رشید امجد

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
رشید امجد
معلومات شخصیت
پیدائش 5 مارچ 1940 (81 سال)  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
سری نگر  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ صحافی  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

ڈاکٹر رشید امجد پاکستان سے تعلق رکھنے والے اردو کے نامور افسانہ نگار اور اردو کے پروفیسر تھے، ان کا اصل نام اختر رشید تھا۔

حالات زندگی[ترمیم]

رشید امجد 5 مارچ 1940ء کو سری نگر، ریاست جموں و کشمیر کے محلہ نواب میں پیدا ہوئے۔ والد کا نام محی الدین تھا جو قالینوں کا کام کرتے تھے اور شاعر بھی تھے۔ میراجی: شخصیت اور فن کے موضوع پر پی ایچ ڈی کی سند حاصل کی۔ انہوں نے نمل اسلام آباد اور بین الاقوامی اسلامی یونی ورسٹی اسلام آباد میں بطور چیئرمین شعبہ اردو، بین الاقوامی اسلامی یونیورسٹی اسلام آباد میں بطور ڈین خدمات سر انجام دیں۔ اس کے علاوہ فاطمہ جناح یونیورسٹی میں تا مرگ تدریسی فرائض سر انجام دیں۔

تصانیف[ترمیم]

  • نیا ادب (تنقیدی مضامین /1969ء)
  • رویے اور شناختیں
  • یافت و دریافت
  • شاعری کی سیاسی وفکری روایت
  • اقبال فکر و فن
  • میرزا ادیب: شخصیت و فن
  • میرا جی: شخصیت و فن
  • بیزار آدم کے بیٹے (اولین افسانوی مجموعہ/ 1974ء)
  • ریت پر گرفت
  • سہ پہر کی خزاں
  • پت جھڑ میں خود کلامی
  • بھاگے ہے بیاباں مجھ سے
  • کاغذ کی فصیل
  • عکس بے خیال
  • دشت خواب
  • گمشدہ آواز کی دستک
  • ست رنگے پرندے کے تعاقب میں
  • تمنا بے تاب کے نام (خودنوشت)
  • افسانوں کی کلیات دشت نظر سے آگے اور عام آدمی کے خواب کے نام سے اشاعت پزیر ہوچکی ہیں۔

اعزازات[ترمیم]

حکومت پاکستان نے انہیں 14 اگست 2006ء کو صدارتی تمغا برائے حسن کارکردگی عطا کیا تھا۔

وفات[ترمیم]

3 مارچ 2021ء کو راولپنڈی میں وفات پائی۔[1] 5 مارچ 2021 کو راولپنڈی میں سپرد خاک کردیے گے ۔

حوالہ جات[ترمیم]

  1. "short-story-writer-critic-dr-rasheed-amjad".