رمی جمار

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
حج 2006ء کے دوران رمی جمار کا منظر

رمی جمار یا رمی حج سے متعلقہ ایک اسلامی اصطلاح ہے۔ مسلمان دوران حج تین علامتی شیطانوں کو کنکر مارتے ہیں۔ یہ حج کا ایک رکن ہے۔ دس، گیارہ اور بارہ ذوالحجہ کو یہ عمل کیا جاتا ہے، اس میں ہر حاجی پر لازم ہے کہ تین شیطانوں کو سات سات کنکر ترتیب وار مارے۔ یہ عمل اسلام میں نبی ابراہیم علیہ السلام کی سنت کے طور پر جاری ہے۔ بعض حالات میں تیرہ ذوالحجہ کو بھی پتھر مارنے ضروری ہو جاتے ہیں۔

وجہ تسمیہ[ترمیم]

پس منظر[ترمیم]

علامتی شیطان[ترمیم]

فقہی احکام[ترمیم]

بیرونی روابط[ترمیم]

رمی کا طریقہ اور احتیاطیں

مزید دیکھیے[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]