راچیل ہینس

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
راچیل ہینس
2020 ICC W T20 WC A v SL 02-24 Haynes (02).jpg
ذاتی معلومات
مکمل نامراچیل لوئس ہینس
پیدائش26 دسمبر 1986ء (عمر 35 سال)
کارلٹن، وکٹوریہ، آسٹریلیا
عرفڈیسمنڈ ہینز، راچ
قد1.63 میٹر (5 فٹ 4 انچ)
بلے بازیبائیں ہاتھ کی بلے باز
گیند بازیبائیں ہاتھ کی میڈیم پیس گیند باز
حیثیتبلے بازی
بین الاقوامی کرکٹ
قومی ٹیم
پہلا ٹیسٹ (کیپ 157)10 جولائی 2009  بمقابلہ  انگلینڈ
آخری ٹیسٹ27 جنوری 2022  بمقابلہ  انگلینڈ
پہلا ایک روزہ (کیپ 115)7 جولائی 2009  بمقابلہ  انگلینڈ
آخری ایک روزہ3 اپریل 2022  بمقابلہ  انگلینڈ
ایک روزہ شرٹ نمبر.7
پہلا ٹی20 (کیپ 28)21 فروری 2010  بمقابلہ  نیوزی لینڈ
آخری ٹی2022 جنوری 2022  بمقابلہ  انگلینڈ
ٹی20 شرٹ نمبر.7
ملکی کرکٹ
عرصہٹیمیں
2005–2011وکٹوریہ اسپرٹ
2011– تاحالنیو ساؤتھ ویلز
2015– تاحالسڈنی تھنڈر
2018لافبرو لائٹننگ (خواتین کی کرکٹ)
کیریئر اعداد و شمار
مقابلہ ٹیسٹ ایک روزہ ٹی ٹوئنٹی ویمنز نیشنل کرکٹ لیگ
میچ 6 77 75 110
رنز بنائے 383 2,585 793 4,115
بیٹنگ اوسط 34.81 39.80 26.43 41.15
100s/50s 0/3 2/19 0/3 7/25
ٹاپ اسکور 98 130 69* 156
گیندیں کرائیں 156 108 44 540
وکٹ 2 7 4 23
بالنگ اوسط 27.00 13.42 18.50 20.04
اننگز میں 5 وکٹ 0 0 0 0
میچ میں 10 وکٹ 0 0 0 0
بہترین بولنگ 1/0 3/10 3/19 3/20
کیچ/سٹمپ 3/– 25/– 27/– 37/–
ماخذ: ESPNcricinfo، 3 اپریل 2022ء

راچیل لوہیس ہینس (پیدائش:26 دسمبر 1986ء) ایک آسٹریلوی کرکٹ کھلاڑی ہیں جنہوں نے قومی خواتین ٹیم کی رکن کے طور پر پانچ عالمی چیمپئن شپ جیتیں ہیں۔ بائیں ہاتھ کی بلے باز، ہینس آسٹریلیا خواتین کرکٹ ٹیم کی موجودہ نائب کپتان ہیں۔ وہ خواتین کی بگ بیش لیگ میں سڈنی تھنڈر کی کپتانی بھی کرتی ہیں اور خواتین قومی کرکٹ لیگ میں نیو ساؤتھ ویلز کے لیے کھیلتی ہیں۔

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

اپنے گھر کے پیجھے بچپن میں کرکٹ کھیلنے کی ابتدا کی، ہینس اپنے کزنوں کے ساتھ کھیلتی تھی، وہ بیلنڈا کلارک اور کیتھرین فٹزپیٹرک سے متاثر ہونے سے پہلے شین وارن کو آئیڈیلائز کرتی تھیں۔ [1] اپنے پڑوسی کی دعوت کو قبول کرتے ہوئے، ہینس نے اس کھیل کے ساتھ اپنے پہلے رسمی تجربے میں گیارہ سال کی عمر میں نارتھ بالوین کرکٹ کلب میں شمولیت اختیار کی۔ اس کے فوراً بعد، اسے باکس ہل کرکٹ کلب کی طرف راغب کیا گیا اور وہ مستقبل کی آسٹریلوی ساتھی میگ لیننگ کے ساتھ سینئر لیول پر کھیلے گی۔ [2][3][4] ہینس نے اورلیڈی آف سائین کالج میں تعلیم حاصل کی، 2004ء میں اپنا وی سی ای مکمل کیا۔ باکس ہل انسٹی ٹیوٹ سے مینجمنٹ کا ڈپلومہ حاصل کرنے کے بعد، انھوں نے آسٹریلین کیتھولک یونیورسٹی سے تعلیم حاصل کی اور مارکیٹنگ میں بیچلر کی ڈگری حاصل کی۔ [1] [5] وہ اس وقت یونیورسٹی آف سدرن کوئنز لینڈ میں ماسٹر آف بزنس ایڈمنسٹریشن کی ڈگری کر رہی ہیں۔ [6]

خواتین کی قومی کرکٹ لیگ[ترمیم]

ہینس نے 2005-06ء کے سیزن کے دوران میں وکٹوریہ کے لیے ڈبلیو این سی ایل میں قدم رکھا۔ [7] اس نے 2006-07ء کے دوسرے فائنل میں نیو ساؤتھ ویلز کو آٹھ وکٹوں سے شکست دینے کے لیے ناٹ آؤٹ 83 رنز بنائے، [8] لیکن ان کی ٹیم فیصلہ کن میچ 3 وکٹوں سے ہار گئی۔ [9] 2008-09 میں، ہینس نے اپنی پہلی سنچری بنائی اور سیزن کا اختتام 44.62 کی اوسط سے 357 کے ساتھ چوتھی سب سے زیادہ رنز بنانے والی کھلاڑی کے طور پر کیا۔ [10] ان کی مضبوط مہم کا اختتام اس وقت ہوا جب وہ فائنل میں صفر پر رن آؤٹ ہوگئیں۔ [11] ہینس 2009-10ء کے سیزن کی پانچویں سب سے زیادہ رنز بنانے والے کھلاڑی بھی تھیں، جنہوں نے 39.70 پر 397 رنز بنائے۔ [12] اس کے بعد انھوں نے 2010-11ء میں لیگ کی دوسری سب سے زیادہ رنز بنانے والی کھلاڑی کے طور پر فالو اپ کیا (56.80 پر 284 رنز بنا کر) [13] اور فائنل میں اپنی ٹیم کے لیے 76 گیندوں پر 68 رنز بنا کر سب سے زیادہ اسکور کیا، حالاں کہ چیمپئن شپ کے فیصلہ کن میچ میں وکٹوریہ کو شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ نیو ساؤتھ ویلز کے ہاتھوں مسلسل تیسرے سیزن میں۔ [14]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب "This Sporting Life: Rachel Haynes". The Sydney Morning Herald (بزبان انگریزی). 2011-11-26. اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  2. "Up-and-comer". The Age (بزبان انگریزی). 2003-02-22. اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  3. "News | Box Hill Cricket Club". www.bhcc.com.au. اخذ شدہ بتاریخ 13 اکتوبر 2020. 
  4. "EMP secure 2010-11 Premiership". Cricket Victoria (بزبان انگریزی). 2011-03-21. اخذ شدہ بتاریخ 13 اکتوبر 2020. 
  5. "Rachael Haynes – Cream Communications" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  6. Haynes، Rachael (2020-09-25). "Katy Perry to Ricky Gervais: six surprising months in women's cricket". Brisbane Times (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  7. "Rachael Haynes | cricket.com.au". www.cricket.com.au. اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  8. "Victoria Women beat New South Wales Women – Vic Women won by 8 wickets (with 40 balls remaining) – New South Wales Women vs Victoria Women Women's National Cricket League 2006 2nd Final Match Summary, Report | ESPNcricinfo.com". www.espncricinfo.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  9. "Full اسکور کارڈ of Victoria Women vs New South Wales Women 3rd Final 2007 – Score Report | ESPNcricinfo.com". www.espncricinfo.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  10. "Women's National Cricket League 2008, Women's National Cricket League 2008 score, Match schedules, fixtures, points table, results, news". www.espncricinfo.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  11. "Full اسکور کارڈ of Victoria Women vs New South Wales Women Final 2009 – Score Report | ESPNcricinfo.com". www.espncricinfo.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  12. "Women's National Cricket League, 2009/10 Cricket Team Records & Stats | ESPNcricinfo.com". Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  13. "Women's National Cricket League, 2010/11 Cricket Team Records & Stats | ESPNcricinfo.com". Cricinfo. اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020. 
  14. "Full اسکور کارڈ of Victoria Women vs New South Wales Women Final 2011 – Score Report | ESPNcricinfo.com". www.espncricinfo.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 11 اکتوبر 2020.