جشن ریختہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جشن ریختہ اردو کا سب سے بڑا میلہ ہے جسے دہلی میں ریختہ فاؤنڈیشن کی جانب سے منعقد کیا جاتا ہے۔[1] یہ 3 دنوں کی تقریب ہے جسے ہر سال دہلی میں منعقد کیا جاتا ہے۔ اس کا مقصد اردو کے مختلف رنگوں کو یکجا کرناہے اور اس کی خوبصورتی اور استحکام کا جشن منانا ہے۔[2][3] یہ تقریب صرف اردو شاعری پر ہی منحصر نہیں ہوتی ہے، بلکہ اردو ادب، قوالی، اسلامی خطاطی، غزل، صوفی موسیقی، تلاوت، پینل بحث، مناظرہ و مباحثہ، فلموں پر گفتگو، فن خطاطی اور دیگر ورکشاپوں پر منحصر ہوتی ہے۔[4][5] اس تقریب میں نئے شعرا اور محبان اردو کو اپنی تخلیق پیش کرنے کا بھی موقع ملتا ہے۔[3] اس تقریب کا نعرہ ہی اردو کا جشن ہے۔ اور اس میں اردو کے عشاق بڑی تعداد میں شرکت کرتے ہیں جن میں اکثریت نوجوانوں کی ہوتی ہے۔[6]

جشن ریختہ میں اردو ادب کی بڑی ہستیاں شرکت کرتی ہیں اور یہی نہیں بلکہ فلم، موسیقی اور ٹی وی کے بڑے ستارے دنیا بھر سے جشن ریختہ میں شریک ہوتے ہیں۔ ان میں مشہور نام گلزار، جاوید اختر، پرسون جوشی، پنڈت جسراج، وحیدہ رحمن، استاد راشد خان، ٹوم الٹر، شبانہ اعظمی، نواز الدين صدیقی، استاد امجد علی خان، شمس الرحمٰن فاروقی، گوپی چند نارنگ، ضیاء محی الدین، انتظار حسین، ندا فاضلی، انور مسعود، شرمیلا ٹیگور، پریم چوپڑا، انور مقصود، نندتا داس، مظفر علی، ریکھا بھاردواج، عرفان خان، امیش ترپاٹھی، منور رانا اور راحت اندوری جیسی شخصیات شامل ہیں۔ اس میلہ کا انعقاد ریختہ فاؤنڈیشن کے زیر اہتمام ہوتا ہے۔ ریختہ فاؤنڈیشن ایک غیر منافع بخش تنظیم ہے جس کی بنیاد اردو زبان و ادب کی ترویج و اشاعت کے لیے رکھی گئی تھی۔ اس کے روح رواں سنجیو صراف ہیں۔[7][8] وہ اردو شاعری کے دلدادہ ہیں اور اردو سے ان کا عشق ہی ریختہ کی تاسیس کا سبب بنا۔[9] ریختہ نے www.rekhta.org پتہ سے 2013ء میں ایک آنلائن ویبسائٹ کی اشاعت کی جو اردو شاعری اور نثر کا آزاد ذخیرہ ہے۔ یہ اب تک 3398 شعرا، 36205 غزلیں، 6288 نظمیں، 25210 اشعار، 50040 ای کتب، 5345 ویڈیو اور 2102 آڈیو کے ساتھ دنیا بھر میں اردو ادب کا سب سے بڑا ذخیرہ ہے۔ واضح رہے کہ ریختہ کا تمام تر آن لائن ذخیرہ نستعلیق، دیوناگری اور لاطینی رسم الخط، تینوں میں مہیا ہے۔[10] ریختہ نے شاعری کے ساتھ ساتھ اردو کی کتابوں کو جمع کرنے اور ان کو آنلائن میہا کروانے کا بیڑا بھی اٹھایا ہے جہاں اب تک 50040 ای کتابیں ذخیرہ کی جاچکی ہیں اور تقریباً 2000 کتب ہر ماہ اپلوڈ کی جاتی ہیں۔

عوام کو اردو سے جوڑے رکھنے کے لیے ریختہ نے اردو سیکھنے کا ایک پورٹل بھی شائع کیا ہے جہاں aamozish.com پتہ سے رسائی ہوسکتی ہے۔ ساتھ رسم الخط سیکھنے کے لیے پروگرام کا بھی انعقاد کرتی ہے۔[11] جشن ریختہ کے علاوہ رنگ ریختہ اور شام ریختہ جیسی تقریبات کا انعقاد بھی کیا جاتا ہے۔[12][10]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Jashn-e-Rekhta Is Back In Delhi With Fourth Season: Here's What To Expect From The 'Biggest Urdu Festival'"۔ NDTV.com۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔
  2. "When the soul speaks in Urdu" (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔
  3. ^ ا ب "Urdu festival Jashn-e-Rekhta resonates with one and all"۔ The Asian Age۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔
  4. "Jashn-e-Rekhta 2017: Celebrating Urdu | Three-day Urdu festival"۔ jashnerekhta.org (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2017-02-09۔
  5. Jaideep Chandra Deo Bhanj۔ "The great global culinary experiment"۔ The Hindu (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2017-02-09۔
  6. Preeti Vermal Lal۔ "When the Soul speaks in Urdu"۔ The Hindu (انگریزی زبان میں)۔ ISSN 0971-751X۔ مورخہ 6 جنوری 2019 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔
  7. Veenu Sandhu۔ "For the love of Urdu"۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔
  8. "Jashn-e-Rekhta: Meet the man whose passion project is now a celebration of Urdu"۔ https://www.hindustantimes.com/ (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔ External link in |work= (معاونت)
  9. "Jashn-E-Rekhta Founder Explains Why Urdu Belongs to All of Us"۔ The Quint (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔
  10. ^ ا ب "A tribute to richness, versatility, timeless beauty of Urdu — city first stop for event"۔ The Indian Express (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔
  11. "Course to revive Urdu a big hit in Noida"۔ The Asian Age۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔
  12. "Rang-e-Rekhta Festival: Chandigarh people cherish noted poets coming together to promote Urdu music"۔ The Indian Express (انگریزی زبان میں)۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 2018-08-21۔