جامعہ سلفیہ (مرکزی دار العلوم) بنارس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جامعہ سلفیہ (مرکزی دار العلوم ) بنارس ہندوستان میں جماعت اہلحدیث کا مرکزی تعلیمی وتربیتی ادارہ ہے جو جماعت کے بزرگوں اور مخلصوں کی دیرینہ تمناؤں اور دعاؤں کے بعد اللہ کی مشیت سے منصۂ شہود پر جلوہ گر ہوا ہے، اس مرکزی دانش گاہ کی تاسیس جماعت اہلحدیث ہند کی سب سے بڑی دعوتی تنظیم ’’آل انڈیا اہلحدیث کانفرنس‘‘ کی تحریک پر ہوئی،  1963میں اسی کانفرنس کی سرپرستی میں موحد مملکت سعودیہ عربیہ کے سفیر عزت مآب یوسف الفوزان کے دست مبارک سے اس کا سنگ بنیاد رکھا گیا، اور اس کے بعد علامہ ابن باز کی نیابت کرتے ہوئے علامہ عبد القادر شیبۃ الحمد نے 1966 میں اس کا افتتاح کیا، پھر اساتذہ کبار کی خدمات حاصل کرکے تعلیم وتربیت کا منصوبہ بند آغاز کردیا گیا، نصف صدی کا عرصہ گذر گیا، اس دوران جامعہ سلفیہ اپنے بنیادی مقاصد کے حصول اور مختلف ترقیاتی میدانوں میں پیش رفت کی راہوں پر گامزن رہا، علماء ، دعاۃ ، مصنفین ومحققین کی ٹیمیں یہاں سے برابر نکلتی رہیں ، اعلی تعلیم کے لیے یہاں کے فارغین ملکی یونیورسٹیوں اور بیرون ملک سعودیہ عربیہ اور بلاد عرب کی جامعات میں داخل ہوکر پی ۔ ایچ ۔ ڈی۔ کے اعلی تعلیمی مراحل کو پہونچتے رہے، اور ملک اور بیرون ملک کے تعلیمی، دعوتی اور تصنیفی وتحقیقی ودیگر حکومتی اداروں میں اس جامعہ کے فارغین نیک نامی کے ساتھ برسر عمل ہیں، جامعہ کے طے شدہ مقاصد اور منصوبہ جات کی عملی تنفیذ کے ساتھ ساتھ اس عظیم تعلیمی ادارہ کی ضروریات بھی بڑھتی رہیں اور اس کے متعدد شعبہ جات میں حسب منصوبہ اضافے ہوتے رہے،

جامعہ سلفیہ بنارس
شعار (عربی)
قسم اسلامی یونیورسٹی
قیام 1963
تدریسی عملہ
+300
مقام وارانسی، اتر پردیش، بھارت بھارت کا پرچم

تأسیس[ترمیم]