Jump to content

"سلسلہ احسنیہ مجددیہ" کے نسخوں کے درمیان فرق

(نیا صفحہ: سلسلہ احسنیہ مجددیہ کے مؤسس شیخ سید آدم بنوری ہیں جو احمد سرہندی|شیخ احمد سرہندی...)
(ٹیگ: القاب)
 
(ٹیگ: القاب)
سلسلۂ احسنیہ مجددیہ کے مشائخ میں [[محمد سلطان بلیاوی|شیخ محمد سلطان {{ع}}بلیاوی]]{{ڑ}}، [[نور محمد پشاوری]]، [[حاجی عبد اللہ بہادر کوٹی]]، [[شاہ علم اللہ|شاہ علم اللہ حسنی رائے بریلوی]]، [[محمد شریف متقی شاہ آبادی]]، [[حاجی عبد اللہ سلطان پوری]]، [[عبد النبی شامی نقشبندی]]، [[عبد الاحد بنوری|شیخ عبد الاحد بنوری]] ـنبیرۂ [[سید آدم بنوری]])، شیخ [[فتح محمد انبالوی]]، سید عبد ا للہ محدث اکبر آبادی، شیخ محمود رسن تاب خورجوی، شاہ ولی اللہ دہلوی، شاہ عبد العزیز دہلوی،شاہ محمد عاشق پھلتی، سید ابو سعید حسنی رائے بریلوی، سید محمد واضح حسنی محدث، سید احمد بریلوی، شیخ محمد ولی کاکوروی، سید محمد جی بن سید شاہ علم اللہ، شاہ [[سید محمد عدل رائے بریلوی]]، [[محمد کاظم علی قلندرکاکوروی|شاہ محمد کاظم علی قلندرکاکوروی]] ، [[ازہار الحق فرنگی محلی]]، [[ذو الفقار علی دیوی]]، [[عبد الکریم جوراسی]] کے نام نمایاں ہیں۔
== سلسلہ احسنیہ پر کتابیں ==
سلسلہ احسنیہ کے طریق کے بیان میں بہت سی کتابیں لکھی گئیں، جن میں مندرجہ ذیل کتب زیادہ مشہور ہیں:<br />
مجموعۃ الاسرار مکتوبات شریف حضرت شیخ [[عبد النبی شامی نقشبندی،نقشبندی]]، شائع کردہ: حضرت شیخ عبد النبی شامی ٹرسٹ، لاہور، اپریل 1986ء۔<br />
سر الفقر از شیخ غلام رسول نقشبندی – مخطوطہ<ref>[[محمد اقبال مجددی]] : تذکرہ علماء و مشائخ پاکستان و ہند، پروگریسیو بکس، لاہور، 2013ء، جلد 2 صفحہ 986۔</ref>
 
== مزید دیکھیں ==
888

ترامیم