ثمینہ سید

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
ثمینہ سید
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1944  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
فیروزپور  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات سنہ 2016 (71–72 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لاہور  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ گلو کارہ  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ثمینہ سید (انگریزی: Samina Syed) (ولادت: 1944ء - وفات: 17 ستمبر 2016ء) پنجابی زبان کی گلوکارہ اور موسیقی کی استاد تھیں۔[1][2][3]

ابتدائی زندگی اور کیریئر[ترمیم]

ثمینہ دسمبر 1944ء میں برطانوی ہند کے صوبہ پنجاب کے فیروزپور میں پیدا ہوئیں۔[3] انہیں کلاسیکی موسیقی کی تربیت مشہور پاکستانی موسیقار فیروز نظامی، بھائی چیلا اور استاد چھوٹے غلام علی خان نے دی تھی۔ کلاسیکی موسیقی کی تربیت کے بعد، انہوں نے لاہور کے گورنمنٹ کالج آف ہوم اکنامکس میں تین دہائیوں سے زیادہ عرصہ تک موسیقی کی تعلیم دی۔[3]

سماجی اور ثقافتی سرگرمیاں[ترمیم]

ثمینہ حسن سید کی شادی نجم حسین سید سے ہوئی تھی۔ یہ دونوں ہی پنجابی ثقافت، پنجابی ادب اور پنجابی زبان کے بڑے شوق رکھتے تھے۔ مستقل بنیاد پر، وہ لاہور میں اپنے گھر پر ہفتہ وار اجلاس کا اہتمام کرتے تھے جو پنجابی ثقافت میں دلچسپی رکھنے والوں کے لئے کھلا تھا۔ پنجابی شاعری اور پنجابی موسیقی میں جوڑے کی دیگر مشترکہ دلچسپیاں تھیں جہاں ثمینہ مہمانوں کے ساتھ مل کر اپنے شوہر نجم حسین سید کی مرتب کردہ پنجابی کلاسیکی شاعری بھی گاتی تھیں۔[1]

وفات اور میراث[ترمیم]

ثمینہ سید کا انتقال 17 ستمبر 2016ء کو 72 سال کی عمر میں ہوا۔[1][2] ثمینہ سید اپنی موت سے قبل کچھ عرصے سے کینسر کی بیماری میں مبتلا تھیں۔انہیں پاکستان کے شہر لاہور میں بابا شاہ جمال قبرستان میں سپرد خاک کردیا گیا۔ ثمینہ سید کے جنازے میں لاہور کی متعدد شخصیات نے شرکت جن میں سلیمہ ہاشمی ، مدیحہ گوہر ، زعیم قادری اور مشہور پاکستانی معمار نیئر علی دادا شامل تھے۔[3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پ Soofi، Mushtaq (30 September 2016). "Punjab notes: Samina Hasan Syed: painting an audio landscape". Dawn. Pakistan. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2019. 
  2. ^ ا ب "Obituary: Samina Syed passes away". The Express Tribune (newspaper). 18 September 2016. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2019. 
  3. ^ ا ب پ ت Shoaib Ahmed (18 September 2016). "Najm Hosain Syed's wife passes away". Dawn. Pakistan. اخذ شدہ بتاریخ 06 دسمبر 2019.