھی تنقید کی گئی ہے۔
  • تفسیر('قرآن کی موضوعی تفسیر') از محمد الغزالی(1917ء-1996ء)۔ یہ تفسیر  مصری عالم شیخ محمد غزالی سقا کی ہے جس میں ان موضوعات کی تحقیق دی گئی ہے جو پورے قرآن مجید میں اصل ہیں علاوہ ازیں ہر سورت کا موضوع بھی بتایا گیا ہے۔
  • رسالۂ نور از سعید نورسی(1878ء-1960ء) از سعید نورسی(1878ء-1960ء)۔ بنیادی طور پر ترکی زبان میں لکھی گئی چار جلدوں پر مشتمل ایک بڑی تفسیر ہے۔ اس میں آیات کی تفسیر اور قرآن مجید کے اسلوب کی وضاحت ہے۔ یہ خاص طور پر اکیسویں صدی کے لوگوں کے لیے ضروری آیات کی وضاحت کرتی ہے۔ دوسرے لفظوں میں، یہ اسلام کے چھ بنیادی عقائد یعنی ایمان باللہ و ایمان بالآخرۃ وغیرہ سے متعلق آیات کی تحقیق کرتی ہے۔ یہ ملحدین کی طرف سے کیے جانے والے سوالوں کے منطقی جوابات بھی مہیا کرتی ہے۔ یہ عام فہم انداز میں لکھی گئی ہے اور 52 زبانوں میں ترجمہ کی گئی ہے۔
  • تفسیر المیزان از محمد حسین طباطبائی(1904ء-1981ء)۔ 20 جلدوں پر مشتمل یہ قرآن کی قرآنی آیات سے تفسیر ہے اور شیعہ مصنف کی جانب اس کی تدوین کی گئی ہے۔
  • تفسیر جفری بین تفاوت و تاویل از حبیب محمد رضوان جفری
  • تفسیر شعراوی از محمد متولی شعراوی(1911ء-1998ء)۔ مصنف معروف مصری عالم تھے۔
  • تفسیر شبر(19ویں صدی عیسوی) از سید عبد اللہ علوی حسینی موسوی
  • تیسر الکریم الرحمان فی تفسیر کلام المنان (1344ھ/1926ء) از عبد الرحمان بن ناصر سعدی (1889ء-1956ء)۔ تفسیر عام فہم، غیر ضروری مواد سے پاک ہے اور صرف انتہائی ضروری مخالف نظریات پر مشتمل ہے۔ شبکہ پر دستیاب ہے۔

غیر عربی تفاسیر[ترمیم]

مضامین بسلسلہ
تفسیر قرآن
Mosque02.svg
زیادہ مشہور
سنی تفاسیر
شیعہ تفاسیر
معتزلی تفاسیر
دیگر تفاسیر
اصطلاحات
اسباب نزول

انگریزی[ترمیم]

  • معارف القرآن از محمد شفیع عثمانی۔ اردو سے انگریزی میں ترجمہ کی گئی۔ شبکہ پر مکمل دستیاب ہے۔
  • تفہیم القرآن از ابو الاعلٰی مودودی۔ مشہور تفاسیر میں سے ایک جس کا ترجمہ ظفر اسحاق انصاری نے اردو سے انگریزی میں کیا ہے۔ یہ قدیم و جدید تفاسیر کا مجموعہ ہے اور اس نے جدید اسلامی افکار پر گہرا اثر ڈالا ہے۔ شبکہ پر دستیاب ہے۔
  • تفسیر اشراق المعانی از سید اقبال ظہیر
  • اسرار التنزیل از امیر محمد اکرم اعوان
  • ترجمہ و تفسیر از فاضل پروفیسر ایس ایم افصل رحمان
  • تفسیر عثمانی از علامہ شبیر احمد عثمانی۔ مترجم مولانا محمد اشفاق احمد
  • قرآن مع انگریزی ترجمعہ از مولانا عبد الماجد دریابادی
  • ترجمہ مولوی شیر علی
  • صراط الجنان فے تفسیر القران 10 جلدوں میں مفتی قاسم المدنی

فارسی[ترمیم]

  • تفسیر طبری۔ 10ویں صدی ہجری میں اس کا فارسی میں ترجمہ کیا گیا۔
  • کشف الاسرار و عدۃ الابرار۔11ویں صدی ہجری میں ابو اسماعیل عبد اللہ انصاری کے ایک شاگرد نے فارسی میں یہ تفسیر لکھی۔
  • تفسیر نسفی از نجم الدين ابو حفص عمر بن محمد نسفی۔ فارسی میں 12ویں صدی عیسوی میں تحریر کی گئی۔
  • تفسیر نمونہ از ناصر مکارم شیرازی۔
  • تسنیم تفسیر از عبد اللہ جوادی آملی۔
  • تفسیر نور از عالم العصر محسن قرائتی۔
  • تفسیر مشکوٰۃ از عالم العصر محمد علی انصاری۔
  • ترجمان فرقان از محمد صدیقی تہرانی۔
  • تفسیر المیزان از محمد حسین طباطبائی۔ عربی سے اردو اور اردو سے انگریزی میں ترجمہ کی گئی۔
  • پرتوی از قرآن از سید محمود طالقانی
  • تفسیر راہنما از اکبر هاشمی رفسنجانی
  • ترجمہ از حضرت شاہ ولی اللہ محدث دہلوی

انڈونیشیائی زبان[ترمیم]

  • تفسیر الازہر از حمکہ
  • تفسیر المصباح از پروفیسر قریش صاحب

مالے زبان[ترمیم]

  • تفسیر التبیان از عبد الحادی اونگ

بنگالی[ترمیم]

  • معارف القرآن کا بنگالی ترجمہ از مولانا محی الدین خان
  • تفہیم القرآن از ابو الاعلی مودودی۔ اردو سے ترجمہ از عبد المنان طالب۔ شبکہ پر دستیاب ہے۔
  • تفسیر القرآن از مولانا دلاور حسین سعیدی۔ شبکہ پر دستیاب ہے۔
  • تفسیر نورالقرآن از مولانا محمد امین الاسلام۔
  • تفسیر القرآن از ڈاکٹر محمد اسداللہ غالب۔

گجراتی[ترمیم]

  • تفسیر اشرفی ('سید التفاسیر') از سید محمد مدنی میاں اشرف جیلانی۔ اردو میں اس کی تکمیل و قلمی تصنیف ہوئی البتہ اس کی شہرت کے باعث بھارت میں عوام کے استفادہ کے لیے تفسیر کا ترجمہ گجراتی زبان میں کیا گیا۔

سندھی[ترمیم]

ترکی زبان[ترمیم]

  • رسالہ نور کلیاتی از بدیع الزمان سعید نورسی۔ 13 جلدوں میں شائع ہوئی، یہ ترکی کی مشہور ترین تفاسیر میں سے ہے۔
  • المالی تفسیر از المالی محمد حامدی یازر۔ 10 جلدوں میں شائع ہوئی،  یہ ترکی کی مشہور ترین تفاسیر میں سے ہے۔
  • بیوک قرآن تفسیری از کونیلی محمد وہبی۔ عام فہم ترکی میں لکھی گئی ایک ضخیم تفسیر۔ اس کا اصل نام خلاصہ البیان فی تفسیر القرآن تھا۔

علمی و تفسیری قرآن الکریم از عمر  نصوحی بلمن۔ 8 جلدوں پر مشتمل اس تفسیر کا پہلا نصف 20ویں صدی  میں لکھا گیا۔ خلافت عثمانیہ کی ترکی زبان استعمال کی گئی جو جدید ترکیوں کے لیے سمجھنا مشکل ہو سکتی ہے۔

  • روح الفرقان از محمود استؤثمانوگلو۔ یہ تفسیر ابھی نا مکمل ہے اور اندازہ ہے کہ 57 جلدوں پر مشتمل ہو گی۔

ازبیکستانی زبان[ترمیم]

  • تفسیر حلال از مفتی محمد صادق محمد یوسف۔ 2003ء میں 6 جلدوں میں شائع ہوئی۔

اردو زبان[ترمیم]

  • توضیح القرآن از مفتی محمد تقی عثمانی

http://www.elmedeen.com/cat-627-تفاسیر-عکسی-موافق-للمطبوع

ملیالہ زبان[ترمیم]

  • تفسیر از محمد امانی مولوی۔ 4 جلدیں

ملیالم زبان میں یہ بہت قابل اعتماد تفسیر ہے اس کی تکمیل میں 17 سال کا عرصہ لگا۔ مولوی پی کے موسیٰ اور مولوی اے الولی نے بھی ان کی اعانت کی۔ یہ تفسیر 4 جلدوں اور 8 جلدوں میں دستیاب ہے۔

  • پریسودھا قرآن ملیالہ زبان از عبد الحمید مدنی و کنجی محمد پراپور۔

شاہ فہد پریس نے اس یک جلدی ترجمہ کو قابل اعتماد قرار دیتے ہوئے چھپائی و تقسیم کے لیے قبول کیا ہے۔

  • تفہیم القرآن از ابو الاعلٰی مودودی۔ ملیالہ زبان میں یہ ترجمہ چھ جلدوں میں ہے۔
  • قرآن بھاشایم۔ ترجمہ ترجمان القرآن۔ ایک جلد۔
  • قرآن لالیتھ آشرم
  • امرتھوانی۔ منظوم۔
  • فی دلائل قرآن از شہید سید قطب کا ترجمہ۔

صومالی زبان[ترمیم]

  • تفسیر از کمار صومالی زبان میں صوتی فائلیں شبکہ پر دستیاب ہیں۔
  • تفسیر از میکسامیڈ کمار دریری صومالی زبان میں صوتی فائلیں شبکہ پر دستیاب ہیں

پشتو زبان[ترمیم]

  • کشف القرآن از حافظ محمد ادریس طورو۔ دو جلدوں پر مشتمل ہے اور ہر جلد میں پندرہ پارے ہیں۔ 1959ء میں پہلی بار شائع ہوئی۔ پھر 1965ء میں ان کی وفات کے بعد شائع ہوئی۔
  • تفسیر درمونگوی۔ اس کا ترجمہ پشاور کے قریب واقع ایک گاؤں درمونگ/دربونگ کے مولانا نے کیا۔
  • تفسیر احسن الکلام از شیخ القرآن ابو زکریاعبدالسلام رستمی رحمہ اللہ۔ پشاور کے عالم ہیں۔
  • تفسير ايوبی حنفی- اس کا ترجمہ افغانستان کے صوبہ کندھار سے تعلق رکھنے والا مولوی عبیداللہ ایوبی کندھاری نقشبندی نے کیا ہے جو ہندوستان کے دیوبند مدرسے سے فارغ تھا، تفسیر ایوبی پشتو زبان کا وسیع ترین تفسیر ہے جو 19 جلدوں پر مشتمل ہے۔

پنجابی زبان[ترمیم]

  • رب دیاں گلاں (پنجابی/اردو) از امیر محمد اکرم اعوان۔
  • تفسیر نبوی (پنجابی) محمد نبی بخش حلوائی (1902ء)
  • منظوم پنجابی ترجمہ محمد فیروز الدین (1904ء)
  • تفسیر محمدی۔ حافظ محمد بن بارک اللہ لکھوکے والے (1871ء)
  • قرآن مجید مترجم‘مولوی محمد دلپذیر بھیروی (1341ھ)
  • مترجم و محشی قرآن مجیدمولوی ہدایت اللہ (1969ء)

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]