"زبور" کے نسخوں کے درمیان فرق

Jump to navigation Jump to search
34 بائٹ کا اضافہ ،  2 سال پہلے
تصحیح مواد
کوئی خلاصۂ ترمیم نہیں
(تصحیح مواد)
(ٹیگ: ترمیم از موبائل موبائل ویب ترمیم)
'''زبور''' (عبرانی תהילים، تلفظ تہیلیم) [[عبرانی]] صحائف (عہد عتیق) میں سے ایک کتاب ہے۔ زبور کے لغوی معنوں میں سے '''ایک پارے اور ٹکڑے''' کے ہیں۔<ref>[http://lib.bazmeurdu.net/حضرت-داؤد-علیہ-السلام-اور-حضرت-سلیمان-ع/ حضرت داؤد علیہ السلام اور حضرت سلیمان علیہ السلام ۔۔۔ قرۃ العین طاہرہ - بزم اردو لائبریریبزم اردو لائبریری<!-- خودکار تخلیق شدہ عنوان -->]</ref> [[قرآن]]نزول میںکے مذکوراعتبار کتبسے آسمانیچار میںمشہور سےآسمانی سبکتابوں سے پہلےمیں زبور کا ذکردوسرا آتانمبر ہے۔ہے ۔ قرآن کے مطابق زبور داؤد پر نازل ہوا۔ جبکہ مسیحی و یہود زبور کواسے عام طور پر داؤد سےکا کلام یا ان ان کے منسوبنغمات کرتےسمجھتے ہیں۔
 
زبور کی کتاب 150 مزامیر پر مشتمل ہے۔ عبرانی روایات میں زبور کو پانچ حصص میں تقسیم کیا جاتا ہے۔ پہلا حصہ 41 مزامیر پر مشتمل ہے، دوسرا حصہ 31 مزامیر پر مشتمل ہے، تیسرااور چوتھا حصہ17، 17 مزامیر اور پانچواں حصہ 44 مزامیر پر مشتمل ہے۔۔

فہرست رہنمائی