رئیس خان

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
یہاں جائیں: رہنمائی، تلاش کریں
رئیس خان
پس منظری معلومات
مقامی نام رئیس خان
پیدائش 25 نومبر 1939 (1939-11-25)اندور، مدھیہ پردیش، برطانوی ہند
وفات 6 مئی 2017 (عمر 77 سال)کراچی، پاکستان
اصناف ہندوستانی کلاسیکی موسیقی
پیشے موسیقی کار، موسیقار، گلوکار
ادوات ستار
سالہائے فعالیت 1948ء–2017ء
قابل ذکر آلہ موسیقی
ستار
تمغا حسن کارکردگی
تاریخ 2005
ملک پاکستان
پیش کردہ پرویز مشرف، صدر پاکستان

استاد رئیس خان (اردو: رئیس خان‎; 25 نومبر 1939 – 6 مئی 2017) پاکستانی ستار نواز تھے جن کا تعلق کراچی سے تھا۔[1] رئیس خان کو اب تک کا سب سے بڑا ستار نواز مانا گیا ہے۔[2][3] یہ کام رئیس خان نے اپنی زندگی کے آخری ایام تک جاری رکھا۔[4] 2017ء میں، خان کو پاکستان کے تیسرے سب سے بڑے شہری اعزاز ستارۂ امتیاز سے نوازا گیا۔ رئیس خان کی وفات 6 مئی 2017ء کو ہوئی۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "Family feud turns into cross-border musical war". http://www.mid-day.com/news/2012/jan/100112-Family-feud-turns-into-cross-border-musical-war.htm. ، mid-day.com newspaper website, Retrieved 24 جنوری 2016
  2. Adnan، Ally (2 مئی 2014). "Indus Raag". دی فرائیڈے ٹائمز. http://www.thefridaytimes.com/tft/indus-raag/۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 مئی 2017. "One of the greatest sitar players of all times, Rais Khan is hands-down the most melodic sitar player in the world today." 
  3. Kumar، Kuldeep (جنوری 13, 2012). "A tale of two recitals". en:The Hindu. http://www.thehindu.com/todays-paper/tp-features/tp-fridayreview/a-tale-of-two-recitals/article2796741.ece۔ اخذ کردہ بتاریخ 9 مئی 2017. "Rais Khan who in his heyday was considered among the most skilful sitar players in the country." 
  4. "Eid ul Fitr Schedule 2016". پاکستان ٹیلی ویژن نیٹ ورک. اخذ کردہ بتاریخ 9 مئی 2017.