جھنگوچی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

جھنگوچی (انگریزی میں جھنگوچی) جھنگ میں بولی جانے والی زبان ہے جو پنجابی زبان کا قدیم ترین اور خالص تریں لہجہ ہے اور ایک بڑے علاقہ میں بولی جاتی ہے جو خانیوال سے شروع ہوتا ہوا دریاۓ راوی اور دریاۓ چناب کے دونوں اطراف سے ضلع گوجرانوالہ تک پھیلا ہوا ہے۔ اور اس تمام علاقہ میں ایک ہی قسم کے رسوم و رواج ہیں۔ جھنگوچی لہجے اور عظیم رسوم کا یہ علاقہ کئی پہلوؤں‎ سے مشہور ہے، جس نے ہیر رانجھا اور مرزا صاحبہ کی رومانوی داستانوں کو جنم دیا۔

دوہڑہ، ماہیا اور ڈھولا جھنگوچی زبان کی مشہور اصناف سخن ہیں۔

جھنگوچی زبان کے مشہور ترین شعرا میں مہر محمد ریاض سیال، یاسین، اشفاق، قمر جتوئی،ہاشمی اور باوا مظہر بخاری کے نام قابل ذکر ہیں۔

ادبی کلاسیک[ترمیم]

  • ہیر دمودر
  • کمال کہانی

جھنگوچی دوہڑے[ترمیم]

اٹھی کھول کتاب تے دس قاضی ادوں وقت نماز ادوں یار آ گئے

ادوں پاک امام اذان چا دتی گھنڈ کھول ڈٹھا دلدار آ گئے

کی کرئیے فرض عظیم ہن دوہیں میری سوچ توں پانی تار آ گئے

ابرار نماز قضا پڑھسی، اٹھی ادب کرو سرکار آ گئے

(ابرار)

چھڈ بلندی نوں اے شہنشاہ جمال میرا مٹـّی تے مٹی دا چن ویکھ‍ ونج

اوہدی مٹھی مٹھی گفتگو آکے سن بھولا بھالا جیہا بانک پن ویکھ‍ ونج

توں فقط رات کالی دا ہیں آسرا اوہدا دینہہ رات دونہواں اتے راج ہے

جیہڑا مٹی دا ہو کے وی بے داغ ہے باوے مظہر ہوراں دا سجن ویکھ‍ ونج

(باوا مظہر بخاری)

ڈاہڈا خوش ہاموں چوداں اگست آلے دینہہ میرے لوڈے سجن میرے سنگ ہوونائے

ہوسی سرخی تے پوڈر رخساراں اتے وکھرا ہر ہک نظارے دا رنگ ہوونائے

توڑ ونج کے میں غمگین گھر آونائے سیکھ‍ تے میری ہک ہک امنگ ہوونائے

پتہ کوئی ناہ مینوں بھیڑے مقسوم دا ڈھولے رنگ پور تے میں کملے جھنگ ہوونائے

مزید پڑھیئے[ترمیم]

خارجی ربط[ترمیم]