جان بکن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
ہزایکسیلنسی دی رائٹ آنریبل
لارڈ ٹوئیڈس موئر
جان بکن
John Buchan
Btweedsmuir2.jpg
گورنر جنرل کینیڈا
عہدہ سنبھالا
2 نومبر 1935ء – 11 فروری 1940ء
شاہی حکمران
وزیر اعظم
  • آر بی بینٹ
  • ویلیم لیون مکنزی کنگ
پیشرو ارل آف بیسبرو
جانشین ارل آف ایتھلون
ذاتی تفصیلات
پیدائش 26 اگست 1875(1875-08-26)
پرتھ، اسکاٹ لینڈ
وفات 11 فروری 1940(1940-02-11)
مانٹریال، کینیڈا
قومیت Flag of the United Kingdom.svg مملکت متحدہ
مادر علمی گلاسگو یونیورسٹی، بریسنوز کالج آکسفرڈ
ذریعہ معاش مصنف، سیاستدان، صحافی
دستخط

جان بکن (انگریزی: John Buchan) (پیدائش: 26 اگست 1875ء - وفات: 11 فروری 1940ء) اسکاٹ لینڈ کے ناول نگار، سوانح نویس، مورخ، انشا پرداز، شاعر، مدیر، ناشر اور سیاستدان تھے جنھوں نے کینیڈا کے پندرہویں گورنر جنرل کی حیثیت سے خدمات انجام دیں۔

حالات زندگی[ترمیم]

جان بکن 26 اگست 1875ء کو پرتھ، سکاٹ لینڈ میں پیدا ہوئے[1]۔ انہوں نے رسمی تعلیم گلاسگو یونیورسٹی اور آکسفرڈ یونیورسٹی سے حاصل کی، پھر جنوبی افریقا میں برطانیہ کے ہائی کمشنرالفریڈ ملنر کے ساتھ کام کیا۔ بعد ازاں لندن آکر قانونی پریکٹس شروع کی لیکن واقعتاً وہ "دی اسپیکٹیٹر" کی ادارت کرتے رہے۔ انہوں نے ٹی نیلسن پبلشرز کے اشاعتی کام میں نئی جان ڈالی اور عمدہ ادبی کتابوں کے پاکٹ ایڈیشن شائع کیے۔ پہلی جنگ عظیم میں انہوں نے محکمہ سراغ رسانی میں کام کیا اور اسکاٹس یونیورسٹیز کے حلقہ سے ممبر پارلیمنٹ بھی ہوگئے۔ ان کو "لارڈ ٹوئیڈس موئر" کا خطاب ملا اور وہ کینیڈا کے گورنر جنرل مقرر کیے گیے۔[2]

ادبی خدمات[ترمیم]

جان بکن اپنے جاسوسی ناولوں کی وجہ سے مشہور ہوئے، خاص کر "تھرٹی نائن اسٹیپس" بہت مشہور ہوا جو ان کی ستائیسویں کتاب تھی اور 1915ء میں شائع ہوئی۔ ان کی لکھی ہوئی 101 کتابوں میں سے 29 ناول، 4 شاعری کے مجموعے، 10 سوانح، 14 تالیفات، 2 کلیات، 42 غیر افسانوی کتب شامل ہیں۔ ان میں سے بہت سی آج بھی مقبول ہیں اور پسندیدگی سے پڑھی جاتیں ہیں۔ ان کا آخری ناول "سک ہارٹ یور" کافی پسند کیا گیا۔ ان کے ناولوں کی زبان شستہ، ماحول صاف ستھرا اور کردار جاندار ہوتے ہیں۔ ناولوں کے علاوہ انہوں نے 24 جلدوں میں "نیلسنس ہسٹری آف وار" لکھی جس کا کچھ حصہ انہوں نے محاذِ جنگ پر لکھا۔ انھوں نے "مانٹروز"، "والٹر اسکاٹ"، "اولیور کرامویل"، "جولیس سیزر"، "آگسٹس" اور دیگر کئی لوگوں کی سوانح عمریاں لکھیں جن کی خاص تعریف کی گئی۔ انھوں نے اپنی سوانح "میموری ہولڈ دی ڈور" کے نام سے 1940ء میں لکھی۔ [2]

وفات[ترمیم]

جان بکن کی وفات64 سال کی عمر میں 11 فروری 1940ء کو مانٹریال، کینیڈا میں ہوئی۔[1]

اعزازات[ترمیم]

  • آرڈرآف کمپینین آف آنر
  • پریوی کونسل
  • رائل وکٹورین آرڈر
  • آرڈرآف سینٹ مائیکل اینڈ سینٹ جارج

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ 1.0 1.1 جان بکن، دائرۃالمعارف برطانیکا آن لائن
  2. ^ 2.0 2.1 جامع اردو انسائیکلوپیڈیا (جلد-1 ادبیات)، قومی کونسل برائے فروغِ اردو زبان، نئی دہلی،2003ء، ص 110