ساقی فاروقی

آزاد دائرۃ المعارف، ویکیپیڈیا سے
Jump to navigation Jump to search
ساقی فاروقی
Saqi Farooqi.jpg
 

معلومات شخصیت
پیدائش 21 دسمبر 1936[1]  ویکی ڈیٹا پر (P569) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
گورکھپور  ویکی ڈیٹا پر (P19) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
وفات 19 جنوری 2018 (82 سال)[1]  ویکی ڈیٹا پر (P570) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
لندن  ویکی ڈیٹا پر (P20) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
رہائش لندن  ویکی ڈیٹا پر (P551) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
شہریت Flag of Pakistan.svg پاکستان
British Raj Red Ensign.svg برطانوی ہند  ویکی ڈیٹا پر (P27) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
تعداد اولاد 1   ویکی ڈیٹا پر (P1971) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
عملی زندگی
پیشہ شاعر  ویکی ڈیٹا پر (P106) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
پیشہ ورانہ زبان اردو  ویکی ڈیٹا پر (P1412) کی خاصیت میں تبدیلی کریں
P literature.svg باب ادب

ساقی فاروقی (پیدائش: 21 دسمبر 1936ء– وفات: 19 جنوری 2018ء) اردو زبان کے مشہور شاعر تھے۔

سوانح[ترمیم]

ساقی فاروقی 21 دسمبر 1936ء کو گورکھپور میں پیدا ہوئے۔ ان کا اصل نام قاضی محمد شمشاد فاروقی تھا، 1948ء تک بھارت میں رہے، 1952ء میں ساقی فاروقی اپنے خاندان کے ہمراہ مشرقی پاکستان (موجودہ بنگلہ دیش) سے پاکستان آ گئے۔ کچھ عرصہ بعد ساقی کا خاندان کراچی منتقل ہو گیا جہاں اُنہوں نے بی اے کی ڈگری حاصل کی۔ بعد ازاں وہ ایک ماہنامہ نوائے کراچی کے مدیر بن گئے۔ گریجویشن کے بعد چند سال بعد وہ باقاعدہ طور پر انگلستان منتقل ہوئے اور جنوری 2018ء تک وہیں رہے۔ آپ نے لندن کمپیوٹر پرامنگ کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد برطانیہ کو اپنا دوسرا گھر بنا لیا اور وہیں 81 برس کی عمر میں ساقی فاروقی اپنے خالق حقیقی سے جا ملے۔

نمونہ کلام[ترمیم]

ساقی کا شمار 1960ء کی دہائی میں اُس وقت کے اردو زبان کے مشہور شعرا ناصر کاظمی، منیر نیازی، مشتاق احمد اور جمیل الدین عالی کے ساتھ ہوتا تھا۔

میں تیرے ظلم دکھاتا ہوں اپنا ماتم کرنے کے لیےمیری آنکھوں میں آنسو آئے تیری آنکھیں نم کرنے کے لیے

تصانیف[ترمیم]

  • پیاس کا صحرا (نظم)
  • بہرام کی واپسی،
  • رازوں سے بھرا بستہ،
  • سرخ گلاب،
  • بدرِ منیر،
  • غزل ہے شرط،
  • زندہ  پانی۔
  • حاجی بھائی پانی والا،
  • رات کے مسافر،
  • رادار،
  • ہدایت نامہ شاعر،

وفات[ترمیم]

ساقی فاروقی کا انتقال طویل علالت کے بعد 81 سال کی عمر میں بروز جمعہ 19 جنوری 2018ء کو لندن میں ہوا۔[2] ایک بیٹی وارث چھوڑی۔

خودنوشت[ترمیم]

آپ بیتی پاپ بیتی ان کی مشہور اور بے باک خودنوشت ہے جس میں بہت سی ایسی باتیں لکھی گئی ہیں جو عموما ادیب اپنی کتابوں میں نہیں لکھتے

حوالہ جات[ترمیم]

  1. ^ ا ب بی این ایف - آئی ڈی: https://catalogue.bnf.fr/ark:/12148/cb14511425g — بنام: Sāqī Fārūqī̄̄ — مصنف: Bibliothèque nationale de France — عنوان : اوپن ڈیٹا پلیٹ فارم — اجازت نامہ: آزاد اجازت نامہ
  2. Poet Saqi Faruqui dies - Newspaper - DAWN.COM