رام پونیانی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
رام پونیانی
(انگریزی میں: Ram Puniyani ویکی ڈیٹا پر (P1559) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
Ram Puniyani.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 25 اگست 1945 (76 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ناگپور  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ مصنف،  انجینئر،  مصنف  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان انگریزی[1]  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شعبۂ عمل حیاتی ہندسیات،  نظریاتی صحافت  ویکی ڈیٹا پر (P101) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ملازمت انڈین انسٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی  ویکی ڈیٹا پر (P108) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

رام پونیانی (انگریزی: Ram Puniyani) سابقًا بائیو میڈیکل انجینئر اور سابقًا سینئر طبی افسر رہ چکے ہیں اور انڈین انصٹی ٹیوٹ آف ٹیکنالوجی بمبئی کے ساتھ کام کر چکے ہیں۔ وہ 1973ء میں اپنے طبی کریئر شروع کیے تھے اور 27 سال تک آئی آئی ٹی میں مختلف حیثیتوں کے تحت برسر خدمت رہے ہیں، جس کا آغاز 1977ء میں ہوا تھا۔ دسمبر 2004ء میں انہوں نے رضا کارانہ طور پر وظیفہ حسن خدمت اختیار کیا۔ اس کا مقصد انہوں نے یہ بتایا کہ وہ ملک بھر میں "فرقہ وارانہ ہم آہنگی" کے لیے کام کرنا چاہتے ہیں۔[2][3] وہ انسانی حقوق کی سرگرمیوں سے جڑے ہیں جو کچھ لوگوں کے مطابق "بھارت میں بنیاد پرستی عروج پانے والی فضا" کی مخالفت کا حصہ ہیں۔[4][5] انہوں اپنے کئی لیکچروں میں یہ واضح کیا ہے کہ ہندوستان کی قرون وسطٰی کی ہندو مسلم کے چشمے سے دیکھنا بہت بڑی ناانصافی ہے۔ اس کی مثالیں انہوں نے یہ دی اورنگزیب کا سپہ سالار راجا جے سنگھ ایک ہندو راجپوت تھے۔ ایضًا شیواجی کی فوج میں کئی مسلمان بڑے عہدوں پر فائز تھے۔ جس وقت کہ شیواجی کا سامنا افضل خان سے ہوا تھا، اس وقت شیواجی کے ساتھ ان کا بااعتماد شخص ایک مسلمان تھا، جب کہ افضل خان کے یہاں ایک ہندو بااعتماد شخص اس وقت موجود تھا۔ بھارت میں کافی فرقہ وارانہ بھید بھاؤ کے باوجود آج بھی کئی ہندو عبادت گاہوں کی تولیت مسلمانوں کے ہاتھوں میں جب کہ ہندو اصحاب بھی کافی عقیدت اور احترام سے درگاہوں، چھلوں، مسجدوں وغیرہ میں جاتے ہیں۔

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Identifiants et Référentiels — اخذ شدہ بتاریخ: 4 مئی 2020
  2. "Book listing "Communalism: India's Nemesis", IdeaIndia.com". 04 مارچ 2016 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 مارچ 2020. 
  3. "Abu Saleh, Communalism and Terrorism, UoH Herald, University of Hyderabad, 18 ستمبر 2013". 15 جون 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 مارچ 2020. 
  4. National Seminar on Socio-Economic and Educational Status of Muslims in Maharashtra, Tata Institute of Social Sciences, 2009 آرکائیو شدہ 6 ستمبر 2012 بذریعہ وے بیک مشین
  5. Ram Puniyani at World People's Blog