جسمی طفرہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جسمی طفرات یا somatic mutations ایسے طفرات یا طَفرَہ کو کہتے ہیں کہ جو جسم کے (یعنی جسمی یا بدن کے ) خلیات میں نمودار ہوا کریں، اس کے لیے طب میں جو لفظ استعمال کیا جاتا ہے وہ ہے جسدی طفرہ۔ جسدی کا لفظ جسد سے بنا ہے اور اس کا مطلب جسم ہوتا ہے، جسد کو انگریزی میں soma اور جسدی کو somatic کہا جاتا ہے۔

دراصل انکو جسدی یا جسمی طفرہ کہنے کی وجہ یہ ہے کہ یہ جسم کے ان خلیات میں ہوتی ہے کہ جو جفت گیری پر بچہ بنانے میں براہ راست شامل نہیں ہوا کرتے اور اسی وجہ سے جسدی طفرہ والدین سے اولاد میں منتقل نہیں ہوتا، ہاں یہ ہے کہ یہ حامل شخص کے ان ہی خلیات (جن میں یہ موجود ہو، مثلا جگر یا پھیپڑے وغیرہ) کی تقسیم سے بننے والے نئے خلیات میں لازمی منتقل ہو جایا کرتی ہے۔

جبکہ وہ خلیات کہ جو بچہ بنانے میں براہ راست ملوث ہوا کرتے ہیں اگر ان میں طفرہ پیدا ہو تو اس کو نذری طفرات یا Germline mutations کہا جاتا ہے۔

مزید دیکھیے[ترمیم]