"لسانی ثنویت" کے نسخوں کے درمیان فرق

Jump to navigation Jump to search
1 بائٹ کا ازالہ ،  2 سال پہلے
م
درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر + ویکائی
م (خودکار: خودکار درستی املا ← کیے، اس ک\1، سے، سے، ابتدا، صورت حال)
م (درستی املا بمطابق فہرست املا پڑتالگر + ویکائی)
'''لسانی ثنویت (Diglossia)''' ایک ایسی کیفیت کا نام ہے کہ جب کسی [[معاشرے]] میں اس کی زبان یا بولی دو (یا ایک سے زیادہ) رتبات یا درجات میں تقسیم ہوچکی ہو یا یوں بھی کہ سکتے ہیں کہ اس معاشرے کے افراد میں اپنی زبان کے سلسلے میں تفریق پائی جاتی ہے ،ہے، اس تفریق کو [[علم]] [[لسانیات]] میں لسانی ثنویت اور یا پھر انشقاق اللسان (Diglossia) بھی کہا جاتا ہے۔ اسی مفہوم کو آسان الفاظ میں یوں بھی کہا جاسکتا ہے کہ اگر کسی معاشرے میں عوام اور خواص کی گفتار الگ الگ استعمال ہو تو اس معاشرے (کی متعلقہ زبان) کے بارے میں کہا جاسکتا ہے کہ وہ ثنائی اللسان کی کیفیت سے دوچار ہے۔ عام طور پر کسی زبان میں اس قسم کی ثنائی اللسانی یا دوزبانی کی وجہ سے اس میں اعلی{{ا}} اور ادنی{{ا}} کی تفریق نمایاں ہونے لگتی ہے اور یہ عمل صدیوں پر محیط ہو سکتا ہے؛ اعلی{{ا}} اور ادنی{{ا}} کی اس تفریق کے پس منظر میں ایک اہم کردار، امرا اور غربا کے درمیان فاصلے بھی ہوتا ہے جو عمومی طور پر تعلیمیافتہ اور غیرتعلیمیافتہ طبقات سے منسلک ہوتا ہے۔ اس دوزبانی کو طوالت بخشنے والی ایک وجہ اس صورت حال سے مستقل صرف نظر کرتے رہنے یا اس کو نظر انداز کرتے رہنے کی آتی ہے؛ نظراندازی کا یہ سلسلہ دانستہ یا نادانستہ چلتا رہتا ہے کیونکہ اس کا براہ راست تعلق اس معاشرے میں موجود شرح خواندگی سے ہوتا ہے؛ دنیا کا کوئی بھی معاشرہ ایسا نہیں کہ جس کی زبان میں لسانی ثنویت نا پائی جاتی ہو کیونکہ عام طور پر گھریلو زبان بے تکلفانہ ہونے کی وجہ سے ہی لسانی ثنویت کا آغاز ہوجاتا ہے۔ وہ معاشرے کہ جن میں شرح خواندگی زیادہ ہوجاتی ہے ان میں لسانی ثنویت کی کیفیت موجود ہوتے ہوئے بھی کسی بڑے انشقاق یا تفریق کا باعث نہیں بنتی؛ اس کی بہترین مثال میں انگریزی اور جاپانی وغیرہ آجاتی ہیں۔
==معاشرتی لسانیات==
معاشرتی لسانیات (Sociolinguistics) میں لسانی ثنویت ایک اہم تصور ہے جس کی مدد سے معاشرے کے افراد میں ہونے والے تبادلۂ معلومات یا خیالات (جس کو [[رمز (ابلاغ)|رموز]] کہا جاتا ہے) اور ان کے مابین روابط کی معاشرتی ساخت کے مطالعے میں مدد ملتی ہے۔

فہرست رہنمائی