ثقلین مشتاق کی بین الاقوامی کرکٹ میں پانچ وکٹیں لینے کی فہرست

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے

ثقلین مشتاق کی حالیہ تصویر

سابق پاکستانی کرکٹ کھلاڑی ثقلین مشتاق نے بین الاقوامی کرکٹ میں اپنے کیریئر کے دوران میں 19 مرتبہ پانچ وکٹیں حاصل کیں۔ [1][2] پانچ وکٹوں کا شکار (جسے "پانچ کے لیے" یا "فائفر" بھی کہا جاتا ہے) [3] سے مراد ایک ہی اننگز میں پانچ یا زیادہ وکٹیں لینے والا گیندباز ہے۔ کرکٹ کے ناقدین نے اسے ایک قابل ذکر کامیابی قرار دیا ہے، [4] اور 50 سے کم گیند بازوں نے اپنے کرکٹ کیریئر میں بین الاقوامی سطح پر 15 سے زیادہ مرتبہ پانچ وکٹیں حاصل کی ہیں۔ [2][5][6] 1995ء اور 2004ء کے درمیان میں اپنے ملک کی نمائندگی کرنے والے دائیں ہاتھ کے آف بریک گیند باز، ثقلین کو بی بی سی نے "آف اسپن بولنگ پر حملہ کرنے کے فن میں ایک انقلاب" کے طور پر بیان کیا۔ [7] ثقلین کو وزڈن نے 2000ء میں سال کے بہترین کرکٹرز میں سے ایک قرار دیا تھا۔ [8]

ثقلین نے اپنا پہلا ٹیسٹ میچ 1995ء میں سری لنکا کے خلاف ارباب نیاز اسٹیڈیم پشاور میں کھیلا تھا۔ [9] اس نے پہلی بار ٹیسٹ میں پانچ وکٹیں لینے کا کارنامہ 1997ء میں اسی ٹیم کے خلاف آر پریماداسا اسٹیڈیم، کولمبو میں سرانجام دیا تھا۔ [10] جنوری 1999ء میں بھارت کے خلاف ایم اے چدمبرم اسٹیڈیم، چنئی میں، اس نے پہلی بار ٹیسٹ میچ کی دونوں اننگز میں پانچ وکٹیں حاصل کیں۔ [11] اس نے یہ کارنامہ اپنے کیریئر میں صرف ایک بار پھراسی سیریز کے دوسرے ٹیسٹ کے دوران میں فیروز شاہ کوٹلہ گراؤنڈ، دہلی میں دہرایا۔ [12] نومبر 2000ء میں لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں انگلینڈ کے خلاف 164 رنز کے عوض [13] 8 وکٹیں اس کے کیریئر کی بہترین اننگز تھیں۔ اس نے تین مواقع پر ایک میچ میں دس یا اس سے زیادہ وکٹیں بھی حاصل کیں۔ [14]

ستمبر 1995ء میں جناح اسٹیڈیم، گوجرانوالہ میں سری لنکا کے خلاف اپنا ایک روزہ بین الاقوامی (ODI) میچ کھیلنے کے بعد، [15] ثقلین کی پہلی بار ایک روزہ میچ میں پانچ وکٹیں اگلے سال، نیوزی لینڈ کے خلاف حاصل کیں، یہ میچ پاکستان نے اسی مقام پر جیتا تھا۔ [16] 2000ء میں راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں انگلینڈ کے خلاف 20 رنز کے عوض 5 وکٹیں ایک روزہ کرکٹ میں ان کے کیریئر کی بہترین گیند بازی تھیں۔ [17] بمطابق 2017ء ثقلین ان چار گیند بازوں میں سے ایک ہیں جنہوں نے زمبابوے کے خلاف دو یا دو سے زیادہ مختلف مواقع پرایک روزہ ہیٹ ٹرک (مسلسل تین وکٹیں) حاصل کیں۔ [18][19][note 1] انھوں نے ایک ہیٹ ٹرک 1999 کے کرکٹ عالمی کپ میں کی۔[21][22] ثقلین نے ٹیسٹ کرکٹ میں تیرہ پانچ اور ایک روزہ میں چھ وکٹیں حاصل کیں۔ [5] [6] بمطابق 2017ء وہ کھیل کے تمام فارمیٹس میں پاکستان کے لیے پانچ وکٹیں لینے والوں کی فہرست میں چوتھے نمبر پر ہیں۔ [23]

کلید[ترمیم]

چابی
علامت مطلب
تاریخ میچ کے انعقاد کی تاریخ، یا ٹیسٹ میچوں کے لیے میچ شروع ہونے کی تاریخ
سرائے میچ کی اننگز جس میں پانچ وکٹیں حاصل کیں۔
اوورز اس اننگ میں کرائے گئے اوور کی تعداد
چلتا ہے۔ رنز
وکٹیں وکٹوں کی تعداد
اکانمی بولنگ اکانومی ریٹ (اوسط رنز فی اوور)
بلے باز وہ بلے باز جن کی وکٹیں لی گئیں۔
نتیجہ اس میچ میں پاکستان کا نتیجہ
ثقلین مین آف دی میچ منتخب
میچ میں 10 یا اس سے زیادہ وکٹیں لیں۔
* ایک میچ میں ثقلین کی دونوں اننگوں میں پانچ پانچ وکٹیں لیں

ٹیسٹ[ترمیم]

ثقلین مشتاق کی بین الاقوامی کرکٹ میں پانچ وکٹیں
نمبر۔ تاریخ میدان مدمقابل اننگ اوور رن وکٹیں اکانمی بلے باز نتیجہ
1 19 اپریل 1997 آر پریماداسا اسٹیڈیم، کولمبو  سری لنکا 1 44.2 89 5 2.00 بلا نتیجہ[10]
2 6 اکتوبر 1997 راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم، راولپنڈی  جنوبی افریقا 2 62 129 5 2.08 بلا نتیجہ[24]
3 6 دسمبر 1997 نیشنل اسٹیڈیم، کراچی، کراچی  ویسٹ انڈیز 1 24 54 5 2.25 جیتا[25]
4 10 دسمبر 1998 قذافی اسٹیڈیم، لاہور  زمبابوے 1 13.5 32 5 2.31 بلا نتیجہ[26]
5 28 جنوری 1999* ایم اے چدمبرم اسٹیڈیم، چنائی (شہر)  بھارت 2 35 94 5 2.68 جیتا[11]
6 28 جنوری 1999* ایم اے چدمبرم اسٹیڈیم، چنائی (شہر)  بھارت 4 32.2 93 5 2.87 جیتا[11]
7 4 فروری 1999* فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم، دہلی  بھارت 1 35.5 94 5 2.62 ہارا[12]
8 4 فروری 1999* فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم، دہلی  بھارت 3 46.4 122 5 2.61 ہارا[12]
9 18 نومبر 1999 بیللیریو اوول، ہوبارٹ  آسٹریلیا 2 24 46 6 1.91 ہارا[27]
10 18 مئی 2000 کنسنگٹن اوول، برج ٹاؤن  ویسٹ انڈیز 2 51 121 5 2.37 بلا نتیجہ[28]
11 15 نومبر 2000 قذافی اسٹیڈیم، لاہور  انگلستان 1 74 164 8 2.21 بلا نتیجہ[13]
12 16 جنوری 2002 ایم اے عزیز اسٹیڈیم، چٹا گانگ  بنگلادیش 1 16.4 35 5 2.10 جیتا[29]
13 16 نومبر 2002 کوئنز اسپورٹس کلب، بولاوایو  زمبابوے 1 25.5 66 7 2.55 جیتا[30]

ایک روزہ بین الاقوامی[ترمیم]

ثقلین مشتاق کی ایک روزہ کرکٹ میں پانچ وکٹیں
نمبر تاریخ میدان مدمقابل اننگ اوور رن وکٹیں اکانمی بلے باز نتیجہ
1 دسمبر 4, 1996 جناح سٹیڈیم، گوجرانوالہ  نیوزی لینڈ 2 9.4 44 5 4.55 جیتا [16]
2 دسمبر 15, 1996 ایڈیلیڈ اوول، ایڈیلیڈ  آسٹریلیا 2 8.5 29 5 3.28 جیتا [31]
3 جولائی 16, 1997 آر پریماداسا اسٹیڈیم، کولمبو  بنگلادیش 2 9.3 38 5 4.00 جیتا [32]
4 ستمبر 13, 1997 ٹورنٹو کرکٹ، سکیٹنگ اور کرلنگ کلب، ٹورنٹو  بھارت 1 10 45 5 4.50 کھویا [33]
5 مئی 31, 1999 کاؤنٹی کرکٹ گراؤنڈ، نارتھمپٹن  بنگلادیش 1 10 35 5 3.50 کھویا [34]
6 اکتوبر 30, 2000 راولپنڈی کرکٹ سٹیڈیم، راولپنڈی  انگلستان 1 8 20 5 2.50 جیتا [17]

حواشی[ترمیم]

  1. The other two bowlers to accomplish the feat are وسیم اکرم and چمنڈا واس، who each have two, and لاستھ ملنگا، who has taken three ODI hat-tricks.[20]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Saqlain Mushtaq". ای ایس پی این کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  2. ^ ا ب "Records – Combined Test, ODI and T20I records – Bowling records – Most five-wickets-in-an-innings in a career". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  3. "Swinging it for the Auld Enemy – An interview with Ryan Sidebottom". The Scotsman. 17 اگست 2008. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. ۔۔۔ I'd rather take fifers (five wickets) for England … 
  4. Pervez، M. A. (2001). A Dictionary of Cricket. Orient Blackswan. صفحہ 31. ISBN 978-81-7370-184-9. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  5. ^ ا ب "Records – Test matches – Bowling records – Most five-wickets-in-an-innings in a career". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  6. ^ ا ب "One-Day Internationals: Bowling Records – Most five-wickets-in-an-innings in a career". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  7. "BBC profile of Saqlain Mushtaq". برطانوی نشریاتی ادارہ. 3 جنوری 2003. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  8. "Wisden 2000: Cricketer of the year – Saqlain Mushtaq". Wisden. ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  9. "Sri Lanka in Pakistan Test Series – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  10. ^ ا ب "Pakistan in Sri Lanka Test Series – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  11. ^ ا ب پ "Pakistan in India Test Series – 1st Test". ESPNcricinfo. 27 اکتوبر 2015 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  12. ^ ا ب پ "Pakistan in India Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  13. ^ ا ب "England in Pakistan Test Series – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  14. "Test Matches: Bowling Records – Most ten-wickets-in-a-match in a career". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  15. "Sri Lanka in Pakistan ODI Series – 1st ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  16. ^ ا ب "New Zealand in Pakistan ODI Series – 1st ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  17. ^ ا ب "England in Pakistan ODI Series – 3rd ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  18. Kahate، Atul (17 جون 1999). "Saqlain's hat-trick (12 جون 1999)". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  19. "Vaughan confident over Cup fitness". The Daily Telegraph. Telegraph online and PA. 20 فروری 2007. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  20. "Records – One Day Internationals – Bowling records – Hat-tricks". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  21. "Pakistan vs Zimbabawe at The Oval – 7th Super-six match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  22. "2003: Pakistani Squad – Saqlain Mushtaq". روزنامہ جنگ. 4 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  23. "Cricket Records – Records – Pakistan – Combined Test, ODI and T20I – Most five-wickets-in-an-innings". ESPNcricinfo. 12 اگست 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 21 اکتوبر 2012. 
  24. "South Africa in Pakistan Test Series – 1st Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  25. "West Indies in Pakistan Test Series – 3rd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  26. "Zimbabwe in Pakistan Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  27. "Pakistan in Australia Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  28. "Pakistan in West Indies Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  29. "Pakistan in Bangladesh Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  30. "Pakistan in Zimbabwe Test Series – 2nd Test". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  31. "Carlton & United Series – 3rd match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  32. "Pepsi Asia Cup – 2nd match". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  33. "Sahara 'Friendship' Cup – 1st ODI". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 
  34. "ICC World Cup – 29th match, Group B". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 21 اگست 2012. 

بیرونی روابط[ترمیم]