جوزف ہلس ملر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں


جوزف ہلس ملر
J. Hillis Miller
جوزف ہلس ملر

معلومات شخصیت
پیدائش 5 مارچ 1928 (89 سال)[1]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں تاریخ پیدائش (P569) ویکی ڈیٹا پر
نیوپورٹ نیوز، ورجینیا  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں مقام پیدائش (P19) ویکی ڈیٹا پر
قومیت American
زوجہ Married
اولاد 3 بچے
رشتے دار J. Hillis Miller, Sr. (باپ)
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ ہارورڈ
پیشہ Literary critic
تصنیفی زبان انگریزی[2]  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں بولی، لکھی اور دستخط کی گئیں زبانیں (P1412) ویکی ڈیٹا پر
آجر ییل یونیورسٹی  خاصیت کی حیثیت میں تبدیلی کریں نوکری (P108) ویکی ڈیٹا پر

جوزف ہلس ملر جونیر(Joseph Hillis Miller, Jr) ۔ امریکی ادبی نقاد، ادبی نظریہ دان، ماہر تعلیم، 5، مئی 1928 میں نیوپورٹ نیوز ، ورجینیا میں پیدا ھوئے. ان کے والدجے ہلس ملر، سینئر، ایک بیبٹسٹ کلیسا میں مبلّغ تھے اور فلوریڈا یونیورسٹی کے صدر اور یونیورسٹی کے پروفیسر اور ایڈمنسٹریٹر بھی رھے .جوزف ہلس ملر ، جونیر نے اوبراین کالج سے 1948 میں بی۔اے کی سند لی۔ 1949 میں ہارورڈ یونیورسٹی سےایم اے اور 1952 میں پی ایچ ڈی کی ڈگری لی۔ . ملر کے تین بچے ہیں ن۔ جدید ادبی نظریات کی تفھیم و تشریح میں فعال کردار ادا کیا ہے۔ ان کی تنقیدی ہنر مندی اور فطانت سے جدید ادبی افق پر ادبی نطرئیے اور انتقادات کی مباحث نے نئی کروٹیں لین ۔ ان کے خیال میں "ردتشکیل" کے تحت متن کے موضوع پر تفصیل سے بحث کی جاتی ہے۔ متن کے موضوع میں سطحی اور گہری کثیر الجحت معنویت پوشیدہ ھوتی ہے اور کئی ذیلی ساختوں میں منقسم ھوتی ہے اور معنویت کو سلجھایا جاتا ہے۔ ملر نے " بدیعیاتی اصولوں" پر اپنا اچھوتا نظریہ پیش کیا ہے۔ ان کی تحریرون میں نئی لفظیات اور غیر مانوس اصطلاحات کی بھر مار ھوتی ہے۔ جس کے سبب قاری الجھنوں کا شکار ھوجاتا ہے اور وہ اسے سمجھ نہیں پاتے۔ ان کے تنقیدی ادبی نظریات درسی یا نصابی نوعیت کے زیادہ لگتے ہیں۔ اس موضوع پر اردو کے نقاد اور ادبی نظریہ دان احمد سھیل کی کتاب۔۔" ساختیات، تاریخ، نظریہ اور تنقید"، 1999 میں صراحت سے لکھا گیا ہے۔ جوزف ہلس ملر نے 29 کتابیں لکھی ہیں :-

تصانیف[ترمیم]

  • (1958) Charles Dickens: The World of His Novels
  • (1963) The Disappearance of God: Five Nineteenth-Century Writers
  • (1965) Poets of Reality: Six Twentieth-Century Writers
  • (1968) The Form of Victorian Fiction: Thackeray, Dickens, Trollope, George Eliot, Meredith, and Hardy
  • (1970) Thomas Hardy, Distance and Desire
  • (1971) Charles Dickens and George Cruikshank
  • (1982) Fiction and Repetition: Seven English Novels
  • (1985) The Linguistic Moment: from Wordsworth to Stevens
  • (1985) The Lesson of Paul de Man
  • (1987) The Ethics of Reading: Kant, de Man, Eliot, Trollope, James, and Benjamin
  • (1990) Versions of Pygmalion
  • (1990) Victorian Subjects
  • (1990) Tropes, Parables, Performatives: Essays on Twentieth Century Literature
  • (1991) Theory Now and Then
  • (1991) Hawthorne & History: Defacing It
  • (1992) Ariadne's Thread: Story Lines
  • (1992) Illustration
  • (1995) Topographies
  • (1998) Reading Narrative
  • (1999) Black Holes
  • (2001) Others
  • (2001) Speech Acts in Literature
  • (2002) On Literature
  • (2005) The J. Hillis Miller Reader
  • (2005) Literature as Conduct: Speech Acts in Henry James
  • (2009) The Medium is the Maker: Browning, Freud, Derrida, and the New Telepathic Ecotechnologies
  • (2009) For Derrida
  • (2011) The Conflagration of Community: Fiction Before and After Auschwitz
  • (2012) Reading for Our Time: Adam Bede and Middlemarch Revisited

تحریر: احمد سہیل

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ایس این اے سی آرک آئی ڈی: http://snaccooperative.org/ark:/99166/w6qg28vf — بنام: J. Hillis Miller — اخذ شدہ بتاریخ: 9 اکتوبر 2017
  2. http://data.bnf.fr/ark:/12148/cb12034368g — اخذ شدہ بتاریخ: 10 اکتوبر 2015 — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ

بیرونی روابط[ترمیم]

آرکائیو مجموعے[ترمیم]

دیگر[ترمیم]