توما ایکویناس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
سینٹ توما ایکویناس
توما کی پندرہویں صدی کی مصوری
کلیسا کے ڈاکٹر
تاریخ پیدائش 1225ء
روکاسیکا، مملکت صقلیہ
تاریخ وفات 7 مارچ 1274 (عمر 48–49)
فیسانوا، پاپائی ریاستیں
قابل احترام کیتھولک کلیسا
انگلیکان کمونین
لوتھریت
تعظيم و تکريم 18 جولائی 1323ء، آوینیو، پاپائی ریاستیں بذریعہ بطریق اعظم یوحنا بیست و دوم
اہم مزار جاکوبنز کلیسا،
تولوز، فرانس
ضیافت 28 جنوری (7 مارچ، 1969ء تک)
خصوصیات خلاصۂ الٰہیات
سرپرستی معلمین؛ ضد طوفان؛ ضد آسمانی بجلی؛ عُذَر خُواہان؛ ایکوینو، اطالیہ؛ بیلکاسترو، اطالیہ؛ کتب فروش؛ کیتھولک درس گاہیں، اسکول، اور جامعات؛ عفت؛ فالیرنا، اطالیہ؛ آموزش؛ پنسل سازان; فلسفی؛ ناشرین؛ فضلا؛ طالب علم؛ جامعہ سینٹ۔ توما؛ سانتو توماس، باتانگاس؛ الٰہیات دان۔[1]
توما ایکویناس
Gentile da Fabriano 052.jpg
پیدائش توماسو ڈی' ایکوینو
مادر علمی مونٹی کاسینو
جامعہ ناپولی
جامعہ پیرس
اہم تصانیف
عہد قرون وسطوی فلسفہ
علاقہ مغربی فلسفہ
مکتب فکر اصول متکلمین
توماویت
مابعد الطبیعیاتی عقلیت
قرون وسطوی حقیقت پسندی
شعبہ عمل
ما بعد الطبیعیات، منطق، الٰہیات، زہن، علمیات، اخلاقیات، سیاست
اہم نظریات
پنجگانہ راہیں، ایمان کا اصول

توما ایکویناس ایک مسیحی فلسفی ، سینٹ اور عالم دین تھے۔ جزیرہ صقلیہ میں‌ پیدا ہوئے۔ اپنے وقت کے بہترین استادوں سے فلسفے کی تعلیم حاصل کی۔ شہنشاہ فریڈرک ثانی کے دربار میں ملازمت کی۔ لیکن 1243ء میں درویشی اختیار کر لی۔ آپ نے اپنی مذہبی فلسفیانہ تصانیف میں یہ ثابت کرنے کی کوشش کی ہے کہ فطرت پرستی اور عقل پرستی کو مسیحی عقائد سے بہ آسانی ہم آہنگ کیا جاسکتا ہے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. سینٹ توما ایکویناس – کیتھولک ویب سائٹ
  2. اے۔سی براؤن، جوناتھن (2014). مسکوئٹنگ محمد: دی چیلنج اینڈ چوئسز آف انٹرپریٹنگ دی پروفیٹس لیگیسی. ون ورلڈ بپلکیش. صفحہ۔12. "Thomas Aquinas admitted relying heavily on Averroes to understand Aristotle."