جلال چانڈیو

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جلال چانڈیو
جلال چانڊيو
معلومات شخصیت
پیدائش 1944ء
پھل،ضلع نوشہرو فیروز، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان)
وفات جنوری 10، 2001(2001-01-10)ء
پھل،ضلع نوشہرو فیروز، پاکستان
قومیت Flag of پاکستانپاکستانی
عملی زندگی
پیشہ گلو کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وجہ شہرت گلوکاری
کارہائے نمایاں
  • '
صنف لوک موسیقی
اعزازات
شاہ لطف ایوارڈ
سچل سرمست ایوارڈ

جلال چانڈیو (انگریزی: Jalal Chandio) (پیدائش: 1944ء - وفات: 10 جنوری، 2001ء) سندھ کے معروف لوک گلوکار تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

جلال چانڈیو 1944ء کو قصبہ پھل،ضلع نوشہرو فیروز، برطانوی ہندوستان (موجودہ پاکستان) میں حاجی فیض محمد کے گھر پیدا ہوئے[1][2][3]۔ اس کے والد کے پاس مویشیوں کے فارم تھے[4] ۔ چونکہ جلال چانڈیو کو تعلیم میں دلچسپی نہیں تھی لہذا ، ان کے والد نے اسے نوان جتوئی ٹاؤن بھی درزی کا کام سیکھنے کے لیے بھیجا تھا تاہم بچپن سے ہی اس کو گانے میں دلچسپی ہونے کی وجہ سے انہوں نے ٹیلرنگ چھوڑ دی اور بغیر ٹیلر سیکھے ہی اپنے گھر واپس آکر  اپنے مویشیوں کو چرانے لگے اور مویشیوں کو چراتے وقت بھی گیت گایا کرتے تھے[5]۔ انہوں نے موسیقی کی باقاعدہ تربیت میر پور ماتھیلو کے علی گل مہر سے حاصل کی اور سندھ کا مشہور ساز یکتارہ (طنبورہ) کے ساتھ چپڑی بجانے میں اختصاص حاصل کیا اور یہی ان کی شناخت بنا۔ ان کی لاتعداد آڈیو کیسٹس ریلیز ہوئیں۔ ان کی شخصیت پر سندھی زبان میں فلم جلال چانڈیو بھی بنائی گئی جس میں انہوں نے بھی فن کا مطاہرہ کیا۔[3]

جلال چانڈیو اپنے خاص اسٹائل کی وجہ سے سندھ کے دیہی علاقوں میں تین دہائیوں تک مشہور ترین فنکار رہے۔[2]

اعزازات[ترمیم]

جلال چانڈیو کو شاہ لطیف ایوارڈ اور سچل سرمست ایوارڈ سمیت 50 سے زائد اعزازات سے نوازا گیا۔[3]

وفات[ترمیم]

جلال چانڈیو 10 جنوری، 2001ء کو میں وفات پا گئے۔ وہ پھل،ضلع نوشہرو فیروز، پاکستان میں سپردِ خاک ہوئے۔[2][3]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "سنگر جلال چانڈیو مرحوم کی بایوگرافی". 
  2. ^ ا ب پ لوک موسیقی، رفیق وسان، ڈان نیوز ٹی وی، پاکستان، 1 فروری 2015ء
  3. ^ ا ب پ ت پاکستان کرونیکل: عقیل عباس جعفری، ص 870، ورثہ / فضلی سنز، کراچی، 2010ء
  4. "سنگر جلال چانڈیو مرحوم کی بایوگرافی". 
  5. "سنگر جلال چانڈیو مرحوم کی بایوگرافع".