جنگ کلنگ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جنگ کلنگ
تاریخت 262 – تقریباً 261 BCE
مقامسلطنت کلنگ، ہند
نتیجہ موریہ کی جیت
سرحدی
تبدیلیاں
سلطنت کلنگ پر سلطنت موریہ کا قبضہ۔
محارب
سلطنت موریہ سلطنت کلنگ
کمانڈر اور رہنما
اشوک اعظم کلنگ راج[کون؟]
طاقت
کل400,000 60,000 سپاہی،[1]
10,000 گھوڑے [2]700 ہاتھی[1]
ہلاکتیں اور نقصانات
100,000 200,000+ (خد اشوک اعظم کے مطتبق)[3][4]
(شہری)

جنگِ کلنگ اشوک اعظم کی سلطنت موریہ کی فوج اور سلطنت کلنگ کی فوج کے درمیان ہوئی تھی، جو دنیا کی سب سے بڑی خون خرابے والی جنگوں میں سے ایک ہے۔ جنگ کے بعد اشوکِ اعظم نے بدھ مت کو اپنا لیا تھا حالانکہ انہوں نے کلنگ پر قبضہ نہیں کر پائے۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب پلینیوس (77 CE), Natural History VI, 22.1, quoting Megasthenes (3rd century BCE), Indika, Fragm. LVI.
  2. Kaushik Roy۔ Military Manpower, Armies and Warfare in South Asia۔ Google Books۔ Routledge, 2015۔ مورخہ 25 دسمبر 2018 کو اصل سے آرکائیو شدہ۔ اخذ شدہ بتاریخ 17 اگست 2015۔
  3. Ashoka (سانچہ:Reign BCE), Edicts of Ashoka, Major Rock Edict 13.
  4. Radhakumud Mookerji (1988). Chandragupta Maurya and His Times. Motilal Banarsidass Publ. ISBN 81-208-0405-8.
Midori Extension.svg یہ ایک نامکمل مضمون ہے۔ آپ اس میں اضافہ کر کے ویکیپیڈیا کی مدد کر سکتے ہیں۔