جے آر ڈی ٹاٹا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
جے آر ڈی ٹاٹا
J.R.D. Tata (1955).jpg
Tata at an event in 1955

معلومات شخصیت
پیدائش 29 جولائی 1904(1904-07-29)
پیرس، فرانس
وفات 29 نومبر 1993(1993-11-29) (عمر  89 سال)
جنیوا، سویٹذرلینڈ
شہریت French (1904–1928) بھارتی قوم (1929–1993)
شوہر Thelma Vicaji Tata
والدین Ratanji Dadabhoy Tata
Suzanne "Sooni" Brière
عملی زندگی
پیشہ Businessman
کل دولت £ 200 million (1990)[1]
اعزازات
بھارت رتن

جے آر ڈی ٹاٹا (انگریزی: J. R. D. Tata) (29 جولائی 1904ء-29 نومبر 1993ء) بھارت کے خلاباز، تاجر اور ٹاٹا گروپ کے صدر نشین اور ٹاٹا سنز کے شراکت دار تھے۔ ان کا پورا نام جہانگیر رتن جی دادابھوئے ٹاٹا ہے

وہ بھارت کے مشہور تجارتی خاندان ٹاٹا خاندان کے چشم و شراغ تھے۔ والد رتن جی دادا بھوئے ٹاٹا بڑے تاجر اور والدہ سوزان بریری تھیں۔ ان کی والدہ بھارت میں کار ڈرائیو کرنے والی پہلی خاتون تھیں۔ 1929ء میں جے آر ڈی ٹاٹا وہ پہلے بھارتی پائلٹ بنے جنہیں لائسنس دیا گیا۔ وہ ٹاٹا کنسلٹینسی سروسز، ٹاٹا موٹرز، ٹائٹن انڈسٹریز، ٹاٹا سالٹ]]، وولٹاس اور ایئر انڈیا سمیت ٹاٹا گروپ کی متعدد کمپنیوں کے بانی ہیں۔ 1983ء میں انہیں فرانس میں لیجن آف آنر سے نوازا گیا۔ 1955ء میں حکومت ہند نے پدم وبھوشن اور 1992ء میں بھارت رتن سے نوازا۔[2]

ابتدائی زندگی[ترمیم]

جے آر ڈی کی ولادت 29 جولائی 1904ء کو ایک پارسی خاندان میں ہوئی۔ ان کا نام جہانگیر رکھا گیا۔ وہ مشہور تاجر رتن جی دادابھوئے ٹاٹا اور ان کی فرانسیسی اہلیہ سوزان برین کی دوسری اولاد تھے۔[3] ان کے والد بھارت کے مایہ ناز تاجر اور صنعت کار [[جمسیٹ جی کے کزن تھے۔ ان کی بہن سیالا کی شادی دنشا مانک جی پیٹی سے ہوئی۔ ان کی سالی مریم جناح، جن کا اصلی نام رتن بائی پیٹی]] تھا کی شادی محمد علی جناح سے ہوئی جو بعد میں پاکستان کے بانی بنے۔ دونوں کی بیٹی دینا واڈیا کی شادی مشہور تاجر نیول واڈیا سے ہوئی۔ چونکہ ان کی والدہ فرانسیسی تھی لہذا ان کے ابتدائی ایام فرانس میں ہی گذرے اور فرانسیسی زبان ان کی مادری زبان بنی۔ وہ دوسری جنگ عظیم کے دوران میں سپاہی ریجیمینٹ میں کا حصہ تھے۔[4][5] یہ پوری ریجیمینٹ مراکش میں ایک مہم کے دوران میں ہلاک ہو گئی مگر اس سے قبل ہی وہ ریجیمینٹ سے الگ ہو چکے تھے۔[4][6]

کیرئر[ترمیم]

جہانگیر نے اپنا کیرئر بحیثیت پائلٹ شروع کیا۔ ایک بار سفر کے دوران میں اپنے دوست کے والد لوئس بلیریٹ سے متاثر ہو کر انہوں اس پیشہ کو اختیار کیا تھا۔ 10 فروری 1929ء کو پالئٹ کا لائسنس حاصل کرنے والے وہ پہلے بھارتی بنے۔ بعد میں انہوں نے بابائے بھارتی فضائیہ کہا جانے لگا۔ انہوں نے بھارت کی قومی ایئر لائن کی بنیاد رکھی اور اپنے دوست نیول ونٹسینٹ کے ساتھ مل کر ٹاٹا ایئر لائنز کو بعد میں ایئر انڈیا کہلائی، کو شروع کیا۔

اعزازات[ترمیم]

1983ء میں انہیں فرانس میں لیجن آف آنر سے نوازا گیا۔ 1955ء میں حکومت ہند نے پدم وبھوشن اور 1992ء میں بھارت رتن سے نوازا۔ 1948ء میں انہیں بھارتی فضائیہ کی طرف سے اعزازی گروپ کپتان کا خطاب دیا گیا۔ 4 اکتوبر 1966ء کو انہیں ایئر کمانڈو سے بریگیڈیئر بنایا گیا۔[7] بعد ازاں ایئر وائس مارشل بنایا گیا۔

وفات اور وراثت[ترمیم]

ان کی وفات جنیوا، سویٹذرلینڈ میں 29 نومبر 1993ء کو ہوئی۔ اس وقت وہ 89 برس کے تھے۔ انہیں کڈنی میں انفیکشن ہو گیا تھا۔[8] ان کی وفات پر بھارتی پارلیمان کا اجلاس ملتوی کر دیا گیا تھا حالانکہ یہ اعزاز صرف ارکان پارلیمان کو ہی ملتا ہے۔ انہیں پیرس میں دفنایا گیا۔

2012ء میں آؤٹ لک کے عظیم ترین بھارتی پول میں چھٹا سب سے عظیم بھارتی مانا گیا۔[9]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Shyam Swaraj: "Happy Birthday J.R.D Tata: I The Father Of Indian Aviation"، dazeinfo.com، جولائی 29, 2015. Retrieved 18 جولائی 2017.
  2. A report in Vohuman.org Amalsad, Meher Dadabhoy. "Vohuman". اخذ شدہ بتاریخ 11 اپریل 2007. 
  3. "J.R.D. TATA". Tata Central Archives. 29 اکتوبر 2013 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 7 اکتوبر 2015. 
  4. ^ ا ب Pai 2004, p. 9.
  5. "29 نومبر 1993.۔۔". unitedstatesofindia.com. 13 اپریل 2014 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2014. 
  6. Shafali. "Biography of jrd tata-Essay-Shafali". studymode.com. اخذ شدہ بتاریخ 10 اپریل 2014. 
  7. "Part I-Section 4: Ministry of Defence (Air Branch)". The Gazette of India. 15 اکتوبر 1966. صفحہ 634. 
  8. Pai 2004, p. 32.
  9. Sengupta, Uttan; "The measure of a Man"; Outlook India، 20 Aug 2012. Retrieved 17 Jan 2019.

بیرونی روابط[ترمیم]