زیب جعفر

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
زیب جعفر
قومی اسمبلی پاکستان کی رکن
آغاز منصب
13 اگست 2018ء
مدت منصب
1 جون 2013ء – 31 مئی 2018ء
معلومات شخصیت
مقام پیدائش حیدرآباد  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
جماعت پاکستان مسلم لیگ (ن)  ویکی ڈیٹا پر (P102) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رشتے دار چوہدری محمد عمر جعفر (بھائی )
مائزہ حمید (کزن)
ذکاء اشرف (چچا)
عملی زندگی
مادر علمی جامعہ مڈلسیکس  ویکی ڈیٹا پر (P69) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ سیاست دان  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں


زیب جعفر (انگریزی: Zeb Jaffar) (ولادت: ) ایک پاکستانی سیاست دان ہیں جو اگست 2018ء سے پاکستان کی قومی اسمبلی کی رکن ہیں۔ اس سے قبل وہ جون 2013ء سے مئی 2018ء تک قومی اسمبلی کی رکن تھیں۔ اور 2008ء سے 2013ء تک پنجاب کی صوبائی اسمبلی کی رکن تھیں۔

ابتدائی زندگی اور تعلیم[ترمیم]

زیب جعفر پاکستان کے شہر حیدرآباد میں بیگم عشرت اشرف اور چوہدری جعفر اقبال کے ہاں پیدا ہوئی تھیں۔[2]

زیب نے اپنی تعلیم 2001ء میں کنیئرڈ کالج سے حاصل کرنے سے پہلے، ابتدائی تعلیم کانوینٹ جیسس اور ماری، مری سے حاصل کی تھی۔[2]

انہوں نے 2005ء میں لندن کے مڈلسیکس یونیورسٹی سے بین الاقوامی تعلقات میں ایم اے کی ڈگری حاصل کی۔[2]

سیاسی زندگی[ترمیم]

زیب جعفر نے 1997ء میں رحیم یار خان کے ضلع کونسل کی وائس چیئرپرسن کی حیثیت سے منتخب ہونے کے بعد اپنی سیاسی زندگی کا آغاز کیا۔[2]

2002ء کے عام انتخابات[ترمیم]

زیب نے 2002ء کے عام انتخابات میں حلقہ این اے۔176 (رحیم یار خان-2) سے مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کی حیثیت سے پاکستان کی قومی اسمبلی کی نشست پر انتخاب لڑی لیکن وہ ناکام رہی۔ انہوں نے 23،004 ووٹ حاصل کیے اور یہ نشست پاکستان پیپلز پارٹی کے امیدوار سید تنویر حسین سید سے ہار گئیں۔[3]

2013ء کے عام انتخابات[ترمیم]

زیب نے 2013ء کے پاکستانی عام انتخابات میں پنجاب سے خواتین کے لیے مخصوص نشستوں پر مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کی حیثیت سے قومی اسمبلی کی رکن منتخب ہوئی تھیں۔[4][5]

2018ء کے عام انتخابات[ترمیم]

وہ 2018ء کے پاکستانی عام انتخابات میں پنجاب سے خواتین کے لیے مخصوص نشست پر مسلم لیگ (ن) کی امیدوار کی حیثیت سے قومی اسمبلی میں دوبارہ منتخب ہوئیں۔[6]

حوالہ جات[ترمیم]

  1. Wasim، Amir (14 June 2018). "For PML-N, only family seems to matter". DAWN.COM. 14 جون 2018 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 14 جون 2018. 
  2. ^ ا ب پ ت "Punjab Assembly". www.pap.gov.pk. 11 دسمبر 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 11 دسمبر 2017. 
  3. "2002 election result" (PDF). ECP. 26 جنوری 2018 میں اصل (PDF) سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 14 جون 2018. 
  4. "PML-N secures most reserved seats for women in NA - The Express Tribune". The Express Tribune. 28 May 2013. 04 مارچ 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 07 مارچ 2017. 
  5. "Women, minority seats allotted". DAWN.COM (بزبان انگریزی). 29 May 2013. 07 مارچ 2017 میں اصل سے آرکائیو شدہ. اخذ شدہ بتاریخ 07 مارچ 2017. 
  6. Reporter، The Newspaper's Staff (12 August 2018). "List of MNAs elected on reserved seats for women, minorities". DAWN.COM. اخذ شدہ بتاریخ 12 اگست 2018.