رانا پرتاب

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
رانا پرتاب
RajaRaviVarma MaharanaPratap.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 9 مئی 1540  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
کھمبل گڑھ  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 19 جنوری 1597 (57 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
طرز وفات حادثہ  ویکی ڈیٹا پر (P1196) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت میواڑ  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
اولاد نسل
دیگر معلومات
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

راجستھان کا نامور اور دلیر سردار۔ اوودے سنگھ کا بیٹا اور سنگرام سنگھ کا پوتا تھا۔اور گجر راج ونش کا آخری راجا مانا جاتا ہے۔ اپنے باپ کی وفات پر اوودے پور کی گدی پر بیٹھا۔ اس نے مغل شہنشاہ اکبر کی اطاعت قبول کرنے اور اس سے رشتے ناتے کرنے سے انکار کر دیا۔ اکبر نے راجا مان سنگھ کو فوج دے کر راؤ پرتاب کے خلاف روانہ کیا۔ 1576ء میں ہلدی گھاٹ کے مقام پر راؤ کو زبردست شکست ہوئی۔ اور ااس نے پہاڑوں میں پناہ لی۔ کوئی بیس برس مارا مارا پھرتا رہا۔ لیکن اکبر کی اطاعت قبول نہ کی۔ 1597ء میں راؤ نے وفات پائی لیکن اس سے پہلے اس نے چتوڑ اور ایک دو قلعوں کو چھوڑ کر باقی تمام علاقہ مغلوں سے چھین لیا تھا۔ رانا پرتاب کا نام پہلے راؤ پرتاب تھا بعد میں رانا نام پسند آیا اپنا نام راؤ کی جگہ رانا پرتاب رکھ لیا اور راؤ پرتاب بعد میں رانا پرتاب کے نام سے ہی مشہور ہوا۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. https://data.bnf.fr/ark:/12148/cb13510601n — اخذ شدہ بتاریخ: 31 دسمبر 2019 — مصنف: Bibliothèque nationale de France — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ