"دہشت گردی" کے نسخوں کے درمیان فرق

Jump to navigation Jump to search
4,323 بائٹ کا اضافہ ،  1 سال پہلے
م (خودکار: درستی املا ← کے، اور، ہو گئے، دار الحکومت، کر دیا؛ تزئینی تبدیلیاں)
 
* 28 مئی 2009 کو جمعرات کے روز دھماکوں کے یکے بعد دیگرے خیبر پختون خواہ میں ہلاکتیں ہوگئیں ، پانچ پولیس اہلکاروں سمیت 13 افراد ہلاک اور 90 سے زائد زخمی ہو گئے۔ پشاور میں تین دھماکے ہوئے ، ان میں سے ایک خودکش حملہ آور نے پولیس چوکی کو نشانہ بنایا اور ایک خودکش حملہ آور نے ڈیرہ اسماعیل خان میں سیکیورٹی چوکی پر حملہ کیا۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/May_2009_Dera_Ismail_Khan_bombings</ref>
 
* 5 جون 2009 کو اپر دیر ضلع کے حیاگئی شرقئی گاؤں میں ایک خودکش بمبار نے مسجد کے باہر خود کو دھماکے سے اڑا لیا جب جمعہ کی نماز کے دوران 40 افراد ہلاک اور 70 زخمی ہوگئے۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/Terrorist_incidents_in_Pakistan_in_2009</ref>
 
* 6 جون 2009 کو ہفتہ کے روز اسلام آباد میں پولیس ہیلپ لائن یونٹ ، ریسکیو 15 کے خلاف ایک نوجوان کے خودکش حملے کے بعد دو پولیس اہلکار ہلاک ہوگئے۔ کم از کم چار دیگر پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/Terrorist_incidents_in_Pakistan_in_2009</ref>
 
* 8 جون 2009 کو کراچی میں سیاسی دھڑوں کے مابین دشمنیوں سے پھوٹ پڑنے والی تشدد کی لہر بدستور پھیل رہی ، کیونکہ پیر کو مزید 12 افراد ٹارگٹ کلنگ کا شکار ہوگئے۔ اس طرح ، جون کے پہلے ہفتے کے دوران ٹارگٹ کلنگ کا نشانہ بننے والے سیاسی کارکنوں کی تعداد 35 ہوگئی۔ بیشتر متاثرین ایم کیو ایم (الطاف) اور ایم کیو ایم (حققی) دھڑوں کی خونی دشمنی کا شکار ہوگئے تھے۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/Terrorist_incidents_in_Pakistan_in_2009</ref>
 
* 9 جون 2009 کو پشاور میں منگل کے روز ایک بڑے اسٹار پرل کانٹینینٹل ہوٹل میں ٹرک میں موجود بم دھماکے سے پھٹ گیا جس کے نتیجے میں 11 افراد جاں بحق اور 60 سے زیادہ زخمی ہوگئے۔ حملہ آور رات تقریباً 30۔10 بجے دو گاڑیوں پر مشتمل کمپاؤنڈ میں داخل ہوئے اور اہک بوتل سے سیکیورٹی گارڈز پر اسپرے کیا۔ ہوٹل کا گیٹ اور دوسرے گارڈ کو کو ہوٹل کی پارکنگ میں اڑا دیا گیا۔ بعد میں ہلاکتوں کی تعداد 17 ہوگئی۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/Terrorist_incidents_in_Pakistan_in_2009</ref>
* 12 جون 2009 کو گڑھی شاہو کے علاقے علامہ اقبال روڈ پر جامعہ نعیمیہ مدرسہ میں خودکش حملہ آور نے خود کو دھماکے سے اڑا لیا جس سے چھ افراد ہلاک اور پانچ زخمی ہونے کے ساتھ ، ایک معروف سنی بریلوی عالم دین سرفراز احمد نعیمی کو قتل کردیا گیا نماز جمعہ کے فورا بعد ہی لاہور۔ نوشہرہ میں ، گرینڈ ٹرنک روڈ پر واقع کنٹونمنٹ کے علاقے میں نماز جمعہ کے دوران ایک خودکش بمبار نے بارود سے بھری گاڑی کو مسجد میں گھسادیا جب کہ پانچ نمازی ہلاک اور 105 دیگر زخمی ہوگئے۔ نوشہرہ حملہ تنازعہ زون سے باہر فوج پر ایسا سولہواں حملہ تھا اور نوشہرہ میں دوسرا حملہ۔ بعدازاں تحریک طالبان پاکستان نے جمعہ کے روز پشاور ، نوشہرہ اور لاہور میں تین خود کش حملوں کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے کہا ہے کہ جلد ہی اس طرح کے اور حملے بھی کئے جائیں گے۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/Terrorist_incidents_in_Pakistan_in_2009</ref>
 
* 14 جون 2009 کو اتوار کے روز ڈیرہ اسماعیل خان میں مصروف بازار میں زوردار دھماکے کے نتیجے میں نو افراد ہلاک اور 40 سے زیادہ زخمی ہوگئے۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/Terrorist_incidents_in_Pakistan_in_2009</ref>
 
* 26 جون 2009 کو آزاد جموں و کشمیر (اے جے کے) کے مظفر آباد میں آزاد جموں وکشمیر میں اس طرح کے پہلے حملے میں جمعہ کے روز ایک خودکش بمبار نے دو فوجیوں کو ہلاک کردیا جب اس نے اپنے آپ کو ایک فوجی گاڑی کے قریب اڑا لیا۔<ref>https://en.wikipedia.org/wiki/Terrorist_incidents_in_Pakistan_in_2009</ref>
 
 
720

ترامیم

فہرست رہنمائی