دکنی مسلمان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
Deccani Muslims
Deccani People
اردو: دکنی مسلمان
کل آبادی
23,000,000 [1][2]
گنجان آبادی والے علاقے
 بھارت پاکستان سعودی عرب متحدہ عرب امارات ریاستہائے متحدہ مملکت متحدہ
زبانیں
اردو in the forms of حیدرآبادی اردو and the دکنی sub-dialect as well as standard اردوہندی زبانتیلگو زبانمراٹھی زبانکنڑ زبانسندھی زبانانگریزی زبان • The vernacular languages of other countries in the diaspora
مذہب

اسلام • Majority تصوف اہل سنت

• Minority اہل تشیع and Isma'ilism
متعلقہ نسلی گروہ
• Other بھارت میں اسلام communities • Telugu peopleآندھرا مسلمانمراٹھی مسلمانحیدرآبادی مسلم شخصیاتمہاجر قوم

دکھنی / دکنی مسلمان ، یا دکنی لوگ مختلف نسلی پس منظر سے تعلق رکھنے والے متنوع لوگوں کی جماعت ہیں جو جنوبی ہندوستان کے دکن علاقے میں رہتے ہیں ، اور اردو کی ایک شکل ، دکھنی زبان بولتے ہیں۔ [3] اب اس برادری کی اپنی الگ نسلی شناخت ہے ، لیکن دکنی مسلمان مختلف مقامی اور غیر ملکی نسلی پس منظر سے آئے ہیں۔ ان کی تاریخ بہمنی سلطنت سے معلوم کی جاسکتی ہے ، جو جنوبی ہندوستان میں پہلی آزاد مسلم سلطنت [4] اور اس کے بعد اس کی جانشین دکن سلطنت تھی۔ [5] مقامی دراوڑی اور ہند آریائی ورثہ رکھنے کے علاوہ ، دکنی مسلمان عرب ، افغان ، فارسی ، اور ترک آباؤ اجداد سے تعلق رکھ سکتے ہیں۔ [6] دکنی مسلمان ، جنوبی ہند بھر میں متعدد جگہوں پر پائے جاتے ہیں ، جو جنوبی مہاراشٹر سے لے کر شمالی تمل ناڈو تک کرناٹک ، تلنگانہ ، آندھراپردیش ، اور کیرالہ تک پھیلے ہوئے ہیں ، جہاں شمال سے دکنی مسلمان ہجرت کر گئے ، اور وہاں ایک کمیونٹی تشکیل دی۔ [7] بڑی تارکین وطن برادریوں، خاص طور پر پاکستان میں آباد ہیں جہاں، بھارت کی آزادی کے بعد اردو بولنے والے اقلیت اور مہاجروںکے ایک حصے کے طور پر مقیم ہیں . [8]

تاریخ[ترمیم]

لفظ دکنی بہمنی حکمرانوں کے دربار میں سلطان محمود شاہ بہمنی دوم کے دوران 1487 ء میں نکلا تھا۔ [9]

یہ بھی دیکھیں[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. http://www.censusindia.gov.in/2011census/c-01.html
  2. Fatihi، A.R.. Urdu in Andhra Pradesh. Language in India. http://www.languageinindia.com/april2003/urduinap.html۔ اخذ کردہ بتاریخ 22 July 2015. 
  3. "Kya ba so ba – Learning to speak south-indian urdu"۔ اخذ شدہ بتاریخ 2016-03-18۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  4. "Bahmani sultanate | historical Muslim state, India"۔ اخذ شدہ بتاریخ 2016-03-18۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  5. "Sultans of Deccan India, 1500-1700 Opulence and Fantasy | The Metropolitan Museum of Art"۔ metmuseum.org۔ اخذ شدہ بتاریخ 2016-03-18۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  6. Eaton، Richard Maxwell۔ Sufis of Bijapur, 1300 - 1700 : social roles of Sufis in medieval India۔ New Delhi: Munshiram Manoharlal Publ.۔ صفحہ 41۔ ISBN 978-8121507400۔ اخذ شدہ بتاریخ 11 May 2016۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  7. Mohammada، Malika۔ Culture of Hindi (in انگریزی)۔ Kalinga Publications۔ ISBN 9788187644736۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  8. Leonard، Karen Isaksen۔ Locating Home: India's Hyderabadis Abroad (in انگریزی)۔ Stanford University Press۔ ISBN 9780804754422۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)
  9. Narendra Luther۔ Prince;Poet;Lover;Builder: Mohd. Quli Qutb Shah - The founder of Hyderabad۔ Publications Division Ministry of Information & Broadcasting۔ ISBN 9788123023151۔ اخذ شدہ بتاریخ 13 January 2020۔ نادرست |=مردہ ربط (معاونت)