جین میک ناٹن

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جین میک ناٹن
شخصی معلومات
پیدائش 10 اپریل 1936 (86 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جوہانسبرگ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of South Africa.svg جنوبی افریقا  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
ٹیم
Flag of South Africa.svg جنوبی افریقاقومی کرکٹ ٹیم (1960–1961)  ویکی ڈیٹا پر (P54) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ کرکٹ کھلاڑی  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھیل کرکٹ  ویکی ڈیٹا پر (P641) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھیل کا ملک Flag of South Africa.svg جنوبی افریقا  ویکی ڈیٹا پر (P1532) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

جین فے فیلڈ ( وسطی نام میک ناٹن ; پیدائش 10 اپریل 1936ء) ایک جنوبی افریقی سابق کرکٹ کھلاڑی ہیں جو دائیں ہاتھ کے میڈیم فاسٹ باؤلر کے طور پر کھیلتی تھیں۔ وہ 1960ء اور 1961ء میں جنوبی افریقا قومی خواتین کرکٹ ٹیم کے لیے تین ٹیسٹ میچوں میں نظر آئیں، یہ تمام میچ انگلینڈ کے خلاف کھیلے گئے تھے۔ وہ ٹیسٹ میچ میں پانچ وکٹیں لینے والی پہلی جنوبی افریقی خاتون تھیں۔ انھوں نے جنوبی ٹرانسوال کے لیے ڈومیسٹک کرکٹ کھیلی۔ [1][2] سہارا اسٹیڈیم کنگسمیڈ، ڈربن میں تیسرے ٹیسٹ کے لیے ٹیم میں واپسی ہوئی، میک ناٹن نے اپنی پہلی اننگز میں آٹھ میں سے چھ انگلش وکٹیں گرانے کا کارنامہ سرانجام دیا تھا، اور وہ ٹیسٹ میں پانچ وکٹیں لینے والی پہلی جنوبی افریقی خاتون بن گئیں۔

کرکٹ[ترمیم]

میک جنوبی ٹرانسوال خواتین کی کرکٹ ٹیم کا حصہ تھیں، میک ناٹن نے اپنے کلب کی طرف سے 1960–61ء میں انگلینڈ کے دورے میں پہلی بار شرکت کی تھی۔ [3] پانچویں نمبر پر بیٹنگ کرتے ہوئے انھوں نے 22 منٹ میں 15 رنز بنائے۔ [4] انگلش ٹیم کی اننگز میں، انھوں نے صرف چار اوور پھینکے، کوئی وکٹ نہیں لی اور 22 رنز دیے۔ [4]

جنوبی افریقا کے پہلے ٹیسٹ میچ میں کھیلتے ہوئے انھوں نے ایک جوڑی بنائی، [5] 1949ء میں انگلینڈ کی کھلاڑی/منیجر نیتا رائنبرگ کے بعد، [6] میچ کھیلنے کے بعد وہ صرف دوسری خاتون بنیں۔ [7] وہ مجموعی طور پر نو اوورز کراتے ہوئے میچ میں بھی کوغی وکٹ نی لی سکیں۔ [5] وہ دوسرے ٹیسٹ میں نہیں کھیلیں، [3] اور ایک ٹور میچ کے دوران میں انگلینڈ کے خلاف جنوبی افریقی الیون خواتین کے لیے اپنی دو اننگز میں سے ہر ایک میں ایک رن بنایا۔ [8]

سہارا اسٹیڈیم کنگسمیڈ، ڈربن میں تیسرے ٹیسٹ کے لیے ٹیم میں واپسی ہوئی، میک ناٹن نے اپنی پہلی اننگز میں آٹھ میں سے چھ انگلش وکٹیں گرانے کا کارنامہ سرانجام دیا تھا، [9] اور وہ ٹیسٹ میں پانچ وکٹیں لینے والی پہلی جنوبی افریقی خاتون بن گئیں۔[10] ان کی کامیابی کے باوجود انگلینڈ نے یہ میچ آٹھ وکٹوں سے جیت لیا۔ [9] سیریز کے آخری ٹیسٹ میں، انھوں نے اپنی ٹیم کو پہلی اننگز کی برتری دلانے میں مدد کے لیے 28 رنز بنا کر ٹیسٹ کرکٹ میں اپنا سب سے بڑا سکور بنایا، اور یوون وین مینٹز کی مدد کی جب وہ اپنی سنچری بنا سکیں۔ [11]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Player Profile: Jean McNaughton". ESPNcricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 6 مارچ 2022. 
  2. "Player Profile: Jean McNaughton". کرکٹ آرکیو. اخذ شدہ بتاریخ 6 مارچ 2022. 
  3. ^ ا ب "Other matches played by Jean McNaughton (5)". کرکٹ آرکیو. 25 اکتوبر 2012 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  4. ^ ا ب "Southern Transvaal Women v England Women". کرکٹ آرکیو. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  5. ^ ا ب "South Africa Women v England Women". کرکٹ آرکیو. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  6. "Obituaries: Netta Rheinberg". روزنامہ ٹیلی گراف. 2006-07-07. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  7. "Records / Women's Test matches / Batting records / Pair on debut". ای ایس پی این کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  8. "South African XI Women v England Women". کرکٹ آرکیو. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  9. ^ ا ب "South Africa Women v England Women". کرکٹ آرکیو. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  10. "Records / South Africa Women / Women's Test matches / Best bowling figures in an innings". ای ایس پی این کرک انفو. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009. 
  11. "South Africa Women v England Women". کرکٹ آرکیو. اخذ شدہ بتاریخ 17 نومبر 2009.