جنوبی وزیرستان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
فاٹا کا ضلعی نقشہ

جنوبی وزیرستان پاکستان کا ایک قبائلی علاقہ ہے جس کو جنوبی وزیرستان ایجنسی بھی کہا جاتا ہے۔ اس کا صدرمقام وانا ہے .محسود قبیلہ یہاں کا سب سے بڑا قبیلہ ہے۔ اس کے علاوہ وزیر قبیلہ بھی اہم ہے۔ 1893ء میں جب ایک معاہدے کے تحت افغانستان کا امیر اس علاقے سے دستبردار ہوا تو 1895ء تک یہ علاقہڈیرہ اسماعیل خان اور بنوں کے ڈپٹی کمشنرز کے زیرِ کنٹرول ہوا کرتا تھا۔

موجودہ حالت[ترمیم]

2003ء کے فوجی آپریشن سے قبل یہ پرسکون علاقہ ہوا کرتا تھا تاہم فوجی آپریشن اور تواتر سے ہونے والے ڈرون حملوں کے باعث یہاں امن و امان کی صورت حال نہایت مخدوش رہی ہے۔ کہا جاتا ہے کہ تحریک طالبان پاکستان نے اسی علاقے میں جنم لیا۔ پاکستان کی اکثر کالعدم تنظیموں کا یہ مرکز رہا ہے۔ اکتوبر 2009 میں پاک فوج نے یہاں مبینہ دہشت گردوں کے خلاف آپریشن راہ نجات شروع کیا۔ اب آپریشن ضرب عضب کے بعد یہاں کچھ حالات بہتر ہوئے ہیں -

مزیددیکھیئے[ترمیم]