تہمینہ دولتانہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
تہمینہ دولتانہ
تفصیل=

قومی اسمبلی پاکستان کی رکن
مدت منصب
1 جون 2013ء – 31 مئی 2018ء
مدت منصب
17 مارچ 2008ء – 16 مارچ 2013ء
مدت منصب
16 نومبر 2002ء – 15 نومبر 2007ء
مدت منصب
15 فروری 1997ء – 12 اکتوبر 1999ء
مدت منصب
15 اکتوبر 1993ء – 5 نومبر 1996ء
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1950 (عمر 70–71 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن)  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد 2 لڑکے: میاں عمران عقیل دولتانہ اور میاں عرفان عقیل دولتانہ
رشتے دار دیکھیے دولتانہ خاندان
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ پنجاب  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
مادری زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P103) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

تہمینہ دولتانہ (ولادت: 1950ء) ایک پاکستانی سیاست دان ہیں جو پاکستان کی قومی اسمبلی کی ممبر رہ چکی ہیں۔ ان کا تعلق پاکستان مسلم لیگ (ن) سے ہے۔ 1993ء سے 1999ء اور 2002ء سے 2018ء تک آپ پاکستان کی قومی اسمبلی کی رکن رہیں۔

سیاسی زندگی[ترمیم]

1993ء کے عام انتخابات[ترمیم]

تہمینہ دولتانہ پہلی بار 1993ء کے عام انتخابات میں حلقہ این اے 130 وہاڑی 2 سے مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کی حیثیت سے پاکستان کی قومی اسمبلی کی رکن منتخب ہوئیں۔[1][2]

1997ء کے عام انتخابات[ترمیم]

تہمینہ 1997ء کے پاکستانی عام انتخابات میں حلقہ این اے 130 وہاڑی 3 سے مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کی حیثیت سے پاکستان کی قومی اسمبلی کی رکن دوبارہ منتخب ہوئیں۔[1] خواتین کی ترقی، سماجی بہبود اور خصوصی تعلیم کی وزیر کی حیثیت سے رہیں۔[2]

2013ء کے عام انتخابات[ترمیم]

وہ 2013ء کے عام انتخابات میں این اے 169 سے مسلم لیگ (ن) کے امیدوار کی حیثیت سے قومی اسمبلی کی نشست پر انتخاب لڑی تھیں، لیکن ناکام رہیں۔[3] بعد میں تہمینہ پنجاب سے خواتین کے لیے مخصوص نشستوں پر مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کی حیثیت سے بالواسطہ قومی اسمبلی میں منتخب ہوئیں۔.[4][5][6][7][8]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "PPP reserves berth in 'first' class". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 22 فروری 2008. 8 اپریل 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 13 ستمبر 2017. 
  2. ^ ا ب "Profile". www.pap.gov.pk. Punjab Assembly. 20 جون 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 13 ستمبر 2017. 
  3. Ghumman، Khawar (17 مئی 2013). "Traditional politics losing ground in southern Punjab". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 6 مارچ2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 13 ستمبر 2017. 
  4. "PML-N assured of win-win situation on many seats". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). 9 مارچ 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 8 مارچ 2017. 
  5. "Educated, qualified women enter NA, thanks to PML-N". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). 8 مارچ 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 8 مارچ 2017. 
  6. "A glance at Sindh's female election hopefuls". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 7 مئی 2013. 4 مارچ 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 مارچ 2017. 
  7. "Number of women candidates not rising". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 21 اپریل 2013. 6 مارچ 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 8 مارچ 2017. 
  8. "Once bitten, Sharifs being 'shy' about gubernatorial hunt". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 20 فروری 2015. 9 مارچ 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 08 مارچ 2017.