جمال الدین فالح کیلانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ڈاکٹر سر علامہ جمال الدين فالح كيلاني
ادیب
ولادت1972ء، عراق
اصناف ادبمؤرخ
محقق
معروف تصانیفجغرافیۃ الباز الاشہب


جمال الدین فالح الكیلانی، عراق کے محقق و مؤرخ ہیں۔ قلم کار، ادیب، فلسفی اور مخطوطات کے ماہرین میں سے ہیں۔ فکر اسلامی، تصوف، فلسفہ، عربی کی تاریخ

تصانیف[ترمیم]

جمال الدين فالح كيلاني نے مختلف موضوعات پر کتابیں تصنیف کی ہیں، ان کے چھ ناول اور ایک افسانوں کا مجموعہ شائع ہوا ہے، اس کے علاوہ تصوف، فکر اسلامی، فلسفہ، تراث عربی اور مخطوطات کے موضوع پر کئی کتابیں تصنیف کی ہیں اور متعدد کتابوں کو مدون کرکے شائع کیا ہے۔ مختلف موضوعات پر ان کی مطبوعہ کاوشیں حسب ذیل ہیں:

  • 1- كتاب جغرافیۃ الباز الاشہب : قراءہ ثانیہ فی سیرہ الشیخ عبد القادر الكیلانی وتحقیق محل ولادته وفق منهج البحث العلمی "دراسہ تاریخیہ" مراجعہ وتقدیم الدكتور عماد عبد السلام رؤوف، طبع فی المغرب، والكتاب دراسہ اكادیمیہ اثارت نقاشا كبیرا بین صفوف المثقفین والباحثین، لكون الكتاب نفى ولادہ الإمام الجیلانی فی الطبرستان مؤكدا ولادته فی جیلان العراق قرب المدائن، والكتاب لاقى قبولا جیدا بین اوساط مؤرخ|المؤرخین والباحثین، مما جعل للكتاب شهرہ واسعہ، ولقد طبع اربع طبعات ومترجم إلى عدہ لغات، كا أردو ترجمہ، سید وحید القادری عارفؔ .[1].
  • 2- كتاب الشیخ عبد القادر الكیلانی رؤیہ تاریخیہ معاصرہ، تقدیم الدكتور عماد عبد السلام رؤوف، مؤسسہ مصر مرتضى للكتاب العراقی – بغداد 2011 وله طبعہ ثانیہ فی الولایات المتحدہ 2014.
  • 3- كتاب بهجہ الاسرار ومعدن الانوار فی مناقب الباز الاشهب، دراسہ وتحقیق: تقدیم الدكتور حسین امین شیخ المؤرخین – طبع فی المغرب 2012.
  • 4- كتاب التاریخ الإسلامی رؤیہ معاصرہ، مراجعہ الدكتور حسین علی محفوظ، دار المعرفہ 2009.
  • 5- كتاب من الشك إلى الیقین، دراسہ فی نسب الشیخ عبد القادر الجیلانی، بحث نقدی فی مصادر التاریخ الإسلامی الوسیط، تقدیم الدكتور حسین علی محفوظ، دار الزنبقہ، القاهرہ، 2013.
  • 6- كتاب هكذا تكلم الشیخ عبد القادر الكیلانی، عرض كلام الإمام الجیلانی بصورہ عصریہ، دار العالمیہ، داكا - بنغلادش، 2013.
  • 7- كتاب تحقیق فتوح الغیب، للامام عبد القادر الجیلانی، دار العالمیہ، داكا - بنغلادش، 2013.
  • 8- كتاب التاریخ العثمانی تفسیر جدید، المنظمہ المغربیہ، الرباط، 2013 .
  • 9- كتاب الامام احمد الرفاعی المصلح المجدد، بالاشتراك مع الدكتور زیاد الصمیدعی، المنظمہ المغربیہ، الرباط، 2013.
  • 10-كتاب الرحلات والرحالہ فی التاریخ الإسلامی، دار الزنبقہ، القاهرہ، 2013.
  • 11-كتاب المدخل لتاریخ الفلسفہ الإسلامیہ، دار المصطفى، القاهرہ، 2012.
  • 12- كتاب فلسفہ الإستشراق القاهرہ، 2011 [2].
  • 13-كتاب بدیع الزمان سعید النورسی، قراءہ جدیدہ فی فكره المستنیر، دار الزنبقہ، القاهرہ، 2013 .
  • 14-كتاب دراسات فی التاریخ الاوربی، تقدیم الدكتور كمال مظهر احمد،القاهرہ،2010.
  • 15-كتاب ثورہ الروح، دار الزنبقہ، القاهرہ [3].
  • 16-كتاب خراسان التاریخیہ : فی ضوء المصادر العربیہ الاسلامیہ، دار الزنبقہ، القاهرہ، 2013 .

مطالعہ اور تحقیق[ترمیم]

له عشرات البحوث والدراسات و مئات المقالات المنشورہ فی الصحف و المجلات العراقیہ والعربیہ والعالمیہ منها:

رکنیت[ترمیم]

جمال الدین فالح کئی تاریخ و آثار قدیمہ کی تنظیموں اور گروہوں کے رکن ہیں :

  • رکن اتحاد المؤرخین العرب، بغداد (عرب مؤرخین کی یونین) 1996۔
  • رکن الهیئہ العربیہ لكتابہ تاریخ الانساب (تاریخ انساب لکھنے کے لیے عرب اتھارٹی) 1998۔
  • رکن جمعیہ المؤرخین والاثاریین فی العراق (مورخین اور ماہرین آثار قدیمہ کی ایسوسی ایشن) 1995۔
  • رکن الجمعیہ المغربیہ للتاریح والاثار (تاریخ اور آثار قدیمہ کی مراکش ایسوسی ایشن) 1997۔
  • رکن اتحاد المؤرخین العرب فی القاهرہ (قاہرہ میں عرب مؤرخین کی یونین) 2004 [5].

ان کا فلسفہ[ترمیم]

ڈاکٹر كيلاني مؤرخ رانكوی، جرمن مورخ لیوپولڈ وان رانک، ایک تاریخی واقعہ کی دوبارہ تشکیل کا کام بھی بالکل جگہ لے لی ہے جس میں کہا کے رشتہ دار۔ اور ڈاکٹر ماہا ناجی امام خفاجي، ایک اخبار کے بیان میں ایک مکالمہ انہوں نے کہا کہ جس مسئلہ سمیت مسائل، حقیقی ذرائع کا حوالہ دیتے ہیں اور قدیم ادب کے مسئلے اور مختلف تحقیقات، مسودات کی بازی کا مسئلہ اور ان کو بکھیر کے ساتھ منعقد اس نقطہ نظر پر۔ ڈاکٹر كيلانی مورخین کا نقصان انہیں بجائے سائنسی طریقہ اپنانے کے کلیات اور موجود ہے کے طور مورخ، تاریخ کا مطالعہ اور حالات اور واقعات اور نہیں کے مطابق کرنے کے لیے اس کا اضافہ کر دیتی لیا۔ وہ مداخلت جذبات کی مؤرخین خبردار کیا اور فرقہ وارانہ اور سرگزشت ڈائی کو کنٹرول اور ناول نقد کی تنقید سائنسی غیر جانبدار ... اور پھر، ایک دوسرے کو خبر شریک تمام چہروں سے خطاب ہے کہ کی ثالث انداز ان کے حصوں ہیں چ اور انسانوں کی ایک تاریخ، حکمرانی اور پالیسی، سب میں سیاست پالیسی ہے جس میں کے طور پر تاریخ کے لے وقت اور جگہ انسان کے لیے انسان "سے مختلف ہو جائے گا اور، ایک مؤرخ، ایک مؤرخ مفکر ایک مؤرخ کلاسک نہیں ہو دیکھ کر اور جانچ پڑتال کے بغیر، جمع ناولوں میں پھینک کرنے کے لیے بلاتا ہے، لیکن جو کچھ عراقی تاریخی اسکول کے سرکردہ مورخین کی طرف سے کے لیے کہا جاتا ہے سائنسی بے یقینی اپروچ یادگار آنکھ، رکھتا۔

یقین رکھتا ہے، "کہ تاریخ کل اور آج اور کل کا پتہ نہیں ہے لیکن یہ زندگی کا ایک دریا غیب، ہسٹری پورے معاصر تاریخ کے جس، ہاں ان کی سائنسی ڈویژنوں ملنگ اصطلاح کو جاتا ہے، لیکن ہمارے اور ہمارے خدشات کے ساتھ رہنے کے لیے اور ہم کی کہ قول پر مبنی ہے ہماری پوری زندگی میں سے لیے ہے سرگزشت تجربات کا سب سے بہتر ہے اور کسی بھی سال کے انتخاب یا اپنے آپ میں ایک واقعہ تاریخ کے ادوار یا کسی اور دور کے آغاز کے دور کے اختتام کا تعین کرنے کے لیے کہ، ایسا لگتا ہے، جہاں تک حق و حقیقت سے کیونکہ تاریخی ترقی ہمیشہ ایک بتدریج اور ایک دوسرے سے بجتی اتیویاپی جاری رکھنے اور اہم تاریخ کا حقائق سچل ڈھانچے کہ آئس نوک Zahir کی طرف سے خصوصیات کیا جائے گا پانی اور سطح کے نیچے بڑے پیمانے پر گھر اور اس کی وجہ سے روشنی حال اور مستقبل کو دیکھنے کے لیے ماضی کو منور ہے، یہ گہرائیوں میں کودو اور تاریخ تہذیب کے لیے ایک انسانی طریقہ ہے کو دریافت کرنا چاہتے ہیں ان لوگوں، ہمارے سیاسی نظام، معاشی، سماجی، مذہبی، سائنسی، گہری ماضی کی نسلوں کی مٹی میں مسلسل کی جڑیں اور فرق ہمارے درمیان اس سے اوپر اور مغرب کے درمیان اور ہم اب بھی ماضی میں رہ رہے ہیں اور وہ ان کے مفادات کو پورا اور موجودہ اور مستقبل میں ان کے رویوں کی حمایت کرنے کی تاریخ کا فائدہ اٹھا رہے ہیں[6]. "

جوائز وتكریمات[ترمیم]

كرم بالعدید من الشهادات التقدیریہ وكتب الشكر والتقدیر، من جهات متعددہ منها:

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ المؤرخ جمال الدین فالح الكیلانی فی المیزان، الدكتورہ مها ناجی الخفاجی،جریدہ البیان،بغداد،2011.
  2. مقالہ " جمال الدین فالح الكیلانی " فی موسوعہ المعرفہ العالمیہ .
  3. « جمال الدین الكیلانی اور إسلامی علوم كی تحقیق (جمال الكیلانی وخدماته فی البحوث العلمیہ الإسلامیہ)» د۔ محمود هاشم قاسمی، مجلہ تحقیقات إسلامی، علی جراه، الهند، ینایر-مارس 2014 م، ص۔ 96.
  4. سیرہ الباحث " جمال الدین فالح الكیلانی "، مكتبہ ای كتاب الالكترونیہ، مرام عباسی .
  5. الباحث فی التراث القادری جمال الدین فالح الكیلانی، احمد بختی الكیلانی، مركز الدراسات القادریہ، الجزائر2011.
  6. إبراهيم خليل العلاف،. "المؤرخ جمال الدين الكيلاني وجهوده في خدمة التاريخ العربي والإسلامي". مدونة الدكتور إبراهيم العلاف
  7. ^ سیرہ الباحث " جمال الدین فالح الكیلانی "، مكتبہ ای كتاب الالكترونیہ، مرام عباسی .

بیرونی روابط[ترمیم]

  • "عراق"۔ کتاب عالمی حقائق۔ سینٹرل انٹیلی جنس ایجنسی۔
  • عراق برائے فروخت۔ یو ٹیوب