جام ساقی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جام ساقی
(سندھی میں: ڄام ساقي خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقامی زبان میں نام (P1559) ویکی ڈیٹا پر
Jam Saqi.jpg 

معلومات شخصیت
پیدائش 31 اکتوبر 1944  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
چھاچھرو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
وفات 5 مارچ 2018 (74 سال)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ وفات (P570) ویکی ڈیٹا پر
حیدرآباد  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام وفات (P20) ویکی ڈیٹا پر
وجۂ وفات گردے فیل  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں وجۂ وفات (P509) ویکی ڈیٹا پر
رہائش حیدرآباد  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں رہائش (P551) ویکی ڈیٹا پر
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں شہریت (P27) ویکی ڈیٹا پر
جماعت کیمونسٹ پارٹی آف پاکستان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں سیاسی جماعت کی رکنیت (P102) ویکی ڈیٹا پر
عملی زندگی
پیشہ سیاست دان  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں پیشہ (P106) ویکی ڈیٹا پر
پیشہ ورانہ زبان سندھی زبان،  اردو  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر

جام ساقی (سندھی: ڄام ساقي) (اکتوبر 31, 1944 – مارچ 5, 2018) ایک بائیں بازو کے سندھ، پاکستان کے سیاست دان تھے۔[2] ساقی کمونسٹ پارٹی آف پاکستان کے پہلے سیکرٹری جنرل تھے۔ ساقی اپنی سیاسی سرگرمیوں کے باعث 15 سال جیل میں رہے۔ جیل میں قید کے دوران میں تشدد کے نتیجے میں ان کی موت واقع ہونے کی افواہ سننے کے بعد ان کی بیوی سوخان نے خودکشی کرلی۔ 1991ء میں انھوں نے کیمونسٹ پارٹی چھوڑ کر اور پاکستان پیپلز پارٹی میں شمولیت اختیار کر لی۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]