خنیس بن حذافہ

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
(خنيس بن حذافہ سے رجوع مکرر)
Jump to navigation Jump to search

خنیس بن حذافہ غزوہ بدر،اصحاب صفہ کے مہاجر صحابہ میں شمار کیے جاتے ہیں یہ ام المؤمنین حضرت حفصہ بنت عمر کے پہلے خاوند ہیں۔

نسب[ترمیم]

پورا نسب اس طرح ہے خنیس بن حذافہ بن قیس بن عدی بن سعد بن سہم بن عمروبن ہصیص بن کعب بن لوئی قرشی یہ ان اصحاب رسول میں شمار ہوتے ہیں کہ ابھی رسول اللہ دارارقم میں بھی نہیں گئے تھے اور یہ مسلمان ہوئے[1]

نام[ترمیم]

خنیس نام، ابوحذیفہ کنیت، پہلے حبشہ میں ہجرت کی، بعد میں مدینہ ہجرت کی [2]

اسلام وہجرت[ترمیم]

محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کے ارقم کے گھر میں پناہ گزین ہونے سے پہلے آپ کے ہاتھ پر مشرف باسلام ہوئے اور ہجرت ثانیہ میں حبشہ گئے اور پھر وہاں سے مدینہ آئے اور ابو لبابہ کے مہمان ہوئے، محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم نے ان میں اور ابی عبس بن جبیر میں مواخاۃ کرا دی۔[3]

غزوات و شہادت[ترمیم]

غزوہ بدر میں شریک ہوئے احد میں زخمی ہوئے،مدینہ منورہ آکر اس زخم سے وفات پائی،آنحضرتﷺ نے نماز جنازہ پڑھائی اور مشہور صحابی عثمان بن مظعون کے پہلو میں دفن کیے گئے،وفات کے وقت کوئی اولاد نہ تھی۔ ان کی وفات کے بعد بی بی حفصہ حضور انور کے نکاح میں آئیں۔(مرقات،اشعہ) [4][5]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. الطبقات الكبرى ،ابن سعد
  2. حليۃ الأولياء وطبقات الأصفياء ،أبو نعيم الأصفہانی
  3. (ابن سعد،جزو3،ق1:286)
  4. مرآۃ المناجیح شرح مشکوۃ المصابیح مفتی احمد یار خان نعیمی جلد8صفحہ506نعیمی کتب خانہ گجرات
  5. اصحاب بدر،صفحہ 86،قاضی محمد سلیمان منصور پوری، مکتبہ اسلامیہ اردو بازار لاہور