دو شریک حیات

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

ان تہذیبوں میں جہاں یک زوجیت پر عمومًا عمل در آمد ہوتا ہے، دو شریک حیات کا ہونا ایک ایسا عمل ہے جس میں ایک شخص کسی دوسرے شخص سے شادی کرتا ہے جب کہ وہ پہلے شادی شدہ ہوتا ہے۔[1] دو شریک حیات زیادہ تر مغربی ممالک میں ایک جرم ہے جب سیاق و سباق نہ پہلی شریک حیات کو اس کا کچھ علم ہوتا ہے اور نہ دوسری کو کہ شادی کرنے والا شخص پہلے سے قانونی رشتے میں بندھا ہوا ہے۔[2][3] ان ممالک میں جہاں دو شریک حیات سے متعلق قوانین موجود ہیں، پہلی شریک حیات کی رضامندی دوسری شادی کے قانونی موقف کو کسی بھی طرح سے متاثر نہیں کرتی جو عام طور سے غیر قانونی سمجھی جاتی ہے۔

مزید دیکھیے== ==حوالہ جات[ترمیم]

  1. Merriam Webster:Bigamy
  2. Marriage customs of the world: from henna to honeymoons۔ Santa Barbara, Calif: ABC-CLIO۔ 2004۔ صفحہ 31۔ آئی ایس بی این 1-57607-987-2۔ اخذ کردہ بتاریخ 2012-07-30۔ 
  3. "Sex Offenses: Consensual - Bigamy"۔ Law Library - American Law and Legal Information۔ اخذ کردہ بتاریخ 2009-05-10۔ 

بیرونی روابط[ترمیم]