خلاء میں داخل ہونے والی چینی خواتین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
لیو یانگ، خلائی حدود میں قدم رکھنے والی پہلی چینی خاتون۔

2012ء میں چین دنیا کا تیسرا ایسا ملک بن گیا جس نے اپنے خلائی پروگرام کے تحت خواتین کو خلاء میں روانہ کیا۔ اس سے قبل سوویت اتحاد / روس نے سب سے پہلے یہ کارنامہ انجام دیا تھا جب اس نے والینٹینا ٹیریشکووا کو روانہ کیا تھا۔ اس کے 49 سال بعد یہی کام ریاستہائے متحدہ امریکا نے کیا تھا۔

تاریخ[ترمیم]

شین ژاؤ 5 کی ہوابازی پرواز کی اکتوبر 2003ء میں کامیابی کے بعد چین نے اپنے منصوبے کا اعلان کیا کہ وہ ایک عورت کو خلاء میں بھیجنے کا ارادہ رکھتا ہے۔ گو ژیولیان، جو کل چین خواتین فیڈریشن کی صدر تھی، نے ایک اجتماع کو مخاطب ہو کر یہ کہا کہ انہوں نے یہ تجویز پیش کی کہ خواتین کو بھی خلائی مشنوں کے لیے تربیت یافتہ ہونا چاہیے، جیسا کہ چین کہ کے پہلے ہوابازی والے خلائی دورے سے گنجائش نکلتی ہے۔[حوالہ درکار]

ابتدا میں انتخاب کے لیے ضروری تھا کہ خواتین شادی شدہ ہوں، ان کی ایک اولاد ہو اور کوئی صحت کا مسئلہ نہ ہو۔[1] بعد میں شادی اور مادریت کی شرطوں کو ترک کر دیا گیا۔[2]

16 جون 2012ء کو میجر لیانگ یانگ وہ پہلی ایسی چینی خاتون بنی جسے خلاء میں شین ژاؤ 9 میں دو مرد ہم منصبوں کے ساتھ جینی خلائی اسٹیشن تیانگ-1 کے ساتھ روانہ کیا گیا۔ لیو کا انتخاب جنگجو ہوابازوں کے زمرے سے نہیں بلکہ ایک تجربہ کار پلاف حمل و نقل کی ہواباز کے طور پر کیا گیا۔ اس مشن کا آغاز شام 6:37 بجے (12:37 گرینوچ معیاری وقت) جیوکوان سیٹلائٹ لانچ سینٹر سے صحرائے گوبی کے کنارے سے ہوا تھا۔[3] لیو کی روانگی ووستوک 6 کی 49 ویں سالگرہ کے موقع پر ہوئی جب والینٹینا ٹریشکووا اپنے پہلے خلائی سفر پر روانہ ہوئی تھی۔[4]

16 جون 2013ء کو ووستوک 6 کے خلاء میں بھیجنے کی پچاسویں سالگرہ کے موقع پر دو خواتین خلاء میں داخل ہوئیں، جن میں سے چینی تھی۔ یہ خلاء میں داخل ہونے والی دوسری چینی خاتون وانگ یاپینگ تھی جو تیانگ گونگ-1 جہاز پر 3 آدمیوں کے ساتھ شین ژاؤ 10 مشن میں شریک تھی۔ وہ کیرن نائبرگ کے ساتھ 6 آدمیوں کے ایکسپیڈیشن 36 کا بھی حصہ رہی جس کا آغاز انٹرنیشنل اسپیس اسٹیشن سے ہوا تھا۔ [5] یہ مشن کا فضاء میں آغاز 11 جون 2013ء کو ہوا تھا۔[6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Mark MacKinnon (11 جون 2012). "Want to be a female taikonaut in China? You better smell good, and no scars". Globe and Mail. 
  2. "Exclusive interview: Astronauts selection process". CCTV. 16 جون 2012. 
  3. "June 16, 2012 7:07 AM PrintText China sends its first woman into space". CBS News. اخذ شدہ بتاریخ 16 جون 2012.  Check date values in: |access-date= (معاونت)
  4. Clara Moskowit (15 جون 2012). "China Unveils Astronaut Crew, 1st Female Spaceflyer, for Saturday Launch". Space.com. اخذ شدہ بتاریخ 16 جون 2012. 
  5. Ken Kremer (16 June 2013). "Cosmonaut Valentina Tereshkova; 1st Woman in Space 50 Years Ago! Ready for Mars". Universe Today. 
  6. Andy Wong (11 جون 2013). "Shenzhou 10 Launch: Chinese Spacecraft Blasts Off With Three Astronauts On 15-Day Mission". Huffington Post.