حامد علی بیلا

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

صوفیانہ کلام اور لوک گائیکی میں منفرد پہچان رکھنے والے درویش صفت گلوکار

حامد علی بیلا کچھ اس طرح ڈوب کر کافیاں ، غزلیں اور گیت گاتے کہ سننے والوں پر سحر طاری ہو جاتا ۔ مادھو لال حسین کا کلام تو حامد علی بیلا کی پہچان بن گیا۔

ان کی گائی ہوئی کافی ’’ مائیں نی میں کنوں آکھاں درد وچھوڑے دا ہال نی ‘‘آج بھی انکی پہچان ہے ۔

پٹیالہ گھرانے کی یہ آواز سب سے پہلے ریڈیو پاکستان سے گونجی اور پھر شاہ حسین ، غلام فرید اور محمد بخش کی کافیاں گاتے گاتے یہ فقیرمنش فنکار،فن اور شہرت کی بلندیاں پاتا گیا۔مسحور کن لوک اور صوفیانہ گائیکی کی بدولت پرائیڈ آف پرفارمنس سمیت کئی ایوارڈ پائے مگر تنگ دستی مقدر بنی رہی۔اندرون لاہور ایک کمرے کے مکان میں عمر گزار دینے والا یہ عظیم فنکار نے اسی کسمپرسی میں 27 جون 2001ء کو وفات پائی،

حوالہ جات[ترمیم]

حوالہ جات