"نرگس ماولوالا" کے نسخوں کے درمیان فرق

Jump to navigation Jump to search
م
←‏کیریئر: اضافہ مواد، حوالہ جات کا اضافہ
(←‏ذاتی زندگی: اضافہ مواد, درستی, اضافہ حوالہ جات)
(ٹیگ: ترمیم ماخذ 2017ء)
م (←‏کیریئر: اضافہ مواد، حوالہ جات کا اضافہ)
(ٹیگ: ترمیم ماخذ 2017ء)
ایم آئی ٹی کی ایک فارغ التحصیل طالب علم کی حیثیت سے انھوں نے ڈاکٹر رینر ویس کے ماتحت اپنا ڈاکٹریٹ کا مقالہ لکھا۔ جہاں نرگس ماولا والا نے کشش ثقل کی لہروں کا پتہ لگانے کے لئے ایک پروٹو ٹائپ لیزر انٹرفومیٹر پر تحقیق کی۔و17و گریجویٹ کرنے کے بعد وہ پوسٹڈاکٹرل محقق رہیں۔ر پھر کیلیفورنیا انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی میں ریسرچ سائنسدان بھی رہیں۔بعد ازاں نے کائناتی مائکروویو پس منظر کے ساتھ اپنے کام کا آغاز کیا و18و اور آخر کار لیگو پر کام کیا و18و انھوں نے بنیادی طور پر طبیعیات کے دو شعبوں پر توجہ مرکوز رکھی کشش ثقل کی لہریں آسٹرو فزکس اور کوانٹم پیمائش سائنس و19و۔
ڈاکٹر نرگس 2002 میں ایم آئی ٹی فزکس فیکلٹی میں شامل ہوئیں 2017 میں وہ نیشنل اکیڈمی آف سائنسز کے لئے منتخب ہو گئیں۔ و20و۔
 
=== کشش ثقل کی لہروں کا سراغ لگانا ===
ڈٹر نرگس سائنس دانوں کی اس ٹیم میں شامل تھیں جنھوں نے پہلی بارخلائی وقت کے تانے بانے میں لہروں کا مشاہدہ کیا جس کو کشش ثقل کی لہریں کہتے ہیں۔ وہ 1991 سے کشش ثقل کی لہروں پر کام کر رہیں ہیں و19و اس کا اعلان انھوں نے 11 فروری 2016 کو کیا۔اس تحقیق سے البرٹ آئن اسٹائن کے 1915 کے عمومی نظریہ نسبت کی ایک بڑی پیشگوئی کی تصدیق ہوئی ہے و9و۔
 
== ذریعہ معاش ==
4,689

ترامیم

فہرست رہنمائی