رومانہ حسین

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search

رومانہ حسین کراچی سے تعلق رکھنے والی ایک فنکارہ ، معلمہ اور بچوں کے مصنفہ ہیں۔ [1] [2] وہ 60 سے زیادہ بچوں کی کتابیں لکھ چکی ہیں۔ [3] [4]

Rumana Husain
معلومات شخصیت
عملی زندگی
پیشہ مصنفہ،  فن کار  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں

تعلیم[ترمیم]

رومانہ نے اپنا ہائی اسکول 1962 میں ماڈل سیکنڈری گرلز اسکول سے مکمل کیا۔ انہوں نے سن 1972 میں سینٹرل انسٹی ٹیوٹ آف آرٹ اینڈ کرافٹ (CIAC) سے گرافک ڈیزائن میں چار سالہ ڈپلوما مکمل کیا۔ [5]

کیریئر[ترمیم]

بطور ادکار رومانہ نے پپلے بچے کی پیفائش کے بعد اپنا کام شروع کیا۔ وہ شروع میں بچوں کے کھلونے بناتی اور انھیں نمائش پر رکھتیں۔

اس کے بعد رومانہ نے تدریس کی طرف رخ کیا اور اسکول کے بچوں کو آرٹ سکھایا۔ اس نے پورے پاکستان میں اسکول اساتذہ کو زبان کی تعلیم کے لئے جدید انداز میں تربیت دی۔ وہ اس کے وائس پرنسپل کی حیثیت سے سی اے ایس اسکول سے وابستہ تھیں اور 1996 میں اسے چھوڑ گئیں۔ اس کے بعد اس نے جونیئر سیکشن کے آغاز میں 10 سال تک اسکول میں کام کیا اور 1990 میں اسکول کا کنڈرگارٹن سیکشن قائم کیا۔ [6] وہ اس کی ہیڈ مسٹریس بھی رہی ہیں۔

1988 میں ، رومانہ نے پبلشنگ ایجنسی ، بک گروپ کی مشترکہ بنیاد رکھی جہاں وہ 8 سال بچوں کی اردو کتابیں لکھنے اور ان میں ترمیم کرنے والی رضاکار کی حیثیت سے کام کرتی تھیں۔ کتاب گروپ میں اپنے وقت کے دوران ، اس نے کراچی اور پاکستان کے کچھ علاقوں میں اساتذہ کی تربیت بھی کی۔ اس نے 6 سال تک اساتذہ کے دستورالعمل اور ایک مربوط نصاب بنانے پر کام کیا۔ رومانہ نے 1997 سے 2001 تک 4 سال تک بک گروپ میں بطور ڈائریکٹر کام کیا۔ [7] [8]

2001 میں ، رومانہ نے بچوں کے میوزیم برائے امن اور انسانی حقوق میں شمولیت اختیار کی جہاں وہ 6 سال تک سرگرمی اور آؤٹ ریچ کی سربراہ رہی۔

رومانہ 2005 میں نوکارت آرٹ کی شریک بانی سینئر ایڈیٹر اور پارٹنر بھی بن گئیں۔ [9] نیوکٹا آرٹ ایک دو سالانہ آرٹ میگزین تھا ، جو دس سالوں سے شائع ہوتا تھا ، جس میں وہ سینئر ایڈیٹر تھیں۔ [10] [11] [12]

وہ چلڈرن لٹریچر فیسٹیول میں بورڈ آف ڈائریکٹرز کی اعزازی ممبر بھی ہیں۔ وہ کراچی کانفرنس فاؤنڈیشن کی جنرل سکریٹری بھی ہیں۔ ایک ایسی تنظیم جس کا مقصد متعلقہ اسکالرز ، کارکنوں اور اداروں کے ساتھ شراکت کے ذریعہ گفتگو کو پیدا کرنے ، تحقیق پیش کرنے اور کراچی سے متعلق امور پر عوامی تقاریب کا انعقاد کے لئے ایک پلیٹ فارم مہیا کرنا ہے۔ [13]

2014 میں ، وہ آئی ایم کراچی کنسورٹیم کی بانی ممبر بن گئیں ؛ جو کہ تنظیموں اور افراد کے لئے ایک پلیٹ فارم ہے جس سے عوامی مقامات پر دوبارہ دعوی کرنے ، سول سوسائٹی کو ساتھ لانے ، اور مکالموں اور مہمات کے ذریعہ عوامی شعور کو بڑھانے کے ذریعہ امن کی تعمیر کے ویکلز فار پیس کے طور پر معاشرتی اور ثقافتی سرگرمیوں کو فروغ دینے اور اس کی تائید کے لئے پرعزم ہے۔ [14] [15]

رومانہ 60 سے زیادہ بچوں کی کتابوں کی مصنفہ اور مصورہ ہیں۔ [16] اس نے آکسفورڈ یونیورسٹی پریس ، دانش پبلیکیشنز ، ای آر ڈی سی ، کتھلیہ پبلی کیشنز (نیپال) ، نمی چلڈرن کی کتابیں (جنوبی کوریا) ، تیتلی ورکس (نیدرلینڈز) ، پرتھم بوکس (ہندوستان) اور کتاب گروپ سمیت متعدد پبلشروں کے لئے کتابیں لکھی ہیں۔ [17] [18] اس نے "کراچی والا - ایک شہر کے اندر ایک برصغیر" اور "اسٹریٹ سمارٹ - گلی کے پیشہ ور افراد" ، کراچی پر دو کافی ٹیبل کی کتابیں شائع کیں۔ [19] [20] [21]

منتخب کام[ترمیم]

  • ایٹین اینڈ انگری ڈاٹ [22]
  • سٹی ٹیلز: گوئنگ اپ[23]
  • پاکستان کی سیر [24]
  • جنگل ان دا جنگل [25] [26]
  • محترمہ فاطمہ جناح [27]
  • پرندوں کا موتی [28]
  • کراچی والا برصغیر ایک شہر کے اندر [29]
  • اسٹریٹ سمارٹ - سڑک پر پیشے [30]
  • ڈاکٹر اختر حمید خان ، او یو پی کراچی [31] [32]
  • کراچی والا: برصغیر ایک شہر کے اندر [33] [34]

ایوارڈ[ترمیم]

آکسفورڈ یونیورسٹی پریس ، کراچی کے ذریعہ شائع ہونے والی اپنی گرافک کہانی ڈاکٹر اختر حمید خان کے لئے چلڈرن بوکس کیٹیگری میں وہ چوتھے یو بی ایل جنگ لٹریری ایکسی لینس ایوارڈ (2014) کی فاتح ہیں۔ [35] [36] [37]

بیرونی روابط[ترمیم]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Ebrahim، Zofeen T.؛ February 18؛ 2020. "World's tallest mural is an ode to Karachi's marine life and mangroves". The Third Pole (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  2. Ebrahim، Zofeen T. (2020-09-08). "The Pakistani children's author focusing on the planet". Images (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  3. "News stories for Rumana Husain - DAWN.COM". www.dawn.com (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  4. "Rumana Husain:The News on Sunday (TNS) » Weekly Magazine - The News International". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  5. "Rumana Husain – Karachi Art Directory" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  6. Zubaida Mustafa official. "interview with Ruman Husain". 
  7. Karavan. "Ruman Husain". 
  8. Thatsmag. "Interview with Rumana Husain". 
  9. "Art With a View". Newsline (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  10. nuktaartmag. "nuktaart". 24 ستمبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. 
  11. "NuktaArt open call for submissions". The Express Tribune (بزبان انگریزی). 2011-01-30. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  12. "Nukta Art – Karachi Art Directory" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  13. "Story-Telling Session by Rumana Husain". Pakistan Chowk Community Centre (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  14. iamkarachi. "IPAF advisory committee". 
  15. Herald Dawn. "Karachiwalla". 
  16. "The Pakistani children's author focusing on the planet". ARY Blogs (بزبان انگریزی). 2020-09-16. 04 اکتوبر 2020 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  17. "Rumana Husain". Karachi Biennale 2017 (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  18. "Glimpses of Karachi's lost empires". The Express Tribune (بزبان انگریزی). 2015-07-04. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  19. "Celebrating differences: Karachi's strength lies in its diversity". The Express Tribune (بزبان انگریزی). 2015-02-26. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  20. "A snapshot on culture | Footloose | thenews.com.pk". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  21. "Exhibition - Moses Somake". The Dawood Foundation (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  22. "Have you read Etienne and the Angry Dot yet? | SAMAA". Samaa TV (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  23. "City Tales: Growing up". oup.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  24. Hussain، Rumana (2006). Pakistan ki sair. Lahore: Book Group. ISBN 978-969-8129-33-0. OCLC 651976957. 
  25. "Jingles in the Jungle by Rumana Hussain - A Review". Childrens Literature Festival. 2018-12-06. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  26. "CLF presents Jingles in the Jungle: A Storytelling Session by Rumana Husain | Karachi". British Council: Pakistan Library (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  27. "Rumana Husain Books". kitabrabta.com. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  28. mahraka. "the pearl". 
  29. "KARACHIWALI" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  30. "Rumana Husain". www.goodreads.com. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  31. "Graphic Stories: Akhtar Hameed Khan". oup.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  32. Ebrahim، Zofeen T.؛ September 8؛ 2020. "The Pakistani children's author focusing on the planet". The Third Pole (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  33. "Melting-pot constituencies : 'Karachiwala : A subcontinent within a city' by Rumana Husain". Himal Southasian (بزبان انگریزی). 2010-06-01. اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  34. "Karachi my city | Special Report | thenews.com.pk". www.thenews.com.pk (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  35. "Rumana Husain – Karachi Literature Festival" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020. 
  36. dailytimes. "Rumana Husain- Graphic stories". 
  37. "UBL organises literary awards ceremony for writers – Business Recorder" (بزبان انگریزی). اخذ شدہ بتاریخ 27 نومبر 2020.