تنائیم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
AcharonimRishonimGeonimSavoraimAmoraimZugot
ربانی زمانے

تنائیم (تلفظ:تا-نا-عیم) (عبرانی: תנאים [tanaˈʔim]، واحد תנא [taˈna]، تانا "ریپیٹرز (دوہرانے والے)"، "معلمین"[1]) ربیوں میں سے وہ جن کی تورات پر کی گئی گفتگو کو لکھا، زبانی یاد کیا اور بطور حوالہ دستاویز مشنا میں شامل کیا جاتا رہا۔ یہ اندازہ 10 سے 220 عیسوی کے درمیان میں تھے۔ اس دور کو تنائیم دور کہا جاتا ہے اور اسے مشنائی دور بھی کہتے ہیں۔ یہ دور 210 سال پر محیط تھا۔ یہ زوگٹ دور (جوڑنے والوں کا دور) کے بعد آیا، اس کے بعد اوریم دور (مفسرین یا ترجمانوں کا دور) شروع ہوا۔[2]

ان کو رپیٹرز یعنی دہرانے والے کہا جاتا، کیونکہ یہ تورات زبانی بولتے اس طرح انہوں نے تفسیر بذریعہ گفتگو کو ترقی دے کر معاشرے میں ایک اہم مقام حاصل کر لیا۔[3]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Sol Scharfstein Torah and Commentary: The Five Books of Moses: Translation 2008 p523 "The rabbis educated at Yavneh would be links in the great unbroken chain of teachers of the Torah. Yohanan and those who followed him were called tannaim, meaning "repeaters" or "teachers."
  2. Sol Scharfstein, Dorcas Gelabert Understanding Jewish History: From the patriarchs to the expulsion 1996 p116 "... both in Palestine and in Babylonia, were called amoraim, meaning "speakers" or "interpreters."."
  3. کیرن آرم سٹرانگ، ترجمہ محمد یحیی خان، دی بائبل دی بائیوگرافی؛ نگارشات، لاہور۔ صفحہ 97