خلیق انجم

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
خلیق انجم
معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1935  ویکی ڈیٹا پر تاریخ پیدائش (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دہلی  ویکی ڈیٹا پر مقام پیدائش (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 18 اکتوبر 2016 (80–81 سال)  ویکی ڈیٹا پر تاریخ وفات (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دہلی، بھارت  ویکی ڈیٹا پر مقام وفات (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ محقق، پروفیسر، ادیب  ویکی ڈیٹا پر پیشہ (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ڈاکٹر خلیق انجم (پیدائش: 1935ء - وفات :18 اکتوبر، 2016ء) بھارت سے تعلق رکھنے والے اردو زبان کے ممتاز ادیب، پروفیسر، محقق اور ماہر غالبیات تھے۔

حالات زندگی[ترمیم]

خلیق انجم 1935ء میں دہلی میں پیدا ہوئے۔ ان کا اصل نام خلیق احمد خان تھا۔ انہوں نے علی گڑھ مسلم یونیورسٹی سے گریجویشن اور ایم اے (اردو) دہلی یونیورسٹی سے پاس کیا۔ بعد ازاں دہلی یونیورسٹی سے مشہور شاعر اور صوفی بزرگ مرزا مظہر جان جاناں کی شخصیت و فن پر پی ایچ ڈی کی ڈگری حاصل کی۔[1]

انجمن ترقی اردو (ہند) سے وابستگی[ترمیم]

38 سال تک انجمن ترقی اردو (ہند) کی خدمت کرتے رہے ہیں اور اس وقت انجمن ترقی اردو (ہند) کے نائب صدر کی حیثیت سے وابستہ تھے۔

تصانیف[ترمیم]

خلیق انجم کی تقریباً 80 کتابیں مختلف موضوعات پر شائع ہوچکی ہیں۔ جن میں قابل ذکر آثار الصنادید، انتخاب خطوطِ غالب، متنی تنقید، غالب کا سفر کلکتہ اور ادبی معرکہ اور حسرت موہانی وغیرہ قابل ذکر ہیں۔

انتقال[ترمیم]

خلیق انجم نے 18 اکتوبر 2016ء کی صبح ساڑھے دس بجے دہلی میں آخری سانس لی اور راہی ملکِ عدم ہوئے۔ [2]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]