تلبیس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

اصطلاح  میں کسی چیز کو اس کی حقیقت کے بر عکس ظاہر کرنا تلبیس کہلاتا ہے۔ قران مجید میں ارشاد خداوندی ہے ‘ ولا تلبسوا الحق بالباطل‘ اور حق کو باطل کے ساتھ نہ ملاو۔ حضرت داتا علی ہجویری رحمۃ اللہ علیہ فرماتے ہیں ‘جب ایک گروہ میں سے کوئی آدمی اچھی خصلتوں کو بری صفات سے پوشیدہ کرتا ہے تو اس کے اس عمل کو تلبیس کہتے ہیں۔[1]

حوالہ جات[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. شاہکار اسلامی انسائیکلو پیڈیا، صفحہ 532، جلد12، سید قاسم محمود، کلفٹن کالونی لاہور