جنگ میوند

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
Battle of Maiwand
حصہ افغان-برطانوی جنگ
Royal Horse Artillery fleeing from Afghan attack at the Battle of Maiwand.jpg
"Maiwand: Saving the Guns". Royal Horse Artillery withdrawing from Afghan attack at the Battle of Maiwand, painted by Richard Caton Woodville
تاریخ27 جولائی 1880
مقاممیوند, افغانستان
نتیجہ افغان فتح
محارب

Flag of مملکت متحدہ سلطنت برطانیہ

Flag of افغانستان افغانستان
کمانڈر اور رہنما
Flag of مملکت متحدہ George Burrows Ayub Khan
طاقت
2,476 British/Indian troops 25,000 Afghan warriors
اموات اور نقصانات
969 قتل
177 زخمی[1]
دو سے تین ہزار تک قتل اور زخمی[1]

جنگ میوند یا میوند کی جنگ ایک بڑی جنگ ہوئی 27 جولائی 1880 ء کی، جس میں ایک طرف افغان پٹھان افواج تھیں جن کی نگرانی جناب ایوب خان افغانی کر رہے تھے تو دوسری طرف برطانوی افواج اور ہندوستانی افواج تھیں۔ لیکن آخرکار اس میں پشتنوں کی فتح ہوئی۔ یہ جنگ، افغان-برطانوی جنگ (دوم) کا حصہ ہے۔

اس جنگ میں سب سے اہم کردار ملالہ میوند نے نبہایا جن کی بدولت پشتونوں میں ایک جزبہ برپا ہو گیا اور اس جنگ میں فتح یاب ہوئے۔ اس جنگ میں افغان افواج کو 2500 سے زائد فوجیوں سے ہاتھ دھونا پڑھا اور برطانیہ کو 100 تک کے فوجیوں سے۔ یہ جنگ وسط میں برطانیہ افواج کے کامیابی کے طرف تھا اور وہ فاتح ہونے ہی والے تھے لیکن ملالہ میوند نے اپنا دوپٹہ لہرایا اور افغان فوج کو حوصلہ دیا جس کے بدولت ہاری ہوئی جنگ واپس پٹھانوں نے جیت لی۔

مقام ،حالات اور نتیجہ

یہ جنگ میوند کے مقام پر ہوا ۔

حوالہ جات

  1. ^ ا ب Brian. Robson (2007)۔ The Road to Kabul: The Second Afghan War 1878-1881۔ Stroud: Spellmount۔ صفحہ 239۔ آئی ایس بی این 978-1-86227-416-7۔ 

مزید دیکھیے