ربی شیرگل

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ربی شیرگل
Rabbi Shergill.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش سنہ 1973 (عمر 46–47 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
دہلی[2][3]  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of India.svg بھارت  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ موسیقار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان پنجابی،  ہندی،  انگریزی  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
ویب سائٹ
ویب سائٹ باضابطہ ویب سائٹ  ویکی ڈیٹا پر (P856) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
IMDb logo.svg
IMDB پر صفحات  ویکی ڈیٹا پر (P345) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ربی شیرگل (انگریزی: Rabbi Shergill) ایک بھارتی موسیقار ہیں۔ وہ عمومًا پنجابی زبان میں گاتے اور کئی صوفیانہ کلام گا چکے ہیں۔ ان کی شہرت کا ایک بڑا سبب بلھے شاہ سے منسوب کلام ٰبلہ کی جاناں میں کون ٰ ہے۔ اس نغمے بلھے شاہ اپنی ظاہری نمود کی نفی کرتے ہوئے اندرونی ہستی اور حقیقی شخصیت کی تلاش کی بات کرتے ہیں۔ وہ گربانی کے ضمن میں گا چکے ہیں۔ [4] ربی کلاسیکی صوفیانہ کلام کے ساتھ ساتھ نیم لوک گیتی اور نیم صوفیانہ کلام کے تجربے بھی کر چکے ہیں۔ وہ حالات حاضرہ پر بھی کئی بار اپنے نغمون میں ذکر کر چکے ہیں۔ 2002ء میں ہونے والے گجرات فسادات کی بھی جھلک ان کے کلام میں دکھ چکی ہے، جس میں کہ بہ طور خاص ان میں متاثر ہونے والی خاتون بلقیس کا انہوں نے ذکر کیا۔ تاہم وہ اپنے نغموں میں تفریح کا پہلو شامل کرنے کی بہر حال کوشش کرتے رہتے ہیں۔ ان کوششوں کی وجہ سے وہ پنجابی موسیقی کے حقیقی شہری گویے قرار دیے جا چکے ہیں۔ [5]

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]